اسحاق ڈار کا پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں بڑی کمی کا اعلان

ویب ڈیسک 1اکتوبر 2022

نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اسحاق ڈار نے  پٹرول کی قیمت میں 12 روپے 63 پیسے کمی کا اعلان کیا۔ انہوں نے بتایا کہ ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت  12 روپے  13 پیسے،  لائٹ ڈیزل میں 10 روپے 78 پیسے  کمی کی گئی ہے۔ پٹرولیم مصنوعات کی  قیمتوں میں کمی  کا اطلاق آج رات  12 بجے سے ہو گا۔

وفاقی حکومت کی جانب سے پیٹرول پر لیوی 32روپے 42 پیسے  جب کہ ڈیزل پر لیوی 12روپے58 پیسے فی لیٹر رکھی گئی ہے۔مٹی کے تیل پر  15 روپے  جب کہ لائٹ ڈیزل آئل پر لیوی 10 روپے فی لیٹر رکھی گئی۔ حکومت نے  پٹرولیم مصنوعات پر  کوئی سیلز ٹیکس نہیں لگایا۔

 

جنرل باجوہ وزیراعظم ہاؤس میں زیادہ گفتگو کرنے سے دراصل کیوں گریزاں ہیں؟ فواد چودھری کے بیان کے بعد مبینہ ہیکر کا نیا پیغام آگیا

ویب ڈیسک 30 ستمبر 2022

 سابق وفاقی وزیر اور تحریک انصاف کے رہنمافوادچودھری نے انکشاف کیا تھا کہ آرمی چیف جنرل باجوہ نے عمران خان سے ایک بار نہیں کئی بار کہا تھا کہ وزیراعظم ہاؤس میں بات کرنا محفوظ نہیں آرمی چیف نے عمران خان کو کہا تھا کہ وزیراعظم ہاو ٔس کوڈی بگ کرنا چاہیے۔ ان کے اس دعوے کے بعد اب حلقۂ اقتدار تک رسائی رکھنے والے لوگوں کی آڈیوز لیک کرنے والے مبینہ ہیکر نے بھی نیا پیغام جاری کردیا۔

مبینہ طورپر آڈیو لیک کرنیوالے ہیکر کے اکاﺅنٹ سے کہاگیا ہے کہ 2 اسلامی ممالک جو اسرائیل کو تسلیم نہیں کرتے، ان میں سے چھوٹے ملک نے بڑے ملک کو یہودی ریاست سے کنٹرولڈسافٹ ویئر حاصل کرنے میں سہولت فراہم کی، چھوٹے ملک کی سربراہی ایک خاتون کرتی ہے۔

اس نے دعویٰ کیا ہے کہ سٹریٹیجک پلانز ڈویژن، سگنل کور،آئی ایس ایس آر اے، آئی ایس آئی ، اورپی ایس ٹو سی او اے ایس کے افسران پر مشتمل ایک وفدنے خریداری کے لیے باضابطہ طورپر چھوٹی ریاست کا خفیہ دورہ کیا، آلات اور تربیت دونوں معاہدے کا حصہ تھے۔

 سلسلہ وار ٹوئیٹس میں ہیکر نے مزید بتایا کہ اہم بات یہ ہے کہ فوجی اعلیٰ کمان نے آئی ایس آئی کو اس منصوبے میں واحد آپریٹنگ باڈی ہونے پر بھروسہ نہیں کیاجو شاید فوج کے ایک طاقتور انٹیلی جنس برانچ کے بارے میں طویل خوف کی طرف اشارہ ہے، وزیراعظم ہاﺅس میں اس طرح کے معاملات کبھی نہیں ہوئے لیکن چند برسوں میں پاکستان میں دلچسپی کے حامل شخص کے زیراستعمال فون میں اسرائیلی کمپنی کا تیارکردہ سافٹ ویئرپیگاسس کردیاگیا، سیاسی سربراہان، ایگزیکٹوز، صوبائی ووفاقی قانون سازوں، سینیٹرز، عدالتی عملہ، صحافیوں، سیکرٹریز، حتیٰ کہ اعلیٰ ودرمیانی شخصیات کی بھی نگرانی کی گئی۔

 

آرمی چیف کی زیر صدارت جی ایچ کیو میں کور کمانڈرز کانفرنس، سلامتی و سیلابی صورتحال پر غور

ویب ڈیسک 29 ستمبر 2022

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی زیر صدارت جی ایچ کیو میں 251 ویں کور کمانڈرز کانفرنس منعقد ہوئی، پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ  کے مطابق  کانفرنس میں آرمی چیف کو بیرونی اور داخلی سلامتی کی صورتحال پر تفصیلی بریفنگ دی گئی۔

 پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ  کے مطابق 251 ویں کور کمانڈرز کانفرنس میں سیلاب کی صورتحال اور ملک بھر میں آرمی فارمیشنز کی جانب سے جاری امدادی سرگرمیوں کا جائزہ لیا گیا،   فورم نے سیلاب متاثرین کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے ان کی امداد اور بحالی کے لیے زیادہ سے زیادہ مدد فراہم کرنے کا عزم کیا، فورم نے سرحدوں کی صورتحال، داخلی سلامتی اور فوج کے دیگر پیشہ ورانہ امور پر خصوصی توجہ مرکوز کرتے ہوئے سلامتی کے ماحول کا ایک جامع جائزہ لیا،فورم نے عزم کیا کہ دہشت گردی کی بحالی کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔

آرمی چیف نے فارمیشنز کی آپریشنل تیاریوں پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ فارمیشن کو تمام سیکیورٹی اداروں کے ساتھ مل کر دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑنی چاہیے،  تمام فارمیشن کسی بھی خطرے سے نمٹنے کے لیے سخت چوکس رہیں۔

 

محمد بن سلمان سعودی عرب کے وزیراعظم مقرر،شاہی فرمان جاری

ویب ڈیسک 28 ستمبر2022

سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبد العزیز نے ولی عہد محمد بن سلمان کو سعودی عرب کا وزیر اعظم مقرر کر دیا ہے۔

سعودی خبر رساں ادارے کے مطابق فرمانروا شاہ سلمان بن عبد العزیز کی طرف سے جاری شاہی فرمان میں ولی عہد محمد بن سلمان کو وزیر اعظم سعودی عرب مقرر کیا گیا ہے۔

سعودی فرمانروا کی طرف سے جاری ایک اور فرمان میں شہزادہ خالد بن سلمان کو وزیر دفاع مقرر کیا گیا ہے۔

علاوہ ازیں ڈاکٹر توفیق ربیعہ کو وزارت حج و عمرہ کا قلمدان سونپا گیا ہے۔

 

تمام علماء متفق ہیں کہ ٹرانس جینڈر بل خلاف اسلام ہے ، سینیٹ اجلاس میں سینیٹر مشتاق احمد کا خطاب

ویب ڈیسک 27 ستمبر 2022

چئیرمین صادق سنجرانی کی زیرصدارت سینیٹ کااجلاس ہوا جس میں  تمام علماء متفق ہیں کہ ٹرانس جینڈر بل خلاف اسلام ہے ، تمام علماء متفق ہیں کہ ٹرانس جینڈر بل خلاف اسلام ہے ۔

نجی ٹی وی کے مطابق سینیٹ اجلاس میں سینیٹر مشتاق احمد نے کہا کہ ٹرانس جینڈربل سے متعلق  میری ترامیم پر غور کیا جائے،  ٹرانس جینڈر بل کے بعد میرے خلاف پروپیگنڈا جاری ہے۔ ۔ چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی  نے کہا کہ ٹرانس جینڈربل کو سیاسی نہ بنایا جائے،ٹرانس جینڈربل بحث کے لئے کمیٹی کو بھیجا جائے گا۔

 

 عالمی بینک نے موجودہ موسمیاتی صورتحال پر پاکستان کو 2 ارب ڈالرز دینے پرغور شروع کر دیا

ویب ڈیسک 26 ستمبر 2022

عالمی بینک نے موجودہ موسمیاتی صورتحال پر پاکستان کو 2 ارب ڈالرز دینے غور شروع کر دیا ہے۔

عالمی بینک کے نائب صدر مارٹن ریزر نے کہا کہ سیلاب کے باعث لائیو سٹاک اور قیمتی جانوں کے ضیاع پر افسوس ہوا۔ عالمی بینک پاکستان کی مدد کرنے کے عزم پر قائم ہے۔انہوں نے کہا کہ وفاق اور صوبائی حکومت کے ساتھ مل کر سیلاب متاثرین کو ریلیف کے اقدامات کر رہے ہیں۔

جاری کردہ اعلامیے کے مطابق نائب صدر عالمی بینک مارٹن ریزر نے دو روزہ دورہ پاکستان مکمل کر لیا ہے۔اس دوران نائب صدر عالمی بینک نے گورنر سٹیٹ بینک، وزیر مملکت برائے خزانہ اور وزیر منصوبہ بندی سے بھی ملاقاتیں کیں۔

 

امریکی سائفر کی تحقیقات کی جائیں تواسمبلی واپس آسکتے ہیں، اسٹیبلشمنٹ سے تعلقات پتہ نہیں کب اورکیسے خراب ہوئے، عمران خان کا بڑا بیان

ویب ڈیسک 25 ستمبر 2022

سابق وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ امریکی سائفر کی تحقیقات کی جائیں تواسمبلی واپس آسکتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ اسٹیبلشمنٹ سے ہمارے اچھے  تعلقات تھے، پتہ نہیں کب اور کیسے خراب ہوئے۔ اب حکومت ملی تو ماضی کی غلطیاں نہیں دہرائیں گے، تحریک انصاف پہلی بار حکومت میں آئی تھی اس لیے غلطیاں ہوئیں، معیشت کو مستحکم بنانے کیلئے جامع منصوبہ بندی کر رہے ہیں۔

صحافیوں سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ  اپوزیشن سےزیادہ حکومت کواسٹیبلشمنٹ سے تعلقات کی ضرورت ہوتی ہے، ہم اپوزیشن میں ہیں تو اپوزیشن میں رہتے ہوئے تعلقات کیسے ہو سکتے ہیں؟ پاکستان میں اسٹیبلشمنٹ حقیقت ہے، اس کے پاس تمام اختیارات ہیں۔انہوں نے کہا کہ  خطے میں سب کے ساتھ ملکی مفاد کے تحت تعلقات چاہتے ہیں۔ 

سابق وزیراعظم کا کہنا تھاکہ حکومت معیشت کو ایسےمقام پرلے آئی کہ دوا کے بجائے سرجری کی ضرورت ہے، مفتاح اسماعیل کینسر کا علاج ڈسپرین سے کررہےہیں، حکومت کی ترجیحات معیشت نہیں بلکہ اپنے کرپشن کیسز ختم کرانا ہے۔موجودہ حکومت نے نیب کے 1100 ارب روپے کے مقدمات ختم کرائے، نیب کا کیس ختم ہوتے ہی اسحاق ڈار وطن واپس آنے کو تیار ہیں، اسحاق ڈار کے بعد نوازشریف بھی وطن واپس آنے کی تیاری کر رہا ہے۔

 

پاکستان کو موسمیاتی تبدیلی سے تباہی کا سامنا ہے

وزیراعظم کا اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب

ویب ڈیسک 24 ستمبر 2022

وزیراعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ موسمیاتی تبدیلی سے تباہی نے ملک کا ایک تہائی حصہ زیر آب کردیا، پاکستان میں سیلاب سے 3 کروڑ 30 لاکھ لوگ متاثر ہوئے ہیں اور جو کچھ پاکستان میں ہورہا ہے یقینی طور پر وہ صرف ایک ملک تک محدود نہیں رہے گا۔ 

اقوام متحدہ کی  جنرل اسمبلی کے 77 ویں اجلاس سے خطاب کے دوران انہوں نے کہا کہ 40 دن اور 40 راتوں تک ایسا سیلاب آیا جیسا دنیا نے کبھی نہیں دیکھا، پاکستان کو تباہی کا سامنا ہے۔

ان کا کہنا تھا پاکستان کے لوگ پوچھتے ہیں کہ ان کے ساتھ یہ کیوں ہوا؟ حقیقت یہ ہے کہ پاکستان میں تباہی یہاں کے لوگوں کی وجہ سے نہیں ہوئی، میرا دل اور دماغ اس وقت بھی پاکستان میں ہے جو سیلاب سے متاثر ہے، کوئی نہیں سمجھ سکتا کہ ہم کس وقت سے گزر رہے ہیں۔

عالمی حدت سے خطے میں گلیشیر پگھلنا شروع ہوگئے

شہباز شریف نے کہا کہ 650 عورتوں نے سیلاب میں بچوں کو جنم دیا اور ابتدائی اندازے کے مطابق 4 ملین ایکٹر فصل تباہ ہوئی ہے، عالمی درجہ حرارت میں اصافے کے ایسے اثرات پاکستان نے کبھی نہیں دیکھے۔

وزیراعظم نے کہا کہ گلوبل وارمنگ نے پورے پورے خاندان کو ایک دوسرے سے الگ کردیا اور گلوبل وارمنگ کی وجہ سے پاکستان اس وقت دنیا کا گرم ترین ملک بن گیا ہے، عالمی حدت سے خطے میں گلیشیر پگھلنا شروع ہوگئے ہیں۔

شہباز شریف نے کہا کہ اس لیے دنیا سے موسمیاتی انصاف کی امید لگانا غلط نہ ہوگا، میرا سوال ہے کہ کیا ہم اس بحران میں اکیلے رہ جائیں گے جس کے ہم ذمہ دار نہیں ہیں، پریشانی یہ ہے کہ جب کیمرے چلے جائیں گے تو ہم بحران سے نمٹنے کے لیے اکیلے رہ جائیں گے۔

بھارت کو سمجھنا چاہیے جنگ آپشن نہیں ہے

انہوں نے پڑوسی ملک بھارت سے متعلق کہا کہ بھارت سمیت تمام ہمسایہ ممالک کے ساتھ پرامن تعلقات چاہتے ہیں، خطے میں مستحکم امن کے لیے مسئلہ کشمیر کا حل ضروری ہے، مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے غیر قانونی اور یکطرفہ اقدامات سے امن عمل متاثر ہوا ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں ماورائے عدالت قتل کیا جارہا ہے، مقبوضہ کشمیر میں آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ وزیراعظم نے مطالبہ کیا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں 5 اگست کے غیر قانونی اقدامات واپس لے۔

انہوں نے مزید کہا کہ بھارت کو سمجھنا ہوگا دونوں ممالک ایٹمی قوت ہیں جنگ آپشن نہیں ہے، 20 ویں صدی کے معاملات سے توجہ ہٹا کر 21 ویں صدی کے مسائل پرتوجہ دینے کی ضرورت ہے ورنہ جنگیں لڑنے کے لیے زمین ہی باقی نہیں بچے گی۔

افغانستان کے مالی زخائر کو جاری کرنا بہت ضروری ہے

وزیراعظم شہباز شریف نے افغانستان سے متعلق کہا کہ پاکستان پرامن افغانستان دیکھنے کا خواہشمند ہے جبکہ دہشت گردی اور منشیات کی اسمگلنگ روکنے کے لیے دنیا کو کام کرنا ہوگا۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان 2 دہائیوں سے دہشت گردی کا شکار ہے، 80 ہزار جانوں کی قربانی دی، پاکستان ایسا افغانستان چاہتا ہے جو اپنے آپ کے ساتھ دنیا کے لیے پر امن ہو۔

شہباز شریف نے کہا کہ اس وقت افغان حکومت کے ساتھ کشیدگی سے افغان عوام کو نقصان پہنچے گا، افغانستان کے مالی زخائر کو جاری کرنا افغان معیشت کی بحالی کے لیے انتہائی ہے۔

اسلاموفوبیا ایک عالمی رحجان ہے

وزیراعظم نے کہا کہ اسلاموفوبیا ایک عالمی رحجان ہے، نائن الیون کے بعد سے مسلمانوں کے خلاف رویوں میں شدت آئی ہے، اقوام متحدہ اسلاموفوبیا سے متعلق اپنائی قرارداد پر عمل درآمد یقینی بنائے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان ہر مشکل اور صورت میں دہشت گردی کی مذمت کرتا ہے کیونکہ دہشت گردی کا کوئی مذہب نہیں ہوتا۔

اسرائیل فلسطینیوں کے خلاف مظالم بند کرے

شہباز شریف نے کہا کہ ہم اسرائیل سے مطالبہ کرتے ہیں کہ فلسطینیوں کے خلاف مظالم بند کیے جائیں۔

 

 

 پاکستان کے کسی وفد کے دورہ اسرائیل کا تاثر مسترد کرتے ہیں، دفتر خارجہ

 

ویب ڈیسک 23 ستمبر 2022

 اسلام آباد: دفتر خارجہ کے ترجمان نے کسی بھی پاکستانی وفد کے اسرائیل کے دورے کی سختی سے تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان سے کسی وفد نے اسرائیل کا دورہ نہیں کیا۔

ترجمان دفتر خارجہ کی جانب سے جاری بیان کے مطابق پاکستان کے کسی وفد کے دورہ اسرائیل کا تاثر صریحاً مسترد کرتے ہیں۔ترجمان کا کہنا ہے کہ پاکستان کی پالیسی میں ایسی کوئی تبدیلی نہیں جس پر قومی اتفاق رائےہو پاکستان فلسطینی عوام کے ناقابل تنسیخ حق خودارادیت کی حمایت کرتا ہے پاکستان مسئلہ فلسطین کااقوام متحدہ،او آئی سی قراردادوں کے مطابق حل چاہتا ہے۔ دفترخارجہ کا کہنا ہے کہ غیرملکی تنظیم نے زیرِبحث دورے کا اہتمام کیا جو پاکستان میں موجود نہیں۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ مسئلہ فلسطین پر پاکستان کی پوزیشن واضح ہے جس میں کوئی ابہام نہیں۔ہماری پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئی جس پر پوری قوم کا مکمل اتفاق ہے۔پاکستان فلسطینی عوام کے ناقابل تنسیخ حق خودارادیت کی مستقل حمایت کرتا ہے 

 

عمران خان نے ہفتے سے تحریک شروع کرنے کا اعلان کردیا

ویب ڈیسک 22 ستمبر 2022

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان نے اعلان کیا ہے کہ ملکی حالات سماجی افراتفری کی طر ف جارہے ہیں اور ہفتے سے تحریک شروع کر رہا ہوں۔ان کا کہنا تھا کہ جو بھی آپ کو نامعلوم نمبر سے دھمکی دے تو اسے واپس دھمکی دیں، اسے دھمکی دیں کہ اظہار رائے کی آزادی میرا آئینی حق ہے۔ انہوں نے کہا کہ دنیا میں کسی کو نامعلوم فون نمبر سے دھمکیاں دیتے نہیں دیکھا۔

لاہور میں وکلا کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ جب سے امپورٹڈ حکومت آئی ہے ملک دلدل میں جارہا ہے، آج عالمی مالیاتی ادارہ(آئی ایم ایف) اور ورلڈ بینک کہہ رہا ہے پاکستان سری لنکا جیسی صورت حال میں جا رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایک طرف معیشت سکڑتی جا رہی ہے اور بے روزگاری برھتی جارہی ہے اور دوسری طرف مہنگائی آسمانوں کو چھو رہی ہے اور اس وقت ملک کی تاریخ میں مہنگائی 50 سال کی بلندی پر ہے۔ 

ان کا کہنا تھا کہ ملک کے اندر حالات سماجی افراتفری کی طرف جارہے ہیں، جب تک انصاف کا نظام ٹھیک نہیں ہوتا معیشت ٹھیک نہیں ہوگی، اس قوم کو قانون کی بالادستی کی ضرورت ہے۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ جس کو سزا ہونی تھی وہ وزیراعظم بنا ہے اور لندن میں جاکر ایک سزا یافتہ شخص سے مشورہ کر رہے ہیں کہ پاکستان کا آرمی چیف کون ہوگا۔

ان کا کہنا تھا کہ جو ملک کی قومی سلامتی کے لیے سب سے بڑا عہدہ ہے، وہ ایک مفرور اور جھوٹ بول کر باہر جانے والے فیصلہ کریں گے کہ پاکستان کی قومی سلامتی کے لیے سب سے اہم عہدے کے لیے۔

عمران خان نے وکلا سے کہا کہ میں اس تحریک میں نکل چکا ہوں، ہفتے سے یہ تحریک شروع ہوجائے گی اور جب کال دوں تو میرے ساتھ نکلنا ہے۔انہوں نے کہا کہ قوم سے کہہ رہا ہوں جو بھی آپ کو دھمکیاں دے، اس کو واپس دھمکی دو یہ کہتے ہوئے کہ میرا آئین میرے بنیادی حق اظہار آزادی کا تحفظ کرتا ہے۔مخالف جماعتوں کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ الیکشن سے یہ بھاگ رہے ہیں، ان کو پتا ہے یہ الیکشن جیت نہیں سکتے اور پاکستانی قوم کہاں کھڑی ہے، اس لیے یہ سارے مل کر کوشش کر رہے ہیں کہ کسی طرح کرسی پکڑ لیں ملک بے شک نیچے جائے۔

 

اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوتریس نے ترقی یافتہ ممالک، عالمی مالیاتی اداروں اور فوسل ایندھن استعمال کرنے والی کمپنیوں پر زور دیا ہے کہ وہ  پاکستان سمیت موسمیاتی تبدیلیوں سے متاثر ہونے والی ممالک کی مدد کے لیے آگے بڑھیں۔

ویب ڈیسک 21 ستمبر 2022 

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 77ویں اجلاس میں عام بحث کا آغاز کرتے ہوئے انتونیو گوتریس نے تمام ممالک سے فوسل فیول استعمال کرنے والی کمپنیوں پر ٹیکس لگانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ ٹیکس سے حاصل ہونے والی رقم سے گلوبل وارمنگ اور مہنگائی میں اضافے کا ازالہ ہونا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ ماحولیاتی تبدیلی کے سب سے کم ذمہ دار ملک کو زیادہ تباہی کا سامنا ہے، اس کے لیے ہمیں اقدامات کرنا ہوں گے، ترقی یافتہ ممالک  اصلاحات سے آراستہ مالیاتی ڈھانچہ تیار کر کے ترقی پذیر ممالک کی مدد کریں۔ اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل کی جانب سے جنرل اسمبلی کے 77ویں اجلاس سے قبل پائیدار ترقیاتی اہداف سے متعلق ایک تقریب اور استقبالیہ کا انعقاد کیا گیا۔ اس تقریب کا مقصد 2030ء کے ایجنڈے اور آگے بڑھانا اور دنیا میں تیزی سے موسمیاتی تبدیلیوں کے حوالے سے لائحہ عمل مرتب کرنا تھا۔ یو این سیکریٹری جنرل نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مختلف ممالک پر زور دیا کہ وہ امن اور یکجہتی کے ذریعے بحران کا حل تلاش کرنے کے لیے تیزی سے کام کریں اور دنیا کو دوبارہ بحالی کی طرف لائیں۔ انتونیو گوتریس نے کہا کہ ترقی یافتہ ممالک سرکاری اور نجی شعبے کی مالی اعانت اور سرمایہ کاری میں اضافے کے ساتھ اصلاحاتی مالیاتی ڈھانچہ ترتیب دیں تاکہ ترقی پذیر ممالک کو فائدہ پہنچایا جاسکے اور انہیں قرض سے نجات ملے۔ انہوں نے کہا کہ ترقی یافتہ ممالک صحت، تعلیم اور فلاح و بہبود کے منصوبوں پر سرمایہ کاری بڑھائیں اور عالمی سماجی تحفظ کے لیے روزگار کے مواقع پیدا کریں۔

 

آرمی چیف کا دورہ ، چین نے پاکستان کیلئے ہنگامی بنیادوں پر 100 ملین یوان امداد کا اعلان کر دیا

ویب ڈیسک 20 ستمبر 2022

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کے دورے کے موقع پر چین نے انسانی ہمدردی کے تحت پاکستان کے لیے ہنگامی بنیادں پر   100  ملین یوان امداد کااعلان کیا ہے

 پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ چین کے 2 روزہ سرکاری دورے پر ہیں، دورے کے دوران آرمی چیف نے چینی وزیر دفاع سے ملاقات کی،چینی وزیر دفاع کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ چین پاکستان اور افواج پاکستان کے ساتھ اپنے تعلقات کو بہت اہمیت دیتا ہے، چین پاکستان میں سیلاب سے متعلق امدادی سرگرمیوں کے لیے تکنیکی مدد فراہم کرنے کے لیے بھی تیار ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق چینی وزیر دفاع نے سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں پاک فوج کی ریسکیو اور ریلیف کی کوششوں کو بھی سراہا جبکہ آرمی چیف نے چین کے وزیر دفاع کے جذبات اور پاکستان کے لیے چین کی حمایت جاری رکھنے پر شکریہ ادا کیا،چین کی جانب سے پاکستان کے لیے انسانی ہمدردی کے تحت ہنگامی بنیادوں پر 100 ملین یوان امداد کا اعلان بھی کیا گیا ہے ، چینی حکومت پاکستان کے سیلاب زدگان کے لیے مجموعی طور پر 500 ملین یوان امداد دے گی جو پاکستانی روپے میں تقریباً 15 ارب 80 کروڑ روپے بنتی ہے،آرمی چیف کی کوششوں سے یو اے ای اور دیگر ممالک سے بھی بین الاقوامی امداد آئی۔

 

 عمران خان کا کہنا ہے کہ 'انقلاب پاکستان کی دہلیز پر دستک دے رہا ہے'

ویب ڈیسک 19 ستمبر 2022

 سابق وزیراعظم اور پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان نے قبل از وقت انتخابات کے مطالبے کا اعادہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ انقلاب پاکستان کی دہلیز پر دستک دے رہا ہے،جلد منظم ہو کر سیاسی استحکام کا راستہ بنایا جائے۔ انتخابات

پی ٹی آئی کے سربراہ عمران خان سے پنجاب کابینہ کے ارکان نے ملاقات کی جس میں صوبے کے سیاسی اور انتظامی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ خان نے صوبائی کابینہ کے ارکان کو پنجاب کے ضمنی انتخابات میں شاندار کامیابی حاصل کرنے پر مبارکباد دی۔
ملاقات میں عمران خان نے قبل از وقت انتخابات کے مطالبے کو دہراتے ہوئے کہا کہ پرامن انتخابات کر کے ایک راستہ بنایا جائے۔
انہوں نے کہا کہ پنجاب کے ضمنی انتخابات میں پی ٹی آئی کی جیت نے قوم کے اعتماد کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ چوہدری پرویز الٰہی ایک عملی سیاست دان ہیں اور تحریک انصاف ان کا بھرپور ساتھ دے گی۔ پنجاب میں عوام تحریک انصاف سے حقیقی آزادی کے وعدے کی تکمیل کی توقع رکھتے ہیں۔
سابق وزیراعظم نے پنجاب کابینہ اور پارلیمانی
پارٹی سے کہا کہ وہ حقیقی آزادی کے بیانیے کے ساتھ مضبوطی سے قوم کے ساتھ کھڑے ہوں۔ قوم ہمارے ساتھ ہے اور ہمیں جلد انتخابات کے لیے آگے بڑھنا ہے۔ قبل از وقت الیکشن پی ٹی آئی کی ضرورت نہیں بلکہ ملک کی بہتری کے لیے ناگزیر ہے۔ چارسدہ میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے ایک بار پھر اس بات کا اعادہ کیا کہ ملک کو بحرانوں سے نکالنے کا واحد راستہ آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کا انعقاد ہے۔
انہوں نے کہا کہ قوم بیلٹ کے ذریعے پرامن انقلاب چاہتی ہے اور میں سب کو پیغام دے رہا ہوں کہ اس تبدیلی کو ہونے دیا جائے، اور خبردار کیا کہ اگر پرامن انقلاب کی مزاحمت کی گئی تو یہ اپنا راستہ بدل سکتا ہے اور اس کھیل سے تمام اسٹیک ہولڈرز کو ختم کر سکتا ہے۔
عمران خان 22 اکتوبر کو عمودی ترقیاتی منصوبوں کا آغاز کریں گے: سابق وزیر اعظم اور پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان نے اعلان کیا ہے کہ پہلے سنٹرل بزنس ڈسٹرکٹ پنجاب (سی بی ڈی پی) کے تحت 100 سے زیادہ عمودی ترقی کے لئے بنیاد 22 اکتوبر کو لاہور میں شروع کی جائے گی۔ مردہ سرمائے کو قابل عمل لین دین میں تبدیل کر دے گا جس سے ملک کے لیے دولت کی پیداوار بڑھے گی، اس کے علاوہ ارد گرد کے پورے انفراسٹرکچر کی تشکیل نو کرے گی۔
اتوار کو اپنے ٹویٹر ہینڈل پر، عمران نے لکھا: "پاکستان کا پہلا مرکزی کاروباری ضلع، @CBDPunjab، ملک کی معیشت میں 600b+ کا اضافہ کرتے ہوئے 100+ عمودی ترقیات کو ایڈجسٹ کرے گا۔ مستقبل کی عمودی ترقی کی تعریف کرنے کے لیے، Lhr کے مین Blvd پر 22 اکتوبر سے زمینی کام شروع ہو جائے گا جس کے ارد گرد کے پورے انفراسٹرکچر کو نئی شکل دی جائے گی۔
"CBD پنجاب کو مردہ سرمائے کو قابل عمل لین دین میں تبدیل کرنے کی ذمہ داری سونپی گئی ہے جو ملک کے لئے دولت کی پیداوار کا ذریعہ ہے۔ بے پناہ صلاحیت کے حامل اسی طرح کے منصوبے پنجاب بھر میں شروع کیے جائیں گے جو ملکی اور غیر ملکی سرمایہ کاری کے متعدد مواقع فراہم کر کے اقتصادی ترقی اور خوشحالی کا باعث بنیں گے۔

 

 پاکستان میں مہنگائی کی شرح خطے میں سب سے زیادہ ہے، سراج الحق

ویب ڈیسک 18 ستمبر 2022

امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ ملک میں مہنگائی کی شرح خطے میں سب سے زیادہ ہے، روپیہ بے وقعت ہو گیا۔ پی ڈی ایم نے ماضی میں مہنگائی کے خلاف احتجاج کیے، اقتدار میں آ کر عوام پر ظلم کی انتہا کر دی۔ان خیالات کا اظہار انھوں نے منصورہ میں سیلابی صورت حال اور بحالی کے اقدامات کے جائزہ کے لیے ایک مشاورتی اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ سیکرٹری جنرل امیر العظیم اور سیکرٹری اطلاعات قیصر شریف بھی اس موقع پر موجود تھے

سراج الحق نے کہا کہ پی ٹی آئی اور پی ڈی ایم معیشت کی تباہی کی ذمہ دار ہیں۔ بیڈگورننس اور تباہ کن معاشی پالیسیوں کی وجہ سے ملک کے حالات ٹھیک نہیں ہو رہے۔ سودی معیشت اور کرپشن نے ملک کو دیمک کی طرح چاٹ لیا۔ حکمران سیاسی جماعتیں وڈیروں کے کلب ہیں، عام آدمی کو ان جاگیرداروں اور ظالم سرمایہ داروں سے بھلائی کی کوئی توقع نہیں۔

انہوں نے کہا کہ حقیقی تبدیلی صرف اسلامی نظام سے آئے گی، ملک اسلام کے نام پر حاصل ہوا، اسلام ہی اس کی ترقی و خوشحالی کا ضامن ہے۔ قوم کو لڑانے اور تقسیم کرنے کے ایجنڈے پر گامزن حکمران جماعتیں حالات کی نزاکت کو جانتے ہوئے بھی خطرناک کھیل کھیل رہی ہیں۔ حکمرانوں نے تباہ کن سیلاب کے دوران بھی آپسی مفادات کے لیے جنگ جاری رکھی۔ حکمران آف شور کمپنیوں اور بیرون ملک بنکوں سے ذاتی اثاثے اور لوٹی ہوئی دولت واپس لائیں۔

سراج الحق کے مطابق ایک ایجنڈے کے تحت عوام کو مکمل طور پر آئی ایم ایف کی غلامی میں دھکیل دیا گیا۔ استعماری طاقتیں پاکستان کے فیصلے اپنے ایجنٹوں کے ذریعے ملک میں نافذ کرتی ہیں۔ قوم اپنے حقوق کے لیے آواز بلند کرے، مافیاز سے نجات کے لیے جدوجہد کرنا ہر محب وطن شہری پر لازم ہو گیا۔ 

 

پاکستان کیخلاف اس مکروہ سازش کا ذمہ دار کون ہے؟ عمران خان نے سوال پوچھ لیا

ویب ڈیسک 17 ستمبر 2022

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان نے وفاقی حکومت کو آڑے ہاتھوں لے لیا۔

ٹوئٹر پر جاری اپنے ایک بیان  میں عمران خان نے کہا آئی ایم ایف اور عالمی بنک کی رپورٹس سے ظاہر ہے کہ بلندی کی جانب گامزن ایک مستحکم معیشت ملنے کے باوجود یہ امپورٹڈ حکومت معیشت کو تباہی کے گڑھے میں گِرنےسےبچانےمیں ناکام رہی۔اقتصادی سروے اس حقیقت کا عکاس ہے کہ ہماری معاشی کارکردگی گزشتہ 70 برسوں میں بہترین تھی۔ہمارےدور میں شرحِ نمو(6 فیصد)،صنعت، زراعت، فراہمی روزگار،تعمیرات، برآمدات،  ترسیلاتِ زر اور ٹیکسوں کی وصولیاں لامحالہ

تاریخ میں بلند ترین سطح پر رہیں 

 

 انفراسٹرکچر پہلے ہی موجود، پاکستان کو پائپ لائن کے ذریعے گیس کی فراہمی ممکن ہے، پیوٹن کا شہباز شریف سے ملاقات میں انکشاف

ویب ڈیسک 16 ستمبر 2022

وزیر اعظم شہباز شریف کی شنگھائی تعاون تنظیم کے اجلاس کے موقع پر عالمی رہنماؤں کے ساتھ سائڈ لائن ملاقاتوں کا سلسلہ جاری ہے۔ انہوں نے سمر قند میں روس کے صدر ولادی میر پیوٹن اور ایرانی صدر ابراہیم رئیسی سے ملاقاتیں کیں۔ وزیر اعظم جمعرات کو ازبکستان پہنچے تھے جہاں وہ شنگھائی تعاون تنظیم کے 22 ویں اجلاس میں شرکت کر رہے ہیں۔

دو روزہ دورے کے پہلے دن شہباز شریف نے روس کے صدر ولادی میر پیوٹن سے ملاقات کی، اس موقع پر پاکستان اور روس کے باہمی تعلقات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ اس موقع پر صدر پیوٹن نے کہا کہ پاکستان کو پائپ لائن کے ذریعے گیس کی سپلائی ممکن ہے اور اس سلسلے میں ضروری انفراسٹرکچر پہلے سے ہی موجود ہے۔ وزیر اعظم شہباز شریف نے دونوں ملکوں کے تعلقات میں پیشرفت پر اطمینان کا اظہار کیا۔ انہوں نے روس کے ساتھ قریبی تعلقات کے عزم کا اظہار کیا۔ انہوں نے افغانستان میں روس کے تعمیری کردار کو سراہا اور اس عزم کا اظہار کیا کہ افغانستان میں قیام امن کیلئے پاکستان عالمی اور علاقائی کوششوں کا خیر مقدم کرے گا۔

بعد ازاں شہباز شریف نے ایران کے صدر ابراہیم رئیسی سے بھی ملاقات کی۔ اس موقع پر دونوں رہنماؤں نے باہمی تعلقات مثبت پیشرفت لانے کے عزم کا اظہار کیا۔

 

بہت سے لوگ سیاسی بحران سے نکلنے کو تیار نہیں ، صدرِ مملکت

 ویب ڈیسک 15 ستمبر 2022

صدرِ مملکت عارف علوی کا کہنا ہے کہ سیاست دانوں کے درمیان الیکشن پر بات ہونی چاہیے، الیکشن میں چندماہ کےفرق پر آپس میں کوئی بات طے کرنی  ہو تو میرے دروازے کھلے ہیں،  بہت سے لوگ سیاسی بحران سے نکلنے کو تیار نہیں ہیں۔ صدرِ مملکت نے  آرمی چیف کی تعیناتی الیکشن تک موخر کرنے کے معاملے پر رائے دینے سے انکار کردیا۔

نجی ٹی وی دنیا نیوز  کو دیے گئے انٹرویو میں صدرِ مملکت نے کہا کہ  انتخابات ملک کو تمام بحرانوں سے نکالنے کا واحد حل ہیں ، سیاست دانوں کے درمیان الیکشن پر بات ہونی چاہیے۔ ملک میں جاری بحران کے حل کو بات چیت سے حل کرنے کے لیے میرے دروازے سب کے لیے کھلے ہوئے ہیں مگر بہت سے لوگ سیاسی بحران سے نکلنے کو تیار نہیں ہیں۔آرمی  چیف کی نئے الیکشن تک تعیناتی موخر کرنے پر رائے نہیں دوں گا، فیصلہ ساز ٹیبل پر سپہ سالار کا معاملہ طے کریں تو اچھا ہے، اچھے مینڈیٹ کے ساتھ سارے فیصلے ہوں تو اچھا ہے۔ بات چیت کے لیے میرا کام کوشش کرنا ہے، اللہ کی مدد کی بھی ہمیں ضرورت ہے، بہت جلد سیاسی بحران کا حل نکل آئے گا۔

انہوں نے کہا کہ سیاسی بحران کامیابی سےحل کرلیں توسیلاب اور معاشی بحران حل کرناکوئی مسئلہ نہیں، وزیراعظم شہباز شریف سے رابطہ رہتاہے،  موجودہ حکومت بجلی کے بل اور ڈالر سے متعلق محنت کررہی ہے،  پاکستان تنازعات کا متحمل نہیں ہوسکتا، معاشی بحران ایسا نہ ہوجائے لوگ سڑکوں پرآجائیں اورحکومت کو سمجھوتےکرنے پڑیں۔

صدرِ مملکت کا کہنا تھا کہ اتفاق کاراستہ یہی ہےکہ کچھ لوکچھ دو،  چند مہینے اِدھر اُدھر کر کے  الیکشن کے معاملے کو نمٹانا چاہیے، بہترین طریقہ یہی ہےکہ عوام کےمینڈیٹ کےساتھ حکومت ہو،  ٹیکنوکریٹس کی حکومت بنتی ہے تو اس کا عوام سے رابطہ نہیں ہوتا، ہمیں اچھے ٹیکنوکریٹ اور اچھی ٹیکنیکل مدد کی ضرورت ہے۔

 

موجودہ حکومت نے آرمی چیف لگایا تو تنازع 3 سال جاری رہے گا، جنرل باجوہ سے تعلقات خراب نہیں ہوئے۔فواد چوہدری کا تہلکہ خیز بیان

ویب ڈیسک 14 ستمبر 2022

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے سینئر نائب صدر فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ تحریک انصاف نے پنڈی کو بتادیا ہے کہ اگر موجودہ حکومت نئے آرمی چیف کی تعیناتی کرے گی تو پھر تنازع اگلے تین سال جاری رہے گا، جنرل قمر جاوید باجوہ کے ساتھ تعلقات تحریک انصاف کی حکومت کے خاتمے کے بعد بھی خراب نہیں ہوئے۔

نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ  ہم نے پنڈی کے تحفظات  ختم کرنے کی کوشش کی ہے، ہم تنازع ختم کرنا چاہتے ہیں، حکومت سے کہا ہے کہ مل بیٹھ کر مسئلے کو حل کریں،  ہم نے پنڈی کو بتایا ہے آرمی چیف یہ حکومت لگائے گی تو تنازع  تین سال رہے گا، اگر تنازع ختم کرنا ہے تو پھر الیکشن تک ریٹائرمنٹ موخر کردیں۔

انہوں نے کہا کہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کے ساتھ تعلقات تحریک انصاف کی حکومت ختم ہونے کے بعد بھی خراب نہیں ہوئے، 25مئی کے معاملات کے بعد اسٹیلبشمنٹ سے ہمارے کچھ تعلقات خراب ہوئے ہوں گے۔ یہ چاہتے ہیں کہ عمران خان کو نااہل کر دیا جائے،آپ عمران خان کو کس قانون کےتحت نااہل کریں گے؟ فوری انتخابات ہی تمام مسائل کا حل ہیں۔

دوسری جانب نجی ٹی وی  کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ اگر یہ سمجھتے ہیں کہ یہ عمران خان کو نااہل کر کے الیکشن جیت جائیں گے،تو ان کی غلط فہمی ہے،نااہلی کی صورت میں پارٹی تین چوتھائی اکثریت سے جیت کر آۓ گی اور سب سے پہلا کام عمران خان کو لانے کا کرے گی، ان کی تھیوریاں چلنے والی نہیں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ مریم صفدر، خرم دستگیر اور جاوید لطیف جیسے لوگ مُسلسل بیانیہ بنانے کی کوشش میں ہیں کہ پنڈی والے ہمیں زبردستی لے کر آۓ اور سخت فیصلے کرواۓ،اس لئے اب ہم الیکشن جیتنے کی پوزیشن میں نہیں ہیں ۔ حالانکہ ان کی غیر مقبولیت کی سب سےبڑی وجہ سازش سے اقتدار میں آنا ہے۔

 

ڈیفالٹ کا خدشہ، دیوالیہ ہوئے تو قومی سلامتی داؤ پر، سیلاب سے بڑی تباہی ہوگی، عمران خان نے خدشات ظاہر کردیے

 ویب ڈیسک 13 ستمبر 2022

 پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان کا کہنا ہے کہ جب تک ملک میں سیاسی استحکام نہیں آئے گا معاشی استحکام نہیں آئے گا، اگر دیوالیہ ہوجاتے ہیں تو خدشہ ہے کہ مدد کرنے والے قومی سلامتی پر کمپرومائز  کروائیں گے، موجودہ حکومت کے پاس کوئی حل باقی نہیں رہ گیا، جب عدم اعتماد آیا تو ڈالر 178 روپے پر تھا، اب آئی ایم ایف کا پیکج ملنے کے باوجود روپیہ گر رہا ہے اور مارکیٹ میں اعتماد بحال نہیں ہو رہا،  اگر دیوالیہ ہوگئے تو یہ سیلاب سے بڑی  تباہی ہوگی۔

نجی ٹی وی کو دیے گئے انٹرویو میں عمران خان نے کہا کہ سب سے زیادہ طاقت والوں کو وارننگ دی تھی کہ عالمی سطح پر بحران ہے اور انرجی کی قیمتیں اوپر جا رہی ہیں،  اگر اس وقت سیاسی عدم استحکام آیا تو کسی سے بھی معیشت نہیں سنبھالی جائے گی، اس کے بعد شوکت ترین کو اسٹیبلشمنٹ کو سمجھانے بھیجا،  اگر ان کے پاس کوئی پلان ہوتا تو یہ معیشت سنبھال لیتے لیکن ان کا منصوبہ صرف اپنے مقدمات ختم کرنا تھا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ پاکستان کو اس وقت  30 ارب ڈالر کی ضرورت ہے،  ورلڈ بینک اور آئی ایم ایف کے پیسے مل بھی جائیں تو بمشکل چھ سے سات ارب ڈالر ہوں گے، باقی پیسہ کہاں سے آئے گا؟ پاکستان تیزی کے ساتھ دیوالیہ کی طرف جا رہا ہے، اس سے بچنے کا ایک ہی طریقہ ہے کہ الیکشن کرواؤ جس سے سیاسی استحکام آئے گا اور پھر اسی سے معاشی استحکام کے چانسز ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جو بھی کروں گا آئین کے تحت کروں گا، جتنی دیر یہ بیٹھے رہیں گے ملک مزید دلدل میں پھنسے گا، خوف ہے کہ سیلاب کا اصل فال آؤٹ سردیوں میں آنا ہے،  سب مسائل کا حل فری اینڈ فیئر الیکشن ہے۔ جو لوگ اچھی بھلی حکومت کو گرا کر اس حکومت کو لے کر آئے ہیں،  ان سے سوال ہے کہ کیا وہ ملک کا سوچ رہے تھے؟  آج انہوں نے ملک کو کہاں پہنچا دیا ہے،  ا ب جو بھی آئے گا اس کے پاس مسئلوں کا پہاڑ ہوگا، میں یہ نہیں کہہ رہا کہ میرے پاس تمام مسائل کا حل ہے، لیکن جب بھی ملک کو مسائل سے نکالیں گے تو سب سے پہلی چیز ہوگی کہ ملک میں سیاسی استحکام ہو، اگر  سیاسی استحکام ہی نہیں ہے تو معاشی استحکام کیسے لائیں گے؟

 

بڑے ملکوں کا کِیا دھرا پاکستان اور دیگر ترقی پذیر ممالک بھگت رہے ہیں، انتونیو گوتریس

ویب ڈیسک 12 ستمبر 2022

اقوامِ متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوتریس کا کہنا ہے کہ روایتی ایندھن کا استعمال بڑے ملکوں نے کیا، اُن کا کیا دھرا پاکستان اور دیگر ترقی پذیر ممالک بھگت رہے ہیں۔

سیکریٹری جنرل اقوامِ متحدہ انتونیو گوتریس نے وزیرِ اعظم شہباز شریف، وزیر خارجہ بلاول بھٹو اور وزیرِ اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کے ہمراہ سندھ میں سیلاب سے متاثرہ علاقوں کا دورہ کیا۔

سندھ کے سیلاب متاثرہ علاقوں کے دورے کے موقع پر یو این سیکریٹری جنرل نے عالمی اپیل کی کہ دنیا توانائی کے متبادل ذرائع پر سرمایہ کاری کرے، یہ پاگل پن اب بند کیا جائے۔

انتونیو گوتریس کا کہنا تھا کہ قدرت سے جنگ ختم کی جائے، سیلاب سے ہونے والے جانی و مالی نقصان پر افسوس ہے۔سیکریٹری جنرل یو این کا کہنا تھا کہ عالمی برادری کو اس مشکل وقت میں پاکستان کا ساتھ دینا ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ ماحولیاتی آلودگی کو کم کرنے کیلئے اقدامات کی ضرورت ہے، موسمیاتی چیلنجز سے نمٹنے کیلئے عالمی برادری کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔

  

 مشکل گھڑی میں پاکستان کیساتھ،سیلابی صورتحال دیکھ کر افسوس ہوا،انتونیو گوتریس

ویب ڈیسک 11 ستمبر 2022

وزیراعظم شہباز شریف اور یو این سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس سیلاب متاثرہ علاقوں کے دورے پر سکھر پہنچ گئے ہیں ،اس موقع پر انتونیو گوتریس کا کہنا تھا کہ پاکستان میں سیلابی صورتحال کی سنجیدگی کا احساس ہے، پاکستان میں سیلاب سے  تباہی اور نقصانات کی صورتحال دیکھ کر افسوس اور دکھ ہوا۔

نجی ٹی وی کے مطابق وزیر اعظم شہباز شریف اور یو این سیکریٹری جنرل انتونیو گوتریس سکھر پہنچ گئے ہیں ، وزیراعلیٰ سندھ نے وزیر اعظم اور انتونیو گوتریس کا سکھر ایئر پورٹ پر استقبال کیا، بلاول بھٹو، احسن اقبال، مریم اورنگزیب بھی وزیر اعظم اور یو این سیکریٹری کے ہمراہ ہیں، وزیر اعلیٰ سندھ نے سیکریٹری جنرل اقوام متحدہ انتونیو گوتریس کو سیلابی صورتحال پر بریفنگ دی ۔

رپورٹ کے مطابق یو این سیکریٹری جنرل نے کہا کہ پاکستان میں سیلاب متاثرین نے جانی ،مالی اور ہر قسم کی قربانیاں دیں، سیلاب سے بڑے پیمانے پر نقصانات کے ازالے کے لیے پاکستان کو بڑی رقم کی ضرورت ہے،امید ہے عالمی ممالک ان حالات میں پاکستان کا ساتھ نبھائیں گے، کوئی شک نہیں موسمیاتی تبدیلی بڑا چیلنج ہے، جس سے پاکستان نمٹ رہاہے، قدرتی آفات سے مزاحمت نہیں کی جاسکتی مگر موسمیاتی تبدیلی سے نمٹنے کے لیے اقدامات ہو سکتے ہیں، موسمیاتی تبدیلی سے نمٹنے کے لیے موثر اقدامات نہ کیے تو شاید آئندہ کا نقصان اس سے بڑاہو۔

ان کا کہنا تھا کہ عالمی برادری سے اپیل ہے وہ پاکستان کی اس مشکل میں مدد کریں اور آگے آئیں، دنیا کو پاکستان میں سیلاب متاثرین کی بحالی تک تنہا نہیں چھوڑنا چاہیے، موسمیاتی تبدیلی کے چیلنجز سے تمام ممالک کو ملکر نمٹنا ہوگا، دنیا میں مسلسل آنے والی قدرتی آفات کی وجہ موسمیاتی تبدیلی ہے۔

 اس سے قبل بریفنگ میں مراد علی شاہ نے بتایا کہ سندھ میں سیلاب سے 537 افراد جاں بحق ہوئے، سیلاب سے فصلوں اور مویشیوں کو نقصان پہنچا، سیلاب کی تباہ کارریوں کے بعد متاثرین کی بحالی کا کام جاری ہے،وزیر اعلیٰ سندھ نے مزید بتایا کہ سیلاب اور بارشوں سے نقصانات کا تخمینہ زیادہ ہوسکتاہے، سکھر اور خیرپور میں سیلابی پانی موجود ہے، نکاسی آب کی کوشش کررہےہیں، سندھ میں رواں سال غیرمعمولی بارشیں ہوئیں، سندھ میں رواں سال 1185 ملی میٹر بارشیں ریکارڈ کی گئیں، سیلاب سے متاثرہ اضلاع میں متاثرین کو ریلیف کیمپوں میں منتقل کیا جا چکا ہے۔

 

 اقوامِ متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس دو روزہ دورے پر پاکستان پہنچ گئے۔ 

ویب ڈیسک 10 ستمبر 2022

نیشنل فلڈ رسپانس اینڈ کوآرڈینیشن سینٹر (این ایف آر سی سی) میں سیلاب اور امدادی سرگرمیوں پر بریفنگ دی گئی۔ انتونیو گوتریس نے کہا کہ سیلابی صورتحال میں پاکستانی حکومت اور عوام سے اظہار یکجہتی کرتے ہیں، میں نے سیلاب متاثرین کو دیکھا ہے ان کے گھر ،فصلیں سب تباہ ہوگئے ہیں، متاثرین کو امداد فراہم کرنے کے لیے تمام ادارے ملکر کام کر رہے ہیں،جو قابل تحسین ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان وہ ملک ہے جو میرے دل کے بہت قریب ہے ، حکومت ،پاک فوج ،سماجی تنظیمیں سیلاب متاثرین کی مدد کر رہی ہیں، عالمی برادری کو پاکستان کی بحالی اور سرمایہ کاری میں حصہ لینا چاہیے، میں عالمی برادری کو پیغام دے رہا ہوں پاکستان اس وقت مشکل میں ہے آگے بڑھیں اور مدد کریں ، اقوام متحدہ اس مشکل وقت میں پاکستان کی ہر ممکن مدد کرے گی۔ سیکرٹری جنرل کا کہنا تھا کہ موسمیاتی تبدیلیوں سے پاکستان متاثر ہو رہا ہے ، تاہم اس نے موسمیاتی تبدیلی سے نمٹنے کے لیے موثر اقدامات نہیں کیے۔ شہباز شریف نے کہا کہ اقوام متحدہ کے جنرل سیکریٹری ہم سے ہمدردی کرنے کے لیے آئے ہیں سیلاب سے متاثرہ علاقوں کی بحالی کے لیے ان سے جو کچھ ہوگا یہ کریں گے، میں دل کی گہرائیوں سے سیکریٹری جنرل کا شکریہ ادا کرتا ہوں، ہمیں عالمی برادری کے تعاون کی ضرورت ہے، سیکریٹری جنرل کی آمد اس بات کا ثبوت ہے کہ وہ پاکستان کے ساتھ کھڑے ہیں سیلاب متاثرین کی امداد کو پوری شفافیت کے ساتھ ان تک پہنچایا جائے گا۔ سیکرٹری جنرل سیلاب زدگان سے اظہارِ یکجہتی کیلئے پاکستان آئے ہیں۔ وہ سیلاب متاثرین سے بھی ملاقات کریں گے۔ سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس کی پاکستان سے محبت نئی نہیں بلکہ اس سے قبل بھی وہ متعدد بار پاکستان سے اپنی محبت کا اظہار کر چکے ہیں۔ انتونیو گوتریس اس سے قبل 10 سال تک اقوامِ متحدہ میں مہاجرین کے ہائی کمشنر بھی رہ چکے ہیں اور انہوں نے ہمیشہ دہشتگردی کے حوالے سے پاکستان کی خدمات کو سراہا ہے۔ وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیوگوتیرس کی پاکستان آمد کا خیر مقدم کرتے ہوئے مشکل گھڑی میں یک جہتی کے اظہار کے لئے شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ سیکریٹری جنرل ایسے موقع پر دورہ کر رہے ہیں جب ایک تہائی پاکستان سیلاب میں ڈوبا ہوا ہے۔ ان کے دورے سے سیلاب متاثرین کے مسائل اور مشکلات کو عالمی سطح پر اجاگر کرنے میں مدد ملے گی۔ واضح رہے کہ سیکریٹری جنرل اقوام متحدہ نے پاکستان کے سیلاب متاثرین کی مدد کے لئے 160 ملین ڈالر کی فلیش فلڈ اپیل جاری کی ہے۔

  

 سات دہائیوں تک حکمرانی کرنے والی ملکہ برطانیہ الزبتھ دوئم انتقال کر گئیں

ویب ڈیسک 9 ستمبر 2022

برطانیہ پر سات دہائیوں تک حکمرانی کرنے والی ملکہ برطانیہ الزبتھ دوئم انتقال کر گئیں۔ وہ برطانیہ پر سب سے طویل عرصے تک حکمرانی کرنے والی ملکہ تھیں، ان کا انتقال 96 برس کی عمر میں بالمورل میں ہوا۔ وہ اپنی سکاٹش رہائش گاہ پر موجود تھیں جہاں طبیعت خراب ہونے پر شاہی خاندان کے افراد پہلے ہی جمع ہوچکے تھے۔ ان کے انتقال پر برطانیہ میں 10 روزہ سوگ کا اعلان کیا گیا ہے۔  بی بی سی کے مطابق الزبتھ دوئم نے اپنے والد کے انتقال کے بعد 1952 میں تخت نشین ہوئی تھیں، ان کے انتقال کے بعد ان کے بڑے بیٹے چارلس سابق پرنس آف ویلز برطانیہ اور 14 کامن ویلتھ ریاستوں کے بادشاہ بن گئے ہیں۔ ایک بیان میں بکنگھم پیلس نے کہا "ملکہ آج سہ پہر بالمورل میں پرامن طور پر انتقال کر گئیں، بادشاہ چارلس اور نئی ملکہ کمیلا آج بالمورل میں ہی رہیں گے اور کل لندن واپس لوٹیں گے۔

الزبتھ دوئم کے دور میں برطانیہ  میں 15 وزرائے اعظم آئے، سب سے پہلے ونسٹن چرچل تھے جو 1874 میں پیدا ہوئے تھے جب کہ سب سے آخری وزیر اعظم حال ہی میں مقرر ہونے والی لز ٹرس ہیں جو ونسٹن چرچل کے 101 سال بعد 1975 میں پیدا ہوئیں۔وہ تمام وزرائے اعظم کے ساتھ مستقل رابطے میں رہتیں اور ہر ہفتے ان کے ساتھ میٹنگ کیا کرتی تھیں۔ ان کی پیدائش 21 اپریل 1926 کو لندن میں ہوئی تھی۔

 

لاپتہ افراد بازیاب نہ ہوئے تو وزیرِ اعظم جوابدہ ہونگے، اسلام آباد ہائیکورٹ

ویب ڈیسک 8 ستمبر 2022

اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ایک سماعت کے دوران ریمارکس دیے ہیں کہ لاپتہ افراد بازیاب نہ ہوئے تو وزیراعظم جوابدہ ہوں گے۔ چیف جسٹس اطہر من اللّٰہ نے اسلام آباد ہائیکورٹ میں پی ٹی آئی رہنما شیریں مزاری کی گرفتاری کے خلاف کیس کی سماعت کی جس کے دوران اٹارنی جنرل اشرف اوصاف عدالت کے سامنے پیش ہوئے۔ اسلام آباد ہائی کورٹ نے پی ٹی آئی رہنما شیریں مزاری کی گرفتاری کے خلاف کیس میں اٹارنی جنرل کو مناسب اقدامات کرنے کی ہدایت کر دی۔ چیف جسٹس اطہر من اللّٰہ نے ریمارکس دیے کہ اٹارنی جنرل صاحب! 9 ستمبر کو لاپتہ افراد کا کیس بھی مقرر ہے، امید ہے کہ 9 ستمبر سے پہلے لاپتہ افراد بازیاب ہو جائیں گے، دوسری صورت میں وزیرِ اعظم جواب دہ ہوں گے۔ چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ نے کہا کہ عدالت نہیں چاہتی کہ معاملہ وہاں تک پہنچے، یہ عدالت کیسز وفاقی کابینہ کو بھیجتی رہی لیکن وہ کچھ نہیں کرتے، وفاقی دارالحکومت میں لوگ محفوظ نہیں ہیں، یہ عدالت اختیارات کی تقسیم پر یقین رکھتی ہے، ایگزیکٹیو کے معاملات میں مداخلت نہیں کرتی۔ چیف جسٹس اطہر من اللّٰہ نے ریمارکس دیے کہ کیا کوئی سول چیف ایگزیکٹیو کہہ سکتا ہے کہ وہ بے بس ہے؟ یہ عدالت انویسٹی گیشن نہیں کرے گی، نہ یہ اس عدالت کا کام ہے، انویسٹی گیشن ایگزیکٹیو کا کام ہے اور انہوں نے ہی کرنا ہے، آپ کہتے ہیں کہ آپ خود بھی متاثر رہے ہیں تو آپ کی حکومت کو تو زیادہ کام کرنا چاہیے، ایسے ٹی او آرز بنائیں کہ آئندہ کوئی یہ نہ کہہ سکے کہ اسے اٹھایا گیا یا اس پر ٹارچر ہوا، آواز اٹھانے والوں پر مشتمل کمیشن بنائیں، یہ بیورو کریٹس کا کام نہیں رہا، آپ یقینی بنائیں کہ کوئی لاقانونیت کا گلہ لے کر عدالت نہ آئے، کوئی آ کر نہ کہے کہ اسے غیر قانونی طور پر اٹھایا گیا یا اس پر ٹارچر کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ بیماری یہ ہے کہ پاور میں بیٹھا شخص پاور کے غلط استعمال کو انجوائے کرتا ہے، بیماری یہ ہے کہ اپوزیشن میں جو برا کہا جائے حکومت میں آ کر وہی کیا جائے، پی ٹی ایم کیس میں کہا تھا کہ اب بغاوت کا کیس نہ بنے، اٹارنی جنرل صاحب! وہ کیس بھی بن گیا ہے۔ اسلام آباد ہائی کورٹ نے اٹارنی جنرل کو مناسب اقدامات کرنے کی ہدایت کی اور کہا کہ آئندہ سماعت پر عدالت کو بتائیں کہ کمیشن بنا رہے ہیں یا کیا کر رہے ہیں؟ اس پر تحریری آرڈر بھی جاری کریں، تشدد اور غیر قانونی اقدامات ختم کرنے کے لیے کیا کرنا ہے آئندہ سماعت پر یہ بھی بتائیں۔ عدالتِ عالیہ نے کیس کی سماعت 2 ہفتے کے لیے ملتوی کر دی۔

 

مسائل کا حل جو نکلتا ہے جنرل باجوہ کی خصوصی کاوشوں سے ہی نکلتا ہے، پرویز الٰہی

ویب ڈیسک 7 ستمبر 2022

وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی نے کہا ہے کہ ملک میں مسائل کا حل جو نکلتا ہے جنرل باجوہ کی خصوصی کاوشوں سے ہی نکلتا ہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے سلسلہ وار ٹویٹس میں وزیراعلیٰ پنجاب نے لکھا کہ پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) غلط فہمی میں نہ رہے کسی کے پاک فوج کے ساتھ تعلقات خراب ہوں گے۔ مسائل کا حل جو نکلتا ہے جنرل باجوہ کی خصوصی کاوشوں سے ہی نکلتا ہے۔ فوج کے خلاف باتیں کرنے والے دین اور قوم کے دشمن ہیں۔

انہوں نے لکھا کہ ختم نبوتﷺ کے حوالے سے کئی قانونی سقم دور کرنے اورقانون سازی کرنے کی، اللہ کریم نے ہمیں توفیق دی اور بہت سی اسلام مخالف سرگرمیوں کے سدباب کا ذریعہ بنایا. الحمدللہ ہم نکاح نامے میں ختم نبوتﷺ کا حلف نامہ شامل کرنے میں کامیاب ہوئے جس کی بدولت اب ہماری بچیوں کا مستقبل محفوظ ہے. ہر کتاب اور نصابی کتب میں جہاں جہاں آقا کریم ﷺ کا نام نامی اسم گرامی آئے گا، وہاں وہاں عقیدہ ختم نبوتﷺ کا اظہار اور درود وسلام بھیجنے کا اہتمام ہوگا۔ یہ اہتمام انشاء اللہ ہمارے لیے نجات و شفاعت اور ہماری نسلوں کے ایمان اور عقیدے کے تحفظ کا ذریعہ بنے گا.

چودھری پرویز الٰہی نے لکھا کہ ہمارا ختم نبوتﷺ کے حوالے سے کردار کوئی آج کا نہیں بلکہ چودھری ظہور الٰہی شہید سے لے کر آج تک اللہ کریم نے محض اپنے فضل و کرم سے ہمیں عقیدہ ختم نبوتﷺ کے دفاع اور تحفظ کی سعادت عطا فرمائی۔ پنجاب اسمبلی کی عمارت میں خوبصورت انداز سے آیات ختم نبوتﷺ جگمگا رہی ہے۔ ہم نے سرکاری دفاتر، وزیراعلیٰ آفس، گورنر ہاؤس اور دیگر اہم سرکاری مقامات کو آیت مبارکہ سے مزین کر دیا ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب نے لکھا کہ ہر کتاب اور نصابی کتب میں جہاں جہاں آقا کریم صلی اللہ علیہ وسلم کا نام نامی اسم گرامی آئے گا، وہاں وہاں عقیدہ ختم نبوتﷺ کا اظہار اور درود وسلام بھیجنے کا اہتمام ہوگا۔ یہ اہتمام انشاء اللہ ہمارے لیے نجات و شفاعت اور ہماری نسلوں کے ایمان اور عقیدے کے تحفظ کا ذریعہ بنے گا، ختم نبوتﷺ کے حوالے سے کئی قانونی سقم دور کرنے اورقانون سازی کرنے کی اللہ کریم نے ہمیں توفیق دی اور بہت سی اسلام مخالف سرگرمیوں کے سدباب کا ذریعہ بنایا. الحمدللہ ہم نکاح نامے میں ختم نبوتﷺ کا حلف نامہ شامل کرنے میں کامیاب ہوئے جس کی بدولت اب ہماری بچیوں کا مستقبل محفوظ ہے، سود کے اوپر جو پیسہ دیا جاتا ہے وہ سختی سے مار پیٹ کر واپس لیتے ہیں، اس پر ہم نے سزائیں رکھی ہیں۔ اللہ تعالیٰ بھی فرماتا ہے کہ سود کا لین دین کرنے والے جب قیامت کے دن اٹھائے جائیں گے تو ان کے چہرے کالے ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ سود کے حوالے سے ہم نے قانون سازی کی ہے.جو سودی کاروبار میں ملوث پایا جاتا ہے اس کیلئے پانچ سال کی سزا رکھی ہے۔سود پر انفرادی طور پر پابندی لگا دی گئی ہے ہر طرح کا سودی لین دین ممنوع قرار دے دیا گیا ہے۔

 

آرمی چیف سمیت تمام فوجی محب وطن ہیں ، عمران خان اپنےبیان کی خود وضاحت کریں ، صدر مملکت عارف علوی

ویب ڈیسک 6 ستمبر 2022

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ پاک فوج کی حب الوطنی پر کسی قسم کا شک نہیں کیا جا سکتا ، آرمی چیف سمیت تمام فوجی محب وطن ہیں ، پاک فوج سیلاب زدگان کی امدادمیں مصروف ہے ۔

 نجی ٹی وی کے مطابق  صدر مملکت  عارف علوی نے کہا کہ موجودہ حکومت کے ساتھ بھی مشاورت اور بات چیت ہوتی رہتی ہے ، اس حکومت سے ماضی کی حکومت کے برعکس رابطہ کم ہے ، میں حکومت اور اپوزیشن کے مابین کشیدگی ختم کرنے کیلئے کردار ادا کر رہا ہوں ، امید ہے جلد  پیشرفت ہو گی ، فوری طور پر کوئی ٹائم فریم نہیں دیا جا سکتا،صوبوں کے درمیان پانی کی تقسیم کا مسئلہ ہے ، پانی کی تقسیم کا طریقہ کار شفاف نہیں ، آئی ایم ایف ڈیل کے بعد حالات بہتر ہو جائیں گے ، معاہدے کے بعد دیگر ممالک کا پاکستان پر اعتماد بحال ہو گا۔

صدر مملکت نے کہا کہ  پی ٹی آئی کی حکومت کے کسی بل پر اعتراض ہوتا تو واپس بھیج دیتا تھا ، میں نے موجودہ حکومت کے بھی دو بل واپس کئے ، میں پی ٹی آئی رہا ہوں ،  اسی نے مجھے صدر بنایا ہے ، اس وقت سب سے بڑا مسئلہ لوگوں کی نجی گفتگو کو ریکارڈ کرنا ہے ،  یہ سب غیبت ہے ، غیبت اور فیک نیوز پاکستان سمیت عالمی مسئلہ ہے ،  یہ کیسے ہو سکتا ہے کہ میری اور اہلخانہ کی گفتگو کو ریکارڈ کیا جائے ۔ 

 

امریکی اراکین کانگریس کا پاکستان کے سیلاب متاثرین کی امداد میں اضافے کا عزم

ویب ڈیسک 5 ستمبر 2022

خاتون رکن کانگریس شیلا جیکسن کی زیر قیادت امریکی وفد نے سندھ کے سیلاب سے متاثرہ علاقوں کا دورہ کیا اور متاثرین میں امدادی سامان تقسیم کیا،امریکی وفد نے سیلاب متاثرین کی امدادی سرگرمیاں تیز کرنے اور امریکی امداد میں اضافے کے عزم کا اعادہ کیا ہے ۔

 نجی ٹی وی کے مطابق امریکی اراکین کانگریس کے وفد نے  خاتون رکن کانگریس شیلا جیکسن کی قیادت میں سندھ کے سیلاب زدہ علاقوں کا دورہ کیا،  امریکی سفیر ڈونلڈ بلوم اور ڈیموکریٹ رہنما طاہر جاوید بھی وفد کے ہمراہ تھے،امریکی وفد پاک فوج کے طیارے میں حیدر آباد پہنچا جہاں بیس کمانڈر نے انہیں سیلاب کی تازہ ترین صورتحال اور امدادی کارروائیوں پر بریفنگ دی۔

وفد نے دادو اور سندھ کے دیگر متاثرہ علاقوں کا دورہ کیا، متاثرین سے ملاقاتیں کی اور ان کے مسائل سنے، وفد کے اراکین نے متاثرین میں امدادی سامان بھی تقسیم کیا، متاثرین کے حالات جاننے کے بعد وفد نے امدادی سرگرمیاں تیز کرنے اور امریکی امداد میں اضافے کے عزم کا اعادہ کیا۔

امریکی رہنماؤں نے ہیلی کاپٹر میں بلوچستان کی سرحد تک متاثرہ علاقوں کا فضائی دورہ بھی کیا، بیس کیمپ واپسی پر سیلاب سے ہونے والے نقصانات اور امدادی سرگرمیوں کا جائزہ لیا گیا، قبل ازیں امریکی کانگریس ویمن شیلا جیکسن لی اور تھامسن رچرڈ اپنے سفیر ڈونلڈ بلوم کے ہمراہ پارلیمنٹ ہاؤس پہنچے جہاں ان کی چیئرمین سینٹ صادق سنجرانی اور سپیکر قومی اسمبلی سے ملاقات ہوئی، ملاقات میں پاکستان میں امریکی سفیر ڈونلڈ بلوم بھی شریک ہوئے، دوطرفہ تعلقات کے فروغ پر تبادلہ خیال کیا گیا، اس موقع پر صادق سنجرانی نے کہا کہ پاکستان امریکا کے ساتھ اپنے دیرینہ تعلقات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے، دونوں ممالک کے درمیان تعمیری روابط خطے میں امن اور ترقی کو فروغ دیں گے۔

 

"میرے خلاف حربے نہ رکے تو اسلام آباد کا رخ کریں گے" عمران خان کا اعلان

ویب ڈیسک 4ستمبر 2022

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان کا کہنا ہے کہ ان کے خلاف جو حربے استعمال کیے جا رہے ہیں وہ نہ رکے تو وہ اسلام آباد کا رخ کریں گے اور پھر انہیں چھپنے کی جگہ نہیں ملے گی،پی ڈی ایم سمیت سب جو مرضی کر لیں  اب یہ میچ جیت نہیں سکتے، ہم پر الزام لگانے والے خود آئی ایم ایف کے سامنے ڈھیر ہوگئے۔

تحریک انصاف کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ہم نے ظلم کا مقابلہ کرنا ہے، یہ ہمارے خلاف جتنی ایف آئی آرز کاٹیں گے انہیں کوئی فائدہ نہیں ہوگا، قانونی کارروائی کا مطالبہ کرنے پر میرے خلاف دہشت گردی کا مقدمہ بنا دیا گیا، میں نے  ہمیشہ عدلیہ کو مضبوط کرنے کی کوشش کی اور اس کے لیے تحریک چلائی، آج ن لیگ عدلیہ کو کہتی ہے کہ عمران خان کے خلاف ایکشن لو، نواز شریف نے سپریم کورٹ پر ڈنڈوں سے حملہ کیا تھا، جسٹس قیوم کو فون کر کے کہتے تھے کہ بے نظیر بھٹو کو  تین نہیں  پانچ  سال کی سزا دو، عمران خان نے کبھی ایسے کام نہیں کیے اور نہ کرے گا۔

 

پیٹرول اور خوراک مہنگی ہونے سے پاکستان میں عدم استحکام کا خدشہ ہے، آئی ایم ایف

آئی ایم ایف کا کہنا ہے کہ پیٹرول اور خوراک مہنگی ہونے کی وجہ سے پاکستان میں معاشی عدم استحکام کا خدشہ ہے، آئندہ سال مہنگائی کی شرح برقرار رہنے سے ملک میں مظاہرے بھی ہوسکتے ہیں۔

ویب ڈیسک 3 ستمبر 2022

آئی ایم ایف نے پاکستان سے متعلق کنٹری رپورٹ جاری کردی جس  میں آئی ایم ایف نے خوراک اور ایندھن کی قیمتوں میں عالمی سطح پر اضافے کو مہنگائی بڑھنے کی اہم وجہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ رواں سال پاکستان میں مہنگائی کی شرح 20 فیصد رہنے کی توقع ہے، مالی سال 2022ء  میں پاکستان کی معاشی سرگرمیاں مضبوط رہیں، فیول سبسڈی کا خاتمہ، ایندھن اور بجلی کی قیمتوں میں اضافہ کیا گیا، خوراک، ایندھن کی عالمی قیمتیں بڑھنے سے مہنگائی میں نمایاں اضافہ ہوا۔

 زرمبادلہ کے ذخائر اور روپے کی قدر میں نمایاں کمی آئی ہے، زرمبادلہ زخائر، پرائمری بجٹ خسارے سمیت 5 اہداف پورے نہیں کیے گئے، علاوہ ازیں سات اسٹرکچرل اہداف پر بھی عمل نہیں کیا گیا۔

پاکستان میں مالی سال 2022ء کے دوران معاشی سرگرمیاں مضبوط رہیں، حکومت نے قرض پروگرام کو ٹریک پر لانے کے لیے کئی اقدامات کیے، بنیادی سرپلس پر مبنی بجٹ، شرح سود میں نمایاں اضافہ شامل ہیں، فیول سبسڈی کا خاتمہ، ایندھن اور بجلی کی قیمتوں میں اضافہ کیا گیا، خوراک، ایندھن کی عالمی قیمتیں بڑھنے سے مہنگائی میں نمایاں اضافہ ہوا۔

آئی ایم ایف رپورٹ کے مطابق حکومت نے مالیاتی شعبے کے استحکام کیلئے اقدامات کی یقین دہانی کرا دی ہے۔ آئی ایم ایف نے مارکیٹ بیسڈ ایکس چینج ریٹ برقرار رکھنے پر زور دیا جب کہ سماجی تحفظ اور توانائی شعبے کو مضبوط بنانے اور ٹیکس ریونیو اور زرمبادلہ ذخائر میں اضافے پر بھی زور دیا گیا۔

قرض پروگرام کی مدت میں جون 2023ء تک توسیع کر دی گئی ہے، اس سے ضروری بیرونی فنانسنگ کے حصول میں مدد ملے گی، پالیسی اصلاحات کے باوجود قرض پروگرام کو غیر معمولی خطرات کا سامنا ہے، گزشتہ سال کشیدہ سیاسی ماحول کے دوران کئی وعدوں اور اہداف پر عمل نہیں کیا گیا۔

رپورٹ میں مزید بتایا گیا کہ بیرونی پوزیشن غیر مستحکم اور کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں اضافہ ہوا، زرمبادلہ ذخائر اور روپے کی قدر میں نمایاں کمی آئی ہے، زرمبادلہ کے ذخائر اور پرائمری بجٹ خسارے سمیت 5 اہداف پورے نہیں کیے گئے علاوہ ازیں سات اسٹرکچرل اہداف پر بھی عمل نہیں کیا گیا۔

آئی ایم ایف کی رپورٹ میں پی ٹی آئی حکومت کی طرف سے کئی وعدوں اور اہداف پر عمل درآمد نہ ہونے کی نشاندہی کی گئی۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ پی ٹی آئی حکومت نے زرمبادلہ کے ذخائر اور پرائمری بجٹ خسارے سمیت 5 اہداف پورے نہیں کیے، 3 کارکردگی اور 7 اسٹرکچرل شرائط بھی پوری نہیں کیں۔

آئی ایم ایف نے قرض پروگرام کے تحت بجلی اور گیس ٹیرف میں بروقت اضافے پر زور دیتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ گردشی قرضے میں کمی اور ٹیکس ریونیو بڑھایا جائے۔ قرض پروگرام کے تحت تیل کی عالمی قیمتوں میں اضافے کا بوجھ عوام پر منتقل کیا جائے گا، نئی ٹیکس ایمنسٹی اسکیم یا ٹیکس چھوٹ نہیں دی جائے گی، ڈیٹا کے استعمال سے زیادہ آمدن والے 3 لاکھ افراد کو پرنسل انکم ٹیکس نیٹ میں لایا جائے گا۔

رپورٹ کے مطابق پاکستان میں اس سال معاشی شرح نمو 3.5 فیصد جبکہ مہنگائی 20 فیصد تک رہے گی۔ اصلاحات کے باوجود قرض پروگرام کیلئے خطرات برقرار ہیں۔

 

ناسا نے اپنی سیٹلائٹ تصاویر کو دیکھ کر انکشاف کیا ہے کہ پاکستان میں موسلا دھار بارش اور سیلاب سے سندھ کے علاقوں میں دریا کا بہاؤ کناروں سے باہر آگیا اور اس نے وسیع ہوتے ہوئے وقتی طور پر ایک ایسی جھیل کی شکل اختیار کرلی جو 100 کلومیٹر وسیع ہے۔

ویب ڈیسک 2 ستمبر 2022

اس سے ایک روز قبل اقوامِ متحدہ کے سیکریٹری جنرل اینتونیو گوتیرس نے پاکستان میں سیلاب کی ہول ناک تباہی کو ’موسمیاتی سانحہ‘ قرار دیتے ہوئے دنیا بھر سے دستِ تعاون بڑھانے کی استدعا کی تھی۔

دوسری جانب ارضیاتی تبدیلیوں پر نظر رکھنے والے یورپی سائنسی فورم ’کوپرنیکس‘ نے کہا ہے کہ پاکستان میں تباہ کن سیلاب کی وجہ مون سون کا وہ نظام ہے جو اس سال کم ازکم 10 گنا زائد شدت اختیار کرچکا تھا۔

ناسا نے 28 اگست کو موڈس سیٹلائٹ سینسر سے لی گئی تصاویر جاری کی ہیں جس میں موسلادھار طوفانی بارشوں اور دریا کے بیرونی بہاؤ سے پانی کی وسیع مقدار ایک جھیل نما شکل اختیار کرچکی ہے اور سندھ کا ایک وسیع میدانی علاقہ اس کے زیرِ عتاب آگیا ہے۔

اسا کے مطابق یہ تمام علاقہ ایک زخیز زرعی خطہ تھا جو شدید متاثر ہوا ہے۔ اب تک پاکستان میں سیلابی تباہ کاریوں سے 1150 کے قریب افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں، زخمیوں کی تعداد ہزاروں میں ہے، پانچ لاکھ حاملہ مائیں آخری مرحلے پر مدد کی منتظر ہیں اور مالی نقصان کا اندازہ 10 ارب ڈالر لگایا گیا ہے۔

ناسا کے مطابق 1961ء کے بعد سے پاکستان نے شدید ترین مون سون دیکھا ہے جس کی تصدیق محکمہ موسمیات نے بھی کی ہے۔ سندھ اور بلوچستان میں معمول سے 500 فیصد زائد بارشوں نے آبادیوں اور دیہات کو نگل لیا ہے۔ فصلیں بہہ گئی ہیں اور عمارتیں مخدوش ہوچکی ہیں۔

 

برطانوی رکن پارلیمنٹ کلاڈیا ویب نے کہا کہ کلائٹمنٹ چینج میں پاکستان کا کردار نہ ہونے کے برابر ہے لیکن وہ ترقی یافتہ ممالک کی لالچ کی قیمت تباہ کن سیلاب کی شکل میں ادا کر رہا ہے۔

ویب ڈیسک 01 ستمبر 2022

پاکستان میں اس سال مون سون بارشوں کے بعد بھپرے ہوئے سیلاب نے بڑے پیمانے پر تباہی مچادی ہے۔ ہزار سے زائد اموات ہوچکی ہیں۔ لاکھوں گھر صفحہ ہستی سے مٹ گئے۔ ہزاروں مویشی ڈوب گئے اور مال و اسباب بہہ گیا۔

سیلاب کی اسی غیر معمولی صورت حال کی وجہ کلائمنٹ چینج کو قرار دیا جا رہا ہے جس کے باعث نہ صرف غیر معمولی بارشیں ہوئیں بلکہ گلیشیئر بھی پگھل گئے اور سیلابی ریلا رہائشی علاقوں کو روندتا گیا۔

اس صورت حال پر برطانیہ کی رکن پارلیمنٹ کلاڈیا ویب نے مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر پر لکھا کہ گرین ہاؤس کے عالمی اخراج میں پاکستان کا صحہ صرف ایک فیصد ہے لیکن پاکستان کا شمار ماحولیاتی تبدیلیوں کا بدترین سامنا کرنے والے سرفہرست 10 ممالک میں ہوتا ہے۔

برطانوی رکن اسمبلی نے مزید لکھا کہ پاکستان میں 7 ہزار 273 گلیشیئرز ہیں جو قطب شمالی کے بعد تعداد میں سب سے زیادہ ہیں اور اب موسمیاتی تبدیلیوں کے باعث یہ تیزی سے پگھل رہے ہیں۔

کلاڈیا ویب نے اعتراف کیا کہ پاکستان ہماری (ترقی یافتہ ممالک) کی لالچ کی قیمت چکا رہا ہے۔

خیال رہے کہ ترقی یافتہ ممالک موسمیاتی تبدیلیوں کے سب سے زیادہ ذمہ دار ہیں جن کا گرین ہاؤس کے عالمی اخراج میں حصہ کہیں زیادہ ہے اور کاربن ڈائی آکسائیڈ کے اخراج سے موسم میں بدترین تغیر آیا ہے لیکن اس خمیازہ پاکستان جیسے ممالک بھگت رہے ہیں۔

 

 چین اور آسٹریلیا نے پاکستان میں سیلاب کی تباہ کاریوں کے بعد متاثرین اور بحالی کے لیے ایک کروڑ 64 لاکھ ڈالر امداد دینے کا اعلان کیا ہے۔

ویب ڈیسک 31 اگست 2022

ایکسپریس نیوز کے مطابق چین کی طرف سے سیلاب متاثرین کیلیے 100 ملین یوآن (ایک کروڑ 44 لاکھ ڈالر) امداد کا اعلان کیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ 25000 خیموں اور دیگر امدادی اشیا کے ساتھ چینی فضائیہ کی پروازیں 300 خیموں کی پہلی کھیپ لے کر آج اور کل کراچی پہنچیں گی۔ چینی سفیر کراچی میں امدادی سامان پاکستانی حکام کے حوالے کریں گے ۔

چینی صدر شی جن پنگ اور وزیراعظم لی کی چیانگ نے سیلاب سے جانی و مالی نقصانات پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے پاکستانی قیادت اور عوام سے یکجہتی کے پیغامات بھیجے ہیں۔صدر عارف علوی اور وزیراعظم شہباز شریف کو چینی قیادت کی جانب سے پیغام پاکستان میں سفیر نونگ رونگ نے پہنچایا۔

وزیراعظم شہباز شریف نے چینی قیادت کے لیے نیک تمناؤں کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہمیشہ کی طرح چین کی قیادت اور عوام نے پاکستان دوستی اور فراخ دلی کا مظاہرہ کیا ہے۔ انہوں نے چینی قیادت کا شکریہ ادا کیا۔

دریں اثنا آسٹریلیا نے پاکستان میں سیلاب متاثرین کے لیے 20 لاکھ ڈالر کی امداد کا اعلان کر دیا۔ محکمھ امور خارجہ و تجارت کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ آسٹریلیا نے پاکستان میں تباہ کن سیلاب پر ہنگامی انسانی مدد کے تحت مالی معاونت کا اعلان کیا ہے۔ آسٹریلیا کی جانب سے امداد ورلڈ فوڈ پروگرام کے ذریعے فراہم کی جائے گی۔

وزیراعظم شہباز شریف نے سیلاب متاثرین کی امداد پر آسٹریلیا کی حکومت اور عوام سے اظہار تشکر کرتے ہوئے پیغام دیا ہے کہ یہ اقدام قابل تحسین اور انسانیت دوستی کا مظہر ہے۔

دوسری جانب امریکی سیاسی رہنماؤں  کی جانب سے بھی پاکستان میں سیلاب متاثرین سے اظہار یکجہتی کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ حالیہ سیلاب سے قیمتی جانوں کے ضیاع ، فصلوں، مویشیوں اور انفرا اسٹرکچر کو پہنچنے والے نقصان سمیت وسیع پیمانے پر ہونے والی تباہی پر دکھ اور افسوس ہوا۔

مشیر برائے امریکی سیکرٹری خارجہ ڈیرک شولے نے کہا کہ حالیہ سیلاب کے نتیجے میں پاکستان میں ہونے والے قیمتی جانوں کے ضیاع و دیگر نقصانات اور ان کے اثرات پر بہت غمزدہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مشکل کی گھڑی میں ہم پاکستان کے ساتھ کھڑے ہیں۔ علاوہ ازیں سینیٹر جم رِش کا پاکستان میں سیلاب سے متاثرہ افراد اور خاندانوں کے ساتھ اظہار ہمدردی کیا ہے۔ علاوہ ازیں کانگریس ویمن شیلا جیکسن نے امریکی صدر کے نام خط میں  سیلاب زدگان کے لیے فوری مدد کی درخواست کی ہے۔

 

 عمران خان کی ٹیلی تھون ٹرانسمیشن، سیلاب زدگان کیلئے 500 کروڑ سے زیادہ جمع کرلیے

ویب ڈیسک 30 اگست 2022

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان نے سیلاب زدگان کی مدد کیلئے کی گئی ٹیلی تھون ٹرانسمیشن میں 500 کروڑ روپے سے زیادہ کے عطیات جمع کرلیے۔

عمران خان کی جانب سے سیلاب زدگان کی مدد کیلئے انٹرنیشنل ٹیلی تھون ٹرانسمیشن کی گئی جو تین گھنٹے سے زائد وقت تک جاری رہی۔ اس دوران دنیا بھر سے پاکستانیوں نے سیلاب زدہ بھائی بہنوں کی مدد کیلئے بڑے بڑے عطیات دینے کا وعدہ کیا۔ ٹرانسمیشن کے میزبان فیصل جاوید کے مطابق ٹرانسمیشن کے دوران سیلاب زدگان کیلئے 500 کروڑ روپے سے زائد عطیات دینے کا وعدہ کیا گیا ہے جس میں سے بہت سی رقم متعلقہ اکاؤنٹس میں آنا شروع بھی ہوگئی ہے۔

 انہوں نے کہا کہ جن لوگوں نے پیسے دینے کا اعلان کیا ہے وہ دراصل اللہ تعالیٰ کے ساتھ وعدہ ہے ، ان تمام لوگوں سے گزارش ہے کہ وہ جلد از جلد یہ رقم اکاؤنٹ میں ٹرانسفر کردیں تاکہ مستحقین تک اسے بروقت پہنچایا جاسکے۔ فیصل جاوید نے  یہ اعلان بھی کیا کہ ایسی ہی ٹرانسمیشن ایک بار پھر کی جائے گی۔

 

حالیہ گلوبل وارمنگ گذشتہ 7000 برس میں شدید ترین قرار 

ویب ڈیسک 29 اگست 2022

درخت کے تنے میں موجود چھلے ماضی کی موسمی کیفیات کے بہترین قدرتی دستاویزات میں سے ایک ہیں کیوں کہ درخت بارش اور درجہ حرارت جیسے مقامی موسم کے عوامل کے لیے حساس ہوتے ہیں۔

گرم اور مرطوب سالوں میں درخت کے یہ چھلےعموماً چوڑے ہوتے ہیں جبکہ سرد اور خشک سالوں میں یہ سکڑ جاتے ہیں۔قطبین کے نواحی علاقوں میں درختوں کی نمو عموماً درجہ حرارت کی تبدیلی کے حوالے سےزیادہ حساس ہوتی ہے اور اگر درختوں کی نمو اور درجہ حرارت کے ریکارڈ کے اعداد و شمار کے درمیان موازنہ موجود ہو تو قدیم درختوں کے چھلوں کی چوڑائی سے ماضی کے درجہ حرارت کا اندازہ لگایا جاسکتا ہے۔ رشیئن اکیڈمی آف سائنسز اور یورل فیڈرل یونیورسٹی کے سائنس دان شمال مغرب سائبیریا میں جزیرہ نما یامل کے علاقے میں گزشتہ 40 سالوں سے تحقیق کر رہے ہیں اور فاسل لکڑیاں تجزیے کے لیے اکٹھی کر رہے ہیں۔ روس میں ڈینڈروکرونولوجی کے بانی اسٹیپن شیاٹوف اس خطے میں ملنے والے قدیم درختوں کی اہمیت محسوس کرنے والے اور ان نمونوں کو باقاعدہ طور پر جمع کرنے والے پہلے شخص ہیں۔ رشیئن اکیڈمی آف سائنسز کے محققین نے تب سے اب تک دو درجن سے زیادہ مشن کر لیے ہیں اور قدیم درختوں کے تنوں کے 5000 سے زائد نمونے جمع کر لیے ہیں۔ جرنل نیچر کمیونیکیشنز میں شائع ہونے والی تحقیق میں محققین نے بتایا کہ شمال مغربی سائبیریا اس وقت 7000 سالوں میں سب سے گرم موسمِ گرما سے گزر رہا ہے۔

 

پاکستان میں سیلاب سے نقصانات

   کے باعث برطانیہ نے امدادی سرگرمیوں کے لیے 1.5 ملین پاؤنڈز کا اعلان کردیا۔

ویب ڈیسک 28 اگست 2022

برطانوی ہائی کمیشن نے بیان میں کہا کہ اس قدرتی آفت کے مقابلے کے لئے برطانیہ امدادی سرگرمیوں کی مد میں 1.5 ملین پاؤنڈز امداد فراہم کرے گا، پاکستان میں 700,000 گھر تباہ ہو گئے ہیں، مون سون کی شدید بارشوں نے لاکھوں افراد کو متاثر کیا، ملک کے جنوب میں سیلاب سے کم از کم 900 افراد کی ہلاکت کے بعد برطانیہ پاکستان کو فوری امداد فراہم کر رہا ہے۔

برطانوی ہائی کمیشن نے کہا کہ اقوام متحدہ رواں ہفتے کے آخر میں پاکستان میں آفت کے باعث ضروریات کا جائزہ لے رہا ہے، توقع ہے کہ منگل کو اقوام متحدہ کی (پاکستان کی امداد کے لئے) اپیل شروع کی جائے گی۔

 نمائندہ خصوصی برائے برطانوی وزیراعظم نے کہا کہ ہم پاکستانی حکام کے ساتھ بھی براہ راست کام کر رہے ہیں، میں امدادی سرگرمیوں میں شامل ہر فرد کو خراج تحسین پیش کرنا چاہوں گا، ہم اس تباہی کا مشاہدہ کر رہے ہیں جو موسمیاتی تبدیلی کا سبب بن سکتی ہے، اور سب سے زیادہ کمزور لوگوں کو متاثر کرتی ہے، برطانیہ فوری مدد کے لیے 1.5 ملین پاؤنڈ تک فراہم کر رہا ہے۔

 

نوشہرہ کے مقام پر دریائے کابل میں اونچے درجے کے سیلاب کا خطرہ ، ریڈ الرٹ جاری

ویب ڈیسک 27 اگست 2022

پرونشل ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی (پی ڈی ایم اے ) نے نوشہرہ کے مقام پر دریائے کابل میں اونچے درجے کے سیلاب کا خطرہ ظاہر کرتے ہوئے ریڈ الرٹ جاری کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پی ڈی ایم اے دفتر کی جانب سے نوٹیفکیشن جاری کیا گیا ہے ، جس میں کہا گیا ہے کہ دریائے کابل میں پانی کی سطح3لاکھ کیوسک تک پہنچنے کا امکان ہے ، پی ڈی ایم کے مطابق پانی کے بڑے ریلے کے باعث اگلے 48گھنٹوں میں دریائے کابل میں انتہائی اونچے درجے کاسیلاب متوقع پی ڈی ایم اے کے نوٹیفکیشن کے مطابق دریائے سندھ اور کابل کی معاون ندیوں میں بھی اس دوران سیلاب آنے کا خدشہ ہے،جبکہ بلوچستان کے دریاؤں اور ندی نالوں میں آئندہ 24گھنٹوں تک طغیانی کا امکان ہے

دوسری جانب سوات میں سیلاب اپنے راستے میں آنے والی ہر شے تنکوں کی طرح بہا لے گیا، سینکڑوں مکان اور درجنوں ہوٹلز تباہ ہو گئے ،سیلاب اور  لینڈ سلائیڈنگ سے 15 افراد جاں بحق ہو گئے ۔ ضلعی انتظامیہ کے مطابق سوات میں سیلاب سے 130 کلومیٹر کی سڑکیں تباہ ہوگئیں جبکہ 15رابطہ پل مکمل یا جزوی طور پر تباہ ہو گئے،سیلابی ریلے سے 100 سے زائد مکانات اور دیگر عمارتیں تباہ ہوئیں جبکہ 50 کےقریب ہوٹلز تباہ ہو گئے۔ 

کالام میں دریا کنارے بنے ہوٹل تباہ و برباد ہوگئے، بحرین میں بھی سیلابی ریلا بھی تباہی کے نشان چھوڑ گیا ،سوات میں درجنوں درخت جڑ سے اکھڑ گئے، گلیاں اور سڑکیں دریا کا منظر پیش کرنے لگیں، گاڑیوں کو بھی سیلابی ریلا اپنے ساتھ لے گیا جبکہ سوات کا سب سے بڑا ایوب برج بھی بند ہو گیا،ادھر سوات ایکسپریس وے لینڈ سلائیڈنگ کی وجہ سے پلائی کے مقام پر جزوی طور پر بند کر دی گئی، ضلع بھر میں ہنگامی حالت نافذ کر دی گئی ہے۔

 

سپریم کورٹ نے اوور سیز پاکستانیوں کے ووٹ کے حق سے متعلق چیئرمین پی ٹی آئی اور سابق وزیر اعظم  عمران خان کی درخواست سے اعتراضات  ختم کرتے ہوئے جلد سماعت کیلئے  مقرر کرنے کا حکم دیدیا۔

ویب ڈیسک 26 اگست 2022

اوور سیز پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دینے سے متعلق عمران خان کی درخواست پر سپریم کورٹ میں سماعت ہوئی ، عدالت نے  عمران خان کی اوور سیز پاکستانیوں کی ووٹنگ سے متعلق درخواست پر اعتراضات ختم کردئیے گئے اور   رجسٹرار آفس کو جلد سماعت کیلئے مقرر کرنے کا حکم دے دیا۔کورٹ نے ریمارکس دیے کہ بظاہر اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹ کا حق مفاد عامہ اور بنیادی انسانی حقوق کا معاملہ ہے،  عدالت متعدد بار اوورسیز پاکستانیوں کے حقوق سے  متعلق فیصلے دے چکی ہے، کیس کو مناسب بینچ کے سامنے لگایا جائے۔جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی  نے استفسار کیا کہ کیا موجودہ اسمبلی بنیادی حقوق کے حوالے سے ترامیم کرنے کی مجاز ہے؟، اسمبلی میں اس وقت ارکان کی تعداد بہت کم ہے۔ جسٹس اعجاز الاحسن نےریمارکس دیے کہ    اوورسیز پاکستانیوں کے ذریعے ملک میں زرمبادلہ آرہا ہے،  اوورسیز پاکستانیوں کو تو ترجیحی بنیادوں پر سہولیات دینی چاہییں ، مالیاتی اداروں اور دوست ممالک سے ایک ایک ارب ڈالر مانگے جا رہے ہیں، اوورسیز پاکستانی سالانہ 30 ارب ڈالر بھیجتے ہیں انہیں کہا گیا آپ ووٹ نہیں دے سکتے، اوورسیز کو کہا جاتا ہے ووٹ ڈالنا ہے تو ٹکٹ لیکر پاکستا ن آؤ۔

جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی نے ریمارکس دیے کہ  سمندر پار پاکستانی تو بغیر کسی شرط کے 30 ارب ڈالر بھیجتے ہیں،پوری دنیا میں جدید ڈیوائسز استعمال ہوتی ہیں، ہر کام میں جدید آلات استعمال ہوتے ہیں تو ووٹنگ میں کیوں نہیں؟۔جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیے کہ جعلی ووٹ تو یہاں بھی ڈل جاتے ہیں۔

 

عمران خان ہر طرح کی صورتحال کا مقابلہ کرنے کیلئے تیارہیں، حامد میر کا دعویٰ

ویب ڈیسک 25 اگست 2022

سینئر صحافی و تجزیہ کار حامد میر کا کہنا ہے کہ چیئر مین  پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی )عمران خان  سے میری تفصیلی گفتگو ہوئی ہے جس سے مجھے اندازہ ہوا ہے کہ وہ ہر طرح  کی صورتحال کیلئے تیار ہیں، ان کو گرفتار کرنے کی کوشش کی گئی تو اس کا لائحہ عمل ان کے پاس ہے ۔

نجی ٹی وی "جیو نیوز "کے مطابق حامد میر کا کہنا تھا کل عمران خان سے تفصیلی گفتگو ہوئی جس میں انہوں نے بہت سی پرانی باتیں کیں، ان کے ساتھ ہوئی گفتگو  کی کچھ چیزیں عوام کے سامنے نہیں لا سکتا البتہ مجھے اس ملاقات سے تاثر  یہی ملا کہ عمران خان ہر طرح کی صورتحال کا مقابلہ کرنے کے لیے تیار ہیں، اگر ان کے ساتھ لڑائی کی جائے گی ان کو گرفتار کرنے کی کوشش کی جائے گی تو اس کے لیے بھی ان کے پاس لائحہ عمل ہے اور  اگر کوئی بات چیت کا راستہ اختیار کرنے کی کوشش کرے گا تو اس کے لیے بھی ان کے پاس اپنی شرائط موجود ہیں، بظاہر انہوں نے تاثر مجھے یہی دیا کہ وہ لڑائی کے لیے بھی تیار ہیں اور انتخابات کی خاطر بات چیت کے لیے بھی تیار ہیں۔سینئر تجزیہ کار نے کہا کہ عمران خان نے ایک ایشو پر میرے ساتھ کافی گفتگو کی ہے اور وہ تھا ٹیکنیکل ناک آؤٹ کا کیونکہ ان کا خیال ہے کہ شہباز گل کے ذریعے کوشش کی گئی کہ ان کے خلاف کوئی بیان لیا جائے اور  اس معاملے پر وہ مجھے کافی رنجیدہ اور غصے میں بھی نظر  آئے، ان کے پاس شہباز گل کے معاملے پر کچھ ایسی معلومات تھیں جو انہوں نے ابھی تک شیئر بھی نہیں کیں، شاید ان کے پاس اس حوالے سے کافی تفصیلات ہیں اسی وجہ سے وہ بار  بار  یہی کہہ رہے تھے کہ مجھے نیچا دکھانے کے لیے اور گرانے کے لیے انہوں نے شہباز گل پر ٹارچر کیا ہے،مجھے پتہ ہے کہ یہ کون کروا رہا ہے اور یہ مجھے بلیک میل نہیں کر سکیں گے، یہ مجھے پریشر نہیں دے سکیں گے، مجھے لگا کہ ذہنی طور پر وہ تیار ہیں اور ان کو پتہ ہے کہ ان کو نااہل کر دیا جائے گا۔حامد میر کا کہنا تھا جب میں نے ان کو کہا کہ ماضی میں کچھ سیاستدانوں کے ساتھ اسی قسم کے واقعات ہوئے اور انہیں نااہل کیا جا سکتا ہے تو آپ کو نہیں کیا جا سکتا؟ جس پر انہوں نے کہاکہ  ان کے اور میرے کیس میں فرق ہے، ان پر کرپشن کا الزام تھا میرے اوپر کرپشن کا کوئی الزام نہیں ہے، مجھے جس چیز پر بہت زیادہ حیرانی ہوئی کہ توہین عدالت والے معاملے کو وہ  بہت ہلکا لے رہے تھے، میرا خیال ہے کہ اس معاملے پر انہوں نے وکلا کے ساتھ تفصیل سے ابھی تک صلاح مشہورہ نہیں کیا۔ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ عمران خان قائل ہیں کہ کہیں نا کہیں ان کے خلاف فیصلہ کیا جا چکا ہے، انہیں ہر قیمت پر  نااہل بھی کرنا ہے اور  پھر لامحالہ ان کو گرفتار کرنے کی کوشش بھی کی جائے گی، اس وقت وہ ایک سیاسی نقطہ نظر سے صورتحال کا جائزہ لے رہے ہیں، آپ کو یاد ہوگا کہ پہلے بھی سپریم کورٹ میں توہین عدالت کے کیس میں وہ معافی مانگ چکے ہیں تو یہ سوال پیدا ہوتا ہے کہ اس دفعہ وہ فوری طور پر معافی مانگنے کے لیے کیوں تیار نہیں ہیں تو شاید ان کے ساتھ گفتگو سے میں نے یہ اندازہ لگا یا کیونکہ ان کو پتہ ہے کہ فیصلہ تو پہلے ہی کیا جا چکا ہے اور میں دوبارہ کہوں گا کہ یہ ان کا خیال ہے میرا خیال نہیں ہے تو ان کو پھر مشورہ بھی ایسا ہی دیا گیا ہے کہ پھر آپ پہلے اپنا دفاع کر لیں، کوئی ٹیکنیکل طریقے سے دیکھ لیں کہ عدالت کا موڈ کیا ہے تو ان کا یہ خیال ہے کہ اگر فیصلہ پہلے ہی کر لیا گیا ہے تو مجھے معافی مانگنے کی کیا ضرورت ہے، پھر میں عوام میں جاکر کیا کہوں گا تو شاید ان کے ذہن میں یہ بات ہے، اور ایک بات شاید ان کے ذہن میں یہ بھی ہے میں نہ تو نواز شریف ہوں اور نہ میں یوسف رضا گیلانی ہوں، اگر میرے خلاف کوئی ایکشن لیا گیا یا مجھے نااہل کیا گیا یا مجھے گرفتار کیا گیا تو اسلام آباد پر خیبر پختونخوا سے بھی سیاسی یلغار ہوگی اور پنجاب سے بھی سیاسی یلغار ہوگی، شہباز شریف کی حکومت اور  رانا ثنا اللہ کی پولیس اور دیگر ادارے ان کی سیاسی طاقت کا مقابلہ نہیں کر سکیں گے۔

 

وزیراعظم محمد شہبازشریف نے قطر کے وزیراعظم اور وزیر  داخلہ شیخ خالد بن خلیفہ بن عبدالعزیز الثانی سے ملاقات کی۔ وزیراعظم کابینہ کے سینئر ارکان کے ہمرا سرکاری دورے پر دوحہ پہنچے ہیں۔

ویب ڈیسک 24 اگست 2022

دونوں رہنماؤں نے بات چیت کے دوران اپنے اپنے فریقین کی قیادت کی اور دو طرفہ تعلقات کا جائزہ لیا جبکہ مشترکہ دلچسپی کے علاقائی اور بین الاقوامی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ملاقات میں دونوں ممالک کے درمیان روابط میں بڑھتی ہوئی رفتار پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے، دونوں رہنماؤں نے دو طرفہ تعاون ,خاص طور پر تجارت اور سرمایہ کاری کے شعبوں میں تعاون کو مزید بڑھانے کے عزم کا اعادہ کیا۔  وزیراعظم شہباز شریف نے توانائی کے شعبے بشمول قابل تجدید ذرائع، انفراسٹریکچر، نقل و حمل، زراعت اور لائیو اسٹاک اور سیاحت میں قطر کے ساتھ تعلقات کو گہرا اور متنوع بنانے میں حکومت  پاکستان کی گہری دلچسپی کا اظہار کیا۔ وزیر اعظم نے قطر کو فیفا ورلڈ کپ 2022 کی میزبانی پر مبارکباد دی اور دنیا کے سب سے بڑے کھیلوں کے مقابلوں کے انعقاد میں قطر کے عوام اور حکومت کی کامیابی کی خواہش کا اظہار کیا۔ وزیراعظم نے قطر میں مقیم پاکستانیوں کی دیکھ بھال پر قطری قیادت کا شکریہ ادا کیا اور پاکستان کے انسانی وسائل کی بھرپور صلاحیت کو اجاگر کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ وہ پاکستانیوں کے لیے مزید مواقع تلاش کرنے کے لیے قطری قیادت کے ساتھ کام کرنے کے منتظر ہیں جو اپنی مہارت اور کاروبار کے ذریعے قطر کی ترقی میں اپنا حصہ ڈال سکتے ہیں۔ افغانستان کی تازہ ترین پیش رفت کا جائزہ لیتے ہوئے وزیر اعظم نے تعمیری مشغولیت کی اہمیت اور عالمی برادری کو انسانی اور اقتصادی بحرانوں سے نمٹنے کے لیے افغان عوام کے لیے اپنی حمایت بڑھانے کی ضرورت پر زور دیا۔ وزیراعظم نے افغانستان میں امن اور مفاہمت کے لیے قطر کی کوششوں کے ساتھ ساتھ ملک کے لیے اس کی انسانی امداد کو سراہا۔ دونوں رہنماؤں نے اس بات پر اتفاق کیا کہ پاکستان اور قطر کے درمیان دیرینہ برادرانہ تعلقات ہیں جن کی جڑیں مشترکہ عقیدے اور اقدار کے ساتھ ساتھ مختلف شعبوں میں قریبی دوطرفہ تعاون پر مشتمل ہیں۔ دونوں ممالک علاقائی اور بین الاقوامی مسائل پر بھی قریبی  ہم آہنگی  رکھتے  ہیں۔

 

وفاقی کابینہ نے فیفا ورلڈ کپ کی سیکیورٹی کے لئے قطر حکومت اور پاک فوج کے مابین معاہدے کی منظوری دیدی۔

ویب ڈیسک 23 اگست 2022

قطر نے 20 نومبر سے شروع ہونے والے فٹبال ورلڈ کپ کی سیکیورٹی کیلئے پاک فوج سے مدد مانگی تھی۔

علاوہ ازیں قطر کے امیر شیخ تمیم بن حمد الثانی کی دعوت پر وزیراعظم محمد شہباز شریف کل 23 سے 24 اگست 2022 تک قطر کا دو روزہ سرکاری دورہ کریں گے۔یہ وزیراعظم شہباز شریف کا پہلا دورہ قطر ہوگا۔

وزیر اعظم کے ساتھ وفاقی کابینہ کے اہم ارکان سمیت ایک اعلیٰ سطحی وفد بھی قطر جائے گا۔ دورے کے دوران وزیراعظم قطری قیادت کے ساتھ مختلف امور پر مشاورت کریں گے۔ دونوں فریقین دوطرفہ تعلقات کے تمام پہلوؤں کا جائزہ لیں گے، خاص طور پر توانائی سے متعلق تعاون کو آگے بڑھانے، تجارتی اور سرمایہ کاری کے تعلقات کو گہرا کرنے اور قطر میں پاکستانیوں کے لیے روزگار کے وسیع مواقع تلاش کرنے پر خصوصی توجہ دی جائے گی.

وزیراعظم دوحہ میں قطری اور پاکستانی تاجروں، سرمایہ کاروں اور کاروباری شخصیات سے بھی ملاقاتیں کریں گے۔ وزیر اعظم دوحہ میں “اسٹیڈیم 974″ کا بھی دورہ کریں گے جہاں انہیں فیفا ورلڈ کپ کی میزبانی کے لیے قطر کی حکومت کی جانب سے کی گئی وسیع تیاریوں کے بارے میں بریفنگ دی جائے گی۔

وزیراعظم کے دورہ قطر سے دونوں ممالک کے درمیان مختلف شعبوں میں تعاون کو مزید گہرا کرنے اور ان کی بڑھتی ہوئی اقتصادی شراکت داری کو مزید تقویت ملے گی.

 

شہر قائد کے حلقہ این اے 245  میں ہونے والے ضمنی انتخابات کے غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف نے میدان مار لیا۔

ویب ڈیسک 22 اگست 2022

این اے 245 کراچی کے تمام 263 پولنگ سٹیشنز کے غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پاکستان   تحریک انصاف کے امیدوار محمود مولوی نے  29  ہزار   475 ووٹ لے کر  میدان مار لیا۔  متحدہ قومی موومنٹ پاکستان (ایم کیو ایم)  کےمعید انور نے    13 ہزار   193 ووٹ لیے اور وہ دوسرے نمبر پر رہے۔  ٹی ایل پی کےاحمد رضا   نو ہزار 836  ووٹ لے کر تیسرے جب کہ  ایم کیو ایم کے سابق سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار  تین ہزار  479 ووٹ لے کر چوتھے نمبر پر  رہے۔ خیال رہے کہ یہ نشست تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے عامر لیاقت حسین کے انتقال کے باعث خالی ہوئی تھی۔

 

اقوام متحدہ نے خبردار کیا ہے کہ دنیا بھر میں اجناس کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ ہوا رہا ہے اور عالمی سطح پر مہنگائی میں کمی کے لیے روس سے اجناس کا منڈیوں تک پہنچنا بہت ضروری ہے۔

ویب ڈیسک 22 اگست 2022

 عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوتریس نے ترکی کے دارالحکومت میں صحافیوں سے گفتگو میں روس اور یوکرین جنگ کے باعث اجناس کی قیمتوں میں مسلسل اضافے پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔

انتونیو گوتریس نے مزید کہا کہ عالمی سطح پر مہنگائی کے کنٹرول اور اجناس کی قیمتوں میں کمی کے لیے روسی اجناس کی بلا روک ٹوک عالمی منڈیوں تک ترسیل بے حد ضروری ہے۔

اقوام متحدہ کے جنرل سیکرٹری نے یہ بھی کہا کہ روسی اجناس کی عالمی منڈیوں میں ترسیل میں رکاوٹیں دور کرنے کے لیے امریکا اور یورپی یونین سے بات چیت جاری ہے۔

گزشتہ برس ترکیہ اور اقوام متحدہ کی ثالثی میں ہونے والے مذاکرات میں روس اور یوکرین نے اجناس کی عالمی منڈیوں تک ترسیل کے طریقہ کار پر اتفاق کیا اور یوکرین سے پہلی کھیپ ترکیہ پہنچ بھی چکی ہے۔

روس نے عالمی دباؤ کے باوجود فروری میں یوکرین پر حملہ کردیا تھا اور دونوں ممالک کے درمیان جنگ جاری ہے جس کے باعث اجناس کی عالمی منڈیوں کو ترسیل رک گئی ہے۔

خیال رہے کہ یوکرین پر روس کے حملے کے خلاف امریکا اور یورپی ممالک نے روس پر معاشی پابندیاں عائد کی ہوئی ہیں جس میں پٹرولیم مصنوعات سمیت اجناس کی درآمدات بھی شامل ہے۔

 

ڈیل نہیں ہو رہی، مخالفین الٹا بھی لٹک جائیں تو نا اہل نہیں کرا سکتے، عمران خان

ویب ڈیسک 21 اگست 2022

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئر مین اور سابق وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ مخالفین الٹا بھی لٹک جائیں تو مجھے نا اہل نہیں کرا سکتے، کسی کے ساتھ کوئی ڈیل نہیں ہو رہی۔ سوشل میڈیا پر سازش نہیں ان کو کراس کریکشن کی ضرورت ہے۔

سوشل میڈیا صحافیوں کے ساتھ گفتگو کے دوران صحافیوں کی طرف سے سوال کیا گیا کہ کیا آپ ملکی مفاد میں ڈیڈ لاک کے خاتمے کیلئے بیٹھنے کو تیار ہیں؟ اور کیا کوئی بیک ڈور ڈیل ہور ہی ہے؟

اس سوال کے جواب میں پی ٹی آئی چیئر مین کا کہنا تھا کہ ڈیل کے تاثر کو مسترد کرتا ہوں، سب کو پتہ چل گیا عوام میرے ساتھ کھڑے ہیں، اسلام آباد کو بند کرنا چاہوں تو با آسانی کر سکتا ہوں، عوامی سپورٹ کے ساتھ بھاری ذمہ داری آتی ہے، پنجاب حکومت میں آنے کا مقصد قبل از وقت انتخاب اور حمزہ کو باہر کرنا تھا، ملک کو معاشی نقصان ہو سکتا ہے، سوچ سمجھ کر فیصلہ کرنا ہوگا۔

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ کوئی بتائے کہ چینلز کو کیوں بند کیا گیا، شہباز گل نے جو کہا اصفر خان کیس میں ججز کے وہی ریمارکس ہیں، تو کیا ججز کو بھی پکڑا جایئگا؟

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پنجاب میں پولیس اہلکاروں کو تبدیل کرنا چاہا تو پیغام ملا نہیں کر سکتے، پی ٹی آئی کو شہدا سے متعلق منفی مہم میں جان بوجھ کر ٹارگٹ کیا گیا۔

صحافی نے سوال کیا کہ کیا آپ چارٹر آف اکانومی پر مان جائیں گے ؟ اس پر جواب دیتے ہوئے سابق وزیراعظم نے کہا کہ شہباز شریف سنجیدہ ہیں تو بھائی کی اربوں کی جائیداد ملک لے آئیں، عظمیٰ بخاری سے کہیں اپنے خاوند کو پولیس کی تحویل میں دیں۔ پاکستان کے چوروں کو بیک کروانے والے پھنس گئے ہیں، انتخابات میں جتنی تاخیر ہو گی ہماری پارٹی کو اتنا فائدہ ہو گا۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ سوشل میڈیا پر سازش نہیں ان کو کراس کریکشن کی ضرورت ہے، آرمی چیف کی توسیع سے متعلق کچھ نہیں جانتا، تقرری کے معاملے پر اس معاملے پر پاکستان کو سوچنا ہوگا۔

عمران خان نے کہا کہ میں نے کبھی کسی کو چینل بند کرنے یا صحافی کو ہراساں کرنے کا نہیں کہا، نیب نے کسی کو میرے کہنے پر نہیں اٹھایا، یہ الٹا بھی لٹک جائیں تو مجھے نا اہل نہیں کرا سکتے، ہر روز کوئی نئی کہانی سننے کو ملتی ہے۔

عمران خان نے کہا کہ جو شہباز گل سے اگلوانا ہے وہ عظمی کا خاوند اگل دے گا، میں عاشق رسولﷺ ہوں نبی سے محبت تک ایمان مکمل نہیں ہوتا، سلمان رشدی سے غلیظ انسان کوئی نہیں وہ فتنہ ہے، میں نے اپنے انٹرویو میں سیالکوٹ واقعے کا حوالہ دیا، کسی کو اجازت نہیں ہونی چاہئے کہ قانون ہاتھ میں لے کر کسی کو بھی قتل کر دے، سیالکوٹ واقعے پر پاکستان کو جس طرح عالمی سطح پر اجاگر کیا گیا وہ افسوسناک تھا۔


پولیس نے پنجاب اسمبلی میں ہنگامہ آرائی کے مقدمے میں مسلم لیگ ن کے رہنماؤں کو گرفتار کرنے کا فیصلہ کر لیا۔

ویب ڈیسک 20 اگست 2022

پولیس کینٹ کچہری لاہور پہنچ گئی اور عدالت سے عطا تارڑ ، رانا مشہود، اویس لغاری ، سیف الملوک کھوکھر سمیت دیگر کی گرفتاری کی اجازت مانگ لی۔ پولیس نے ن لیگ کے رہنماؤں کے وارنٹ گرفتاری کے لیے مجسٹریٹ کے پاس درخواست دائر کر دی۔

تھانہ قلعہ گجر سنگھ پولیس نے عدالت سے عطا تارڑ ، رانا مشہود، اویس لغاری ، سیف الملوک کھوکھر، ملک غلام حبیب اعوان، اویس لغاری، مرزا جاوید، پیر خضر حیات، راجہ صغیر، عبدالرؤف، پیر اشرف، بلال فاروق اور رانا منان کے وارنٹ گرفتاری مانگ لیے۔

پولیس نے موقف اختیار کیا کہ ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا ہے، جس میں وہ دانستہ طور پر پیش نہیں ہو رہے ، انہیں گرفتار کر کے تفتیش مکمل کرنی ہے، وارنٹ جاری کرکے گرفتاری کی اجازت دی جائے۔

جوڈیشل مجسٹریٹ نے  پولیس کی وارنٹ گرفتاری جاری کرنے کی درخواست منظور کرتے ہوئے ن لیگ کے بارہ رہنماؤں کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کردیے۔

ادھر پنجاب پولیس نے رانا مشہود کی گرفتاری کے لیے دوبارہ لاہور میں ان کے گھر پر چھاپہ مارا لیکن وہ گھر پر نہیں ملے۔ جوہر ٹاؤن میں سیف الملوک کھوکھر کی رہائشگاہ کھوکھر پیلس پر بھی چھاپہ مارا گیا، لیکن وہ گرفتار نہ ہو سکے۔ پولیس نے رائیونڈ میں مرزا جاوید کے دفتر پر بھی چھاپہ، لیکن وہ بھی پولیس کے ہاتھ نہ آئے۔

واضح رہے کہ عمران خان نے اپنے خلاف تحریک عدم اعتماد کامیاب ہونے کے بعد 25 مئی کو لانگ مارچ کیا تھا۔ پی ٹی آئی کیخلاف پنجاب حکومت نے کریک ڈاؤن کیا تھا جس میں پرتشدد واقعات پیش آئے تھے۔

 

چیف جسٹس پاکستان عمر عطا بندیال نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی کو کہا تھا اسمبلی جا کر کردار ادا کریں، لیکن انہوں نے بائیکاٹ کر رکھا ہے۔

ویب ڈیسک 19 اگست 2022

سپریم کورٹ میں نیب ترامیم کیخلاف عمران خان کی درخواست پر سماعت ہوئی۔ عمران خان کے وکیل خواجہ حارث نے تحریری دلائل جمع کرانے کیلئے وقت مانگتے ہوئے کہا کہ کورونا ہوگیا تھا اس وجہ سے تحریری دلائل جمع نہیں کروا سکا۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ عدالت سیاسی معاملات میں مداخلت سے گریز کرے گی، صرف بنیادی حقوق کیخلاف ترامیم ہونے کے نکتے کا جائزہ لینگے، ترامیم احتساب کے عمل سے مذاق ہوئیں تو بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہوگی، اکثر ترامیم میں ملزمان کو رعایتیں بھی گئی ہیں، پلی بارگین کرنے والے کے شواہد کو ہی ناقابل قبول قرار دیا گیا ہے، فوجداری نظام میں گرفتاری کی ممانعت نہیں ہے، گرفتاری جرم کی نوعیت کے حساب سے ہوتی ہے۔

وفاقی حکومت کے وکیل مخدوم علی خان نے کہا کہ ملزمان بری ہوجاتے ہیں لیکن پھر بھی ان کے داغ نہیں دھلتے، اعلی عدلیہ نیب عدالت کی سزائیں برقرار نہیں رکھتی۔

چیف جسٹس نے کہا کہ ملک غیر معمولی حالات سے گزر رہا ہے، سابقہ حکومتی جماعت کے 150 ارکان اسمبلی کا بائیکاٹ کرکے بیٹھے ہیں، پی ٹی آئی کو کہا تھا اسمبلی جا کر اپنا کردار ادا کریں، آدھے ارکان نے اسمبلی کا بائیکاٹ کر رکھا ہے، اسمبلی میں موجود ارکان اپنے ذاتی فائدے کیلئے قانون سازی کر رہے ہیں۔

چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیے کہ عدالت قانون سازی میں مداخلت نہیں کرنا چاہتی، تحقیقات میں مداخلت پر ازخودنوٹس لیا تھا، ہائی پروفائل کیسز کا ریکارڈ لیکر صرف دیکھ رہے ہیں کہ کیسز چلتے ہیں یا نہیں، آئین کے تحت چلنے والے تمام اداروں کو مکمل سپورٹ کرینگے، عدالت غیر معمولی حالات میں کیس سن کر مزے نہیں لے رہی۔

وکیل وفاقی حکومت نے کہا کہ امریکی سپریم کورٹ ہمیشہ منتخب حکومت کیساتھ کھڑی ہوتی ہے۔ جسٹس منصور علی شاہ نے ان سے کہا کہ امریکی سپریم کورٹ کی مثال اس حوالے سے درست نہیں لگتی۔

چیف جسٹس نے کہا کہ اعلی عدلیہ اپنے فیصلوں میں نیب قانون پر تنقید کرتی رہی ہے، 90 دن کا ریمانڈ کہیں نہیں ہوتا، فوجداری کیسز میں 14 دن سے زیادہ کا ریمانڈ نہیں ہوتا، کرپشن پر سزا کی شرح جاپان میں ۹۹ فیصد ہے۔

عدالت نے کیس کی مزید سماعت یکم ستمبر تک ملتوی کر دی۔

 

 پاکستان اور برطانیہ کے درمیان مجرموں حوالگی اور وطن واپسی کا معاہدہ طے پاگیا تاہم اس کا اطلاق سابق وزیر اعظم نواز شریف سمیت دیگر شخصیات پر نہیں ہوگا۔

ویب ڈیسک 18 اگست 2022

برطانیہ کی وزیر خارجہ پریتی پٹیل نے پاکستان کے ساتھ مجرموں کی حوالگی کے حوالے سے ہونے والے معاہدے کے حوالے سے سماجی رابطے کی سائٹ پر ٹویٹ کیا۔

انہوں نے بتایا کہ پاکستان اور برطانیہ کے درمیان مجرموں کی حوالگی اور وطن واپسی کا معاہدہ طے کرنے پر فخر ہے، اس معاہدے کا اطلاق دہری شہریت والوں پر نہیں ہوگا۔

پریتی پٹیل نے بتایا کہ مجرموں کی حوالگی کے حوالے سے ہونے والا معاہدہ برطانیہ میں ترمیم کیے گئے امیگریشن قوانین اور منصوبے کا حصہ ہے۔

معاہدے کے تحت دونوں ممالک عدالتوں سے سزا یافتہ شہریوں کو حوالے اور اُن کے متعلق معلومات فراہم کرنے کے پابند ہوں گے۔

اس معاہدے کا سابق وزیر اعظم نواز شریف پر کوئی اثر نہیں پڑے گا، جو اس وقت علاج کے لیے لندن میں موجود ہیں۔

پی ٹی آئی حکومت نے گزشتہ سال کے آخر میں معاہدے کو حتمی شکل دی تھی اور آخر کار برطانیہ نے اس معاہدے کو آگے بڑھایا۔

ایک پاکستانی اہلکار نے نام ظاہر نہ کرنے کی درخواست کرتے ہوئے بتایا کہ معاہدے کا مطلب یہ ہوگا کہ برطانیہ اب “چھوٹے جرائم اور ویزا کی خلاف ورزیوں” میں ملوث پاکستانیوں کو واپس بھیج سکتا ہے۔ اہلکار نے وضاحت کی کہ اس معاہدے کے بعد، ’کمزور بنیادوں‘ پر سیاسی پناہ حاصل کرنے والے پاکستانیوں کو واپس بھیج دیا جائے گا۔

اہلکار نے مزید کہا کہ دو طرفہ معاہدے سے پہلے برطانیہ ان افراد کو ملک بدر کرنے سے قاصر تھا۔

نئے معاہدے کے تحت، جن لوگوں کے ویزوں کی میعاد ختم ہو چکی ہے، جو غیر قانونی طور پر برطانیہ میں مقیم ہیں یا جن پر جنسی جرائم کا الزامات ہیں، انہیں پاکستان واپس بھیج دیا جائے گا اور ان کی تفصیلات حکومت کو فراہم کی جائیں گی۔

نئے معاہدے کے بعد برطانیہ میں بغیر کسی معقول وجہ سے سکونت اختیار کرنے والے اب مزید رہائش اختیار نہیں کرسکیں گے۔

جرائم پیشہ افراد کی حوالگی کے معاہدے پر دونوں ممالک کے درمیان مذاکرات کا پہلا دور 2019 میں ہوا، جس میں پاکستان میں تعینات برطانوی ہائی کمشنر کرسچن ٹرنر نے اہم کردار ادا کیا تھا۔

اس کے بعد اپریل 2021 میں سابق وزیر داخلہ شیخ رشید احمد اور برطانوی ہائی کمشنر کرسچن ٹرنر کے درمیان ملاقات ہوئی تھی جس میں سابق وزیر اعظم نوازشریف کی حوالگی اور وطن واپسی کے متعلق بات چیت ہوئی تھی۔

 

 امریکہ اور پاکستانی حکام نے چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر باجوہ کے اگست کے آخر یا ستمبر کے اوائل میں امریکہ کا دورہ کرنے کے لیے مختلف آپشنز پر غور شروع کر دیا۔

ویب ڈیسک 17 اگست 2022

 نجی ٹی وی نے سفارتی ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ جلد ہی ایک تاریخ کو حتمی شکل دی جائے گی چونکہ اس دورے کی ابھی تک سرکاری طور پر تصدیق نہیں ہوئی اس لیے کسی بھی فریق نے جنرل قمر جاوید باجوہ کی واشنگٹن میں ہونے والی بات چیت کے ایجنڈے کا اعلان نہیں کیا۔

 سفارتی حلقے اور تھنک ٹینک کے ماہرین نے بتایا کہ دونوں فریق ایک سال سے زائد عرصے سے اس قسم کے دورے کا انتظام کرنے کی کوشش کر رہے ہیں،اس کیلئے وہ مختلف حالیہ واقعات اور بیانات کا بھی حوالہ دیتے ہیں جن پر جنرل قمر جاوید باجوہ کے واشنگٹن کے دورے پر بات ہو سکتی ہے۔

امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس نے کہا کہ ہم پاکستان میں اسٹیک ہولڈرز کے ایک سلسلے (بشمول) وہ جو اس وقت حکومت میں ہیں اور دیگر کی ایک وسیع صف کے ساتھ رابطے میں ہیں۔

 

وزیراعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الٰہی نے صوبے میں گریجویشن تک تعلیم مفت کرنے کا اعلان کردیا۔

ویب ڈیسک 16 اگست22 20

یوم آزادی کے موقع پر اپنے بیان میں پرویز الٰہی کا کہنا تھا کہ پہلے میٹرک تک تعلیم فری کی، اب گریجویشن تک تعلیم کو فری کریں گے اور خصوصی بچوں کے اداروں اورسپورٹس سہولتوں میں اضافہ کریں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے وطن کے دفاع کو ناقابل تسخیر بنایا۔

 پاکستان کے خلاف کوئی میلی آنکھ سے نہیں دیکھ سکتا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ وطن کی حفاظت اورامن کی خاطر قربانیاں دینے والے سکیورٹی فورسز و پولیس کے افسروں اور جوانوں کو خراج عقیدت پیش کرتا ہوں ۔

 

آزادی کے 75 سال مکمل ہونے کے بعد پاکستان نے ملکی سطح پر تیار کی جانے والی پہلی الیکٹرک کار پیش کردی ہے۔

ویب ڈیسک 15 اگست 2022

اوورسیز پاکستانیوں کی تنظیم ڈائس فاؤنڈیشن اور پاکستانی جامعات و نجی شعبہ کے تعاون سے تیار کی جانیوالی میڈ ان پاکستان الیکٹرک کار کی رونمائی مقامی ہوٹل میں منعقد ہوئی۔

ڈائس فاؤنڈیشن کے چیئرمین ڈاکٹر خورشید قریشی نے میڈ ان پاکستان الیکٹرک کار کی تیاری کو پاکستان کے  معاشی استحکام کے لیے ایک سنگ میل قرار دیا۔ بجلی سے چلنے والی کار کو NUR-E 75کا نام دیا گیا ہے جس کی عوامی فروخت کے لیے بکنگ کا آغاز 2024کے آخر میں کیا جائے گا۔

کار کا بیٹری پیک این ای ڈی یونیورسٹی میں تیار کیا گیا ہے، جدید فیچرز پر مشتمل الیکٹرک کار ایکسپورٹ بھی کی جائیگی۔ الیکٹرک کار 220وولٹ بجلی کے کنکشن سے 8گھنٹے میں چارج ہوکر 120کلو میٹر فی گھنٹہ رفتار سے 210کلو میٹر کا فاصلہ طے کرسکے گی۔

ڈاکٹر خورشید قریشی نے کہا کہ اس وقت عالمی آٹو انڈسٹری میں الیکٹرک گاڑیوں کا انقلاب آرہا ہے اور پاکستان نے بھی اس انقلاب کی جانب پہلا قدم اٹھالیا ہے آئندہ پانچ سال میں یہ پراجیکٹ پاکستان کے تمام  معاشی چیلنجز کا خاتمہ کردے گا۔

انہوں نے بتایا کہ اس کار کی تجارتی پیمانے پر پیداوار کے لیے سیریز اے،  بی اور سی راؤنڈز کی فنڈنگ کے ذریعے سرمایہ حاصل کیا جائے گا کار JAXERI کی برانڈ کے نام سے لانچ کی جائیگی ابتدائی پروٹوٹائپ پانچ سیٹوں کی گنجائش والی ہیچ بیک کار ہے اگلے مرحلے میں اسے سیڈان کی شکل دی جائیگی اور الیکٹرک ایس یو وی گاڑیاں بھی تیار کی جائیں گی۔

گاڑیوں کے لیے چارجر سرسید یونیورسٹی آف انجیئرنگ میں تیار کیا جارہا ہے تیز رفتار چارجر بھی تیار کیے جارہے ہیں جس سے چارجنگ کے وقت میں کمی ہوگی۔

پاکستانی الیکٹرک کار NUR-E 75 کے تمام سسٹمز پاکستان میں تیار کیے گئے ہیں۔ کار کا ڈیزائن نیشنل کالج آف آرٹس نے تیار کیا ہے۔ کار کی تعارفی تقریب میں انجینئرنگ، آّٹو سیکٹر کے علاوہ بزنس کمیونٹی کی  معروف شخصیات نے شرکت کی اور میڈ ان پاکستان کار متعارف کرانے پر ڈائس کی پوری ٹیم اور ڈاکٹر خورشید قریشی کی کاوشوں کو خراج تحسین پیش کیا۔

ڈاکٹر خورشید قریشی نے کہا کہ کار کی بڑے پیمانے پر پیداوار سے ماحول کے تحفظ، ایندھن کی درآمد پر خرچ ہونے والے زرمبادلہ کی بچت ہوگی، پاکستان الیکٹرک کاروں کی ٹیکنالوجی میں ترقی یافتہ ملکوں کے ہم پلہ ہوگا اور الیکٹرک کاروں کی ٹیکنالوجی پر دسترس سے پاکستان کے معاشی استحکام کی منزل آسان ہوگی۔

  

وزیر اعظم شہباز شریف نے ایک مرتبہ پھر میثاق معیشت کی پیشکش کرتے کہا ہے کہ آج محض ایک مبارکباد کافی نہیں ہوگی ہم ہر سال دھوم دھام سے یوم آزادی مناتے ہیں اور حقیقت یہ ہے کہ ہم 75 برس میں اصل مقصد کو اپنانے میں ناکام رہے ہیں۔

ویب دیسک 14 اگست 2022 

قوم سے خطاب کے دوران 75 ویں یوم آزادی کی مبارکباد دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ میں نے بطور اپوزیشن لیڈر میثاق معیشت کی پیش کش کی تھی اور آج بطور وزیراعظم پھر میثاق معیشت کی پیش کش کرتا ہوں۔

شہباز شریف نے کہا کہ موجودہ حالات کا تقاضہ ہے کہ اب ہم بحیثیت قوم درست سمت میں اپنے سفر کو جاری رکھیں، یوم آزادی کے موقع پر میرا دل مسرور بھی ہے اور بے چین بھی، ہم ان بحرانوں سے کیوں دوچار ہوئے جس میں سب سے بڑھ کر معاشی بحران ہے۔

آج قوم کو تقسیم در تقسیم کرنے کی کوشش جاری ہے

ان کا کہنا تھا کہ آج قوم کو تقسیم در تقسیم کرنے کی کوشش جاری ہے، انتشار پیدا کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے، وسائل نہ ہونے کے باوجود بھٹو کے دور میں ایٹمی پلانٹ شروع کیا۔

شہباز شریف نے کہا کہ اس قوم نے ہولناک زلزلے اور سیلاب کی تباہ کاریوں کا مقابلہ کیا اسی قوم نے کھیل کے میدان میں پوری دنیا میں اپنا سر فخر سے بلند کیا اور اس قوم نے مل کر دہشت گردی کو شکست دی۔

وزیراعظم نے کہا کہ تعمیر پاکستان کے اس مشن کو ہماری قومی و سیاسی قیادت نے آگے بڑھایا، وسائل نہ ہونے کے باوجود ذوالفقار علی بھٹو کی قیادت میں ایٹمی پروگرام شروع کیا، ہماری قوم ہر مقصد کو حاصل کرنے کی بھرپور صلاحیت رکھتی ہے۔

کھلے دل سے تسلیم کرتا ہوں کہ نوجوان نسل کو انکا حق نہیں دے سکے

شہباز شریف ںے تسلیم کیا کہ کھلے دل سے تسلیم کرتا ہوں کہ نوجوان نسل کو انکا حق نہیں دے سکے لیکن ہم نے ملک کو دیوالیہ ہونے سے بچالیا، سابق حکومت نے 48 ارب ڈالر کا خسارہ دیا اور اب وہ ہی لوگ حقیقی آزادی کا نعرہ لگا رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ 18-2017 میں ہم پاکستان کو گندم میں خود کفیل چھوڑ کر گئے تھے لیکن پچھلی حکومت کی غفلت کی وجہ سے گندم باہر سے منگوانے پر مجبور ہوگئے۔

شہباز شریف نے کہا کہ 75 سال سے اس دن کو منایا جا رہا ہے مگر مقاصد کو نہیں منایا گیا۔ وزیراعظم نے مزید کہا کہ پچھلی حکومت نے مجرمانہ غفلت کا مظاہر کرتے ہوئے ایل این جی کا کوئی معاہدہ نہیں کیا۔

 

 پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ ایک غلام قوم کبھی اوپر نہیں آسکتی کیونکہ غلام صرف اچھے غلام بنتے ہیں اس لیے میں امریکا سے غلامی نہیں دوستی چاہتا ہوں۔

ویب ڈیسک 14 اگست 2022 

لاہور کے نیشنل ہاکی اسٹیٹڈیم میں ’حقیقی آزادی‘ جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میں امریکا اور برطانیہ کو زیادہ تر پاکستانیوں سے بہتر جانتا ہوں، میں کسی ملک کا دشمن نہیں، امریکا سے دوستی چاہتا ہوں۔

عمران خان نے کہا کہ امریکا کی نفسیات ہے اگر ان کے پاؤں میں گرتے ہیں تو آپ کو استعمال کریں گے، انسان کی عزت نفس ختم کردیتی ہے، ہم نے لاکھوں قربانیاں دے کر آزاد ملک حاصل کیا۔

’یہ ہوتے کون ہیں پوچھنے والے کہ روس کیوں گیا‘

سابق وزیر اعظم نے کہا کہ یہ ہوتے کون ہیں پوچھنے والے کہ روس کیوں گیا، کیا میں ان کا غلام ہوں، میں اپنے لوگوں کے فائدے کے لیے روس گیا تھا، میں چاہتا تھا کہ روس سے سستے داموں 20 لاکھ ٹن گندم خریدیں۔

عمران خان نے کہا کہ امپورٹڈ حکومت جب آئی تو روسیوں سے سستا تیل خریدنے کی بات کرچکے تھے، میں اپنی قوم کو اکٹھا کروں گا اور قوم کے قرضے اتاریں گے لیکن ہمارے حکمران امریکا کے پیروں میں لیٹے ہوئے ہیں، ان میں اتنی جرات نہیں تھی کہ کہتے یہ ہمارے عوام کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ جدوجہد اس وقت تک جاری رہے گی جب تک اس حکومت کو گھر نہیں بھیجتے اور الیکشن نہیں ہوتے، امپورٹڈ حکومت کو فارغ کرنے کے لیے مل کر جدوجہد کریں گے۔

سابق وزیر اعظم نے کہا کہ آج پہلی مرتبہ بہترین 14 اگست منایا اور میرا دل کہہ رہا ہے آئندہ برس 14 اگست ہم اپنی حقیقی آزادی لے چکے ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ ایک خطرناک گیم کی تیاری ہورہی ہے کہ عمران خان اور فوج کو آپس میں لڑائی کرائی جائے لیکن ایسا کیسے ہوسکتا ہے کہ میں چاہوں کہ فوج کمزور ہو۔

’عزت پیسے سے نہیں خریدی جاسکتی‘

عمران خان نے مزید کہا کہ عزت پیسے سے نہیں خریدی جاسکتی، موت سے ڈرنے والے کسی شخص نے آج تک کوئی بڑا کام نہیں کیا، میرے مخالفین 26 برس سے میری کردار کشی کررہے ہیں۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ قوم کو مقروض کرنے کا ذمہ دار کون ہے، 30 برس سے دوخاندان اس ملک پر حکومت کررہے تھے، اب یہ کہتے ہیں کہ امریکا کی غلامی نہ کی توہم مر جائیں گے۔

علاوہ ازیں انہوں نے کہا کہ بھگوڑے کو بلاؤجو ملک چھوڑکرباہربھاگا ہے، میرامقابلہ اس ڈاکو سے نہ کرو، سازش کرنے والے کان کھول کرسن لیں، میں کوئی ڈیل نہیں کروں گا، نوازشریف فکرنہ کرو، میں تمہارابہت اچھی طرح استقبال کروں گا۔

عمران خان نے کہا کہ عدلیہ کوتقسیم کرنےکی سازش ہورہی ہے، عدلیہ کوتقسیم کرکے یہ اپنی مرضی کے فیصلےلینا چاہتے ہیں،غلامی یاموت میں سےمجھےموت قبول ہے۔

’آصف زرداری کامقابلہ کرنےکراچی جارہاہوں‘

ان کا کہنا تھا کہ میں نےلوگوں کےپاس جانےکافیصلہ کیا ہے،راولپنڈی جلسہ کرنے کے چند دن بعد کراچی جارہا ہوں،زرداری ملک کا بڑا لٹیراہے اس نےسندھ کےعوام کےساتھ بہت ظلم کیا، آصف زرداری کامقابلہ کرنےکراچی جارہاہوں۔

اس سے قبل سابق وفاقی وزیراطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے کہا کہ آج رات جلسے میں چیئرمین عمران خان پارٹی کے مستقبل کا لائحہ عمل دیں گےاور آج کی ریلی کا نعرہ حقیقی آزادی ہے۔

 

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ ملک کی خاطر شہباز شریف اور عمران خان سے بات کرنے کو تیار ہوں۔

ویب ڈیسک 13 اگست 2022

گورنر ہاؤس لاہور میں سینئر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے صدر مملکت نے کہا کہ سیاست دانوں کو ہمیشہ اداروں پر تنقید کرنے سے روکا ہے، ملک کی خاطر شہباز شریف اور عمران خان سے بات کرنے کو تیار ہوں، میری کوشش ہو گی کہ دونوں میں نفرتیں کم ہوں اور جلد انتخابات کے لیے ماحول سازگار بنایا جاسکے۔

صدر مملکت عارف علوی کا کہنا تھا کہ سیاست دان ایک میز پر نہیں بیٹھ رہے، انہیں اکٹھا بٹھانے کی ضرورت ہے، صدر کی حیثیت سے خود اکٹھا نہیں کرسکتا، صرف کہہ سکتا ہوں، پریشان ہوں اور محسوس کرتا ہوں کہ خلیج بڑھتی جارہی ہے جسے کم ہونا چاہیے، سیاست دانوں کو کلاس روم کی طرح گھنٹی بجا کر تو بٹھایا نہیں جاسکتا۔

انہوں نے کہا کہ جتنی ملاقات اور فون پر شہباز شریف سے گفتگوہوئی اتنی بطور وزیراعظم عمران خان سے نہیں ہوئی، عمران خان میرے لیڈر اور میرے دوست ہیں جن سے واٹس ایپ پر رابطہ رہتا ہے، الیکشن اچھا حل ہے، تمام جماعتیں مل بیٹھ کر طے کریں کہ کب الیکشن ہونے چاہئیں، عمران خان کی حکومت جانے پر پارٹی کے دوستوں نے بہت مشورے دیے تھے، میرے پاس تو ایک ہی آئینی بندوق ہے اس سے چڑیا مار سکتا ہوں یا اس پر میزائل لگالوں۔

 عارف علوی نے کہا کہ وفاق اور صوبوں کا تنازعہ ملک کے لیے خطرناک ہے، وزیراعظم شہباز شریف کی طرف سے 85 سمریز بھجوائی گئیں سب پر سائن کیے صرف دو سمریاں واپس کیں، جن میں الیکٹرانک ووٹنگ مشین اور اوورسیز پاکستانیوں کے ووٹ کی سمری شامل ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ فارن فنڈنگ میں ہم حساب کتاب رکھنے پر پکڑے گئے، پارٹی سیکریٹری کے طور پر میں  نے اسد قیصر اور سیما ضیا کو اکاؤنٹ کھولنے کا کہا تھا، امریکی قانون کے مطابق فنڈنگ کے لیے کمپنی بنانا ہوتی ہے، امریکا اور کینیڈا میں قانون کے مطابق کمپنی کھلوانے پر کہا کہ پرائیویٹ کمپنی ہے۔

عارف علوی نے مزید کہا کہ سیاست دانوں کو سمجھاتا رہا ہوں کہ فوج کو زیر بحث مت لایا کریں فوج ملکی سلامتی کی ضامن ہے، اسے متنازع نہیں بنانا چاہیے ان کا احترام کرنا چاہیے، عدلیہ میں ججز کی تقرری پر چیف جسٹس نے کہا کوئی معیار ہونا چاہیے اور میں بھی اس بات کا حامی ہوں۔

 

25

مئی کا حساب کتاب ہوگا اور یہ ہو نہیں سکتا کہ رانا ثنا اورعطا تارڑ بچ جائیں

ویب ڈیسک 12اگست 2022

پی ٹی آئی رہنما فواد چوہدری نے کہا ہے کہ موجودہ کابینہ پاکستان میں باہر نکلنے کے قابل نہیں یہ لوگ نکلتے ہیں تو لوگ جوتیاں اٹھا لیتے ہیں۔پاکستان تحریک انصاف کے  رہنما اور سابق وفاقی وزیر فواد چوہدری نے اسلام آباد میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم پر دباؤ، زور اور جبر سے کہا جاتا ہے کہ انکی حکومت کو تسلیم کرو۔ پاکستان کےعوام نے یہ حکومت نہیں بنائی۔ پاکستان میں وہی حکومت تسلیم کی جائے گی جو عوام بنائے گی۔پی ٹی آئی رہنما نے کہا کہ پاکستان کے عوام اور فوج ایک دوسرے سے الگ نہیں، جس طریقے سے تقسیم کی کوشش کی گئی یہ افسوسناک ہے۔ کہا جا رہا ہے کہ یہ لوگ عمران خان کے کہنے پر مہم چلا رہے ہیں۔ عمران خان نے جو کچھ بھی کیا وہ عوام کیلئے کیا ہے۔فواد چوہدری نے مزید کہا کہ پاکستان میں آئین اور قانون ہے۔ 25 مئی کا حساب کتاب ہوگا اور یہ ہو نہیں سکتا کہ رانا ثنا اورعطا تارڑ بچ جائیں۔انہوں نے کہا کہ میں نے تو کہا ہے مجھے جب گرفتار کرنا ہو بتا دیں میں خود ہی آجاؤں گا، یہ بندے وغیرہ لانا اچھا نہیں لگتا۔ فاشزم کا مقابلہ فاشزم سے نہیں ہو سکتا۔ ہم بھی وہی حرکتیں کریں جو وفاق کرے تو ان میں اور ہم میں کوئی فرق نہیں ہوگا۔

 

 پنجاب میں دکانیں رات 9 بجے بند کرنے کی پابندی ختم

ویب ڈیسک 11 جولائی 2022

 پنجاب میں دکانیں رات 9 بجے بند کرنے کی پابندی ختم کردی گئی، جس کے بعد مارکیٹوں میں کاروباری سرگرمیاں رات دیر تک جاری رہ سکیں گی۔

تاجروں کی جانب سے دکانیں رات 9 بجے بند کرنے کی پابندی ختم کرنے کا مطالبہ کئی ماہ سے کیا جا رہا تھا، جس پر وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی نے مقررہ وقت پر دکانیں بند کرنے کا حکم نامہ معطل کرنے کا اعلان کردیا۔ علاوہ ازیں فیصلے کے مطابق کاروباری سرگرمیاں اب اتوار کے روز بھی جاری رکھنے کی اجازت دے دی گئی ہے۔

تاجر برادری کی درخواست پر وزیراعلیٰ پنجاب نے انچارج شکایت سیل ناصر سلمان کی موجودگی میں فیصلے کا اعلان کرتے ہوئے بتایا کہ تاجر رات گئے تک کاروبار کرسکیں گے ۔

اس سلسلے میں انہوں نے سیکرٹری انڈسٹری کو نوٹیفکیشن جلد جاری کرنے کی بھی ہدایت کی جب کہ ضلعی انتظامیہ اور متعلقہ اداروں کو وزیر اعلیٰ پنجاب کے احکامات سے متعلق آگاہ کردیاگیا ہے

 

 شہباز گل کی گرفتاری کے بعد تحریک انصاف میں ہلچل ، اہم اجلاس طلب کر لیا گیا

ویب ڈیسک 10 جولائی 2022

  سینیئر لیڈر شپ کا اجلاس آج بنی گالا میں طلب کرلیا۔

ذرائع کے مطابق مرکزی قیادت کے ساتھ پنجاب کے اہم رہنماؤں کو بھی اجلاس میں بلا یا گیا ہے،پنجاب سے وزیرداخلہ ہاشم ڈوگر،عمر سرفراز چیمہ اجلاس میں شریک ہوں گے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اجلاس میں شفقت محمود،اعجاز چوہدری،ڈاکٹریاسمین راشد،میاں محمودالرشید بھی شامل ہوں گے۔اس کے علاوہ پنجاب کے دیگر اہم رہنما لاہور سے ویڈیو لنک پر اجلاس میں شریک ہوں گے۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں 13 اگست کے لاہور جلسے سمیت دیگر امور پر بات ہوگی ،جبکہ اجلاس میں مجموعی سیاسی صورتحال کے تناطر میں آئندہ کا لائحہ عمل بھی طے کیا جائے گا۔

 

 ملکی سیاست اور اقتدار سے زیادہ ملک کی سلامتی اہم ہے،شیخ رشید

ویب ڈیسک 9 جولائی 2022

سابق وزیر داخلہ اور عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کا کہنا ہے کہ ملکی سیاست اور اقتدار سے زیادہ ملک کی سلامتی     اہم ہے، افغانستان کا عدم استحکام پاکستان پر بھی اثرانداز ہوگا۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر پیغام جاری کرتے ہوئے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ "بھتہ اور خودکش حملے شروع ہو گئے ہیں ،حکومتی خواہشوں سے من پسند خبریں نہیں بن سکتیں، ان کا مزید کہنا تھا کہ " مشرف نے چینل لائسینس دیئے ،مفاد پرست فاشسٹ بند کر رہے ہیں،آج ن لیگ کا بیانیہ دفن ہوگیا ہے".

ایک اور ٹویٹ میں شیخ رشید کا کہنا تھا کہ "چین پاکستان کا بھلا سوچ رہا ہے،اس کے اشاروں کو سمجھیں،یوم آزادی کو یوم بربادی نہ بنائیں "، شیخ رشید نے اپنے ٹویٹ میں تنبیہ کی کہ "عمران خان کو گرفتار کرنا یا پی ٹی آئی توڑنے کی منصوبہ بندی کرنا خونی سیاست کا آغاز ہوگا۔حساس ترین مرحلے پر 12تاریخ 3 بجے پریس کانفرنس کروں گا اور13 اگست کی رات 11بجے لال حویلی جلسے سے خطاب کروں گا"۔

 

 کیوبا میں آسمانی بجلی تیل ذخیرہ کرنے والے ٹینکر پر گرنے سے خوفناک آتشزدگی ہوئی جس میں سیکڑوں افراد زخمی جبکہ متعدد لاپتہ ہوگئے۔

ویب ڈیسک 8 اگست 2022

غیر ملکی میڈیا کے مطابق کیریبین ملک کیوبا میں آتشزدگی کا خوفناک حادثہ پیش آیا جس کے نتیجے میں ایک شخص ہلاک جب کہ سیکڑوں زخمی ہوگئے۔

کیوبن حکام کا کہنا ہے کہ مٹنزاز نامی شہر میں موجود تیل ذخیرہ کرنے والے ٹینکر پر آسمانی بجلی گرنے کے بعد ہولناک آگ بھڑک اٹھی جس کی لپیٹ میں آکر ایک شخص موقع پر ہی ہلاک ہوگیا۔

حکام کا کہنا ہے کہ آسمانی بجلی گرنے سے ٹینکر میں چار دھماکے ہوئے جس کی زد میں آکر 121 افراد جھلس گئے جب کہ ریسکیو آپریشن کرنے والے 17 فائر فائٹرز لاپتہ ہوگئے۔

غیر ملکی حکام کا کہنا ہے کہ غیر شناخت شدہ لاش برآمد ہوئی ہے۔

حکام کے مطابق اتنی شدید ہے کہ دو روز سے قابو پانے کی کوشش جاری ہے اس کے باوجود آگ کی شدت میں کمی نہیں آرہی۔

 

 پی ٹی آئی نے 9حلقوں کا جاری انتخابی شیڈول چیلنج کردیا

ویب ڈیسک 7 جولائی 2022

پاکستان تحریکِ انصاف (پی ٹی آئی) کی جانب سے 9 حلقوں کے لیے الیکشن کمیشن کا جاری انتخابی شیڈول چیلنج کر دیا گیا ہے۔

پی ٹی آئی نے فیصل چوہدری ایڈووکیٹ کے ذریعے متفرق درخواست جمع کرائی ہے جس میں اسلام آباد ہائیکورٹ سے انتخابی شیڈول کو معطل کرنے کی استدعا کی گئی ہے۔

پی ٹی آئی کی جانب سے دائر کی گئی درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ پی ٹی آئی کے مرحلہ وار استعفوں کی منظوری کے خلاف درخواست زیرِ التوا ہے۔

عدالت چار اگست کو درخواست پر سماعت کرکے نوٹس جاری کر چکی ہے۔ یاد رہے کہ گزشتہ روز الیکشن کمیشن آف پاکستان نے قومی اسمبلی کے 9 حلقوں میں ضمنی انتخاب کا اعلان کیا تھا۔

الیکشن کمیشن کے ترجمان نے بتایا تھا کہ کاغذاتِ نامزدگی 10 اگست سے 13 اگست تک جمع کروائے جا سکتے ہیں، جن کی جانچ پڑتال 17 اگست کو کی جائے گی جبکہ پولنگ 25 ستمبر کو ہو گی۔

الیکشن کمیشن کے مطابق یہ ضمنی انتخاب این اے 22 مردان 3، این اے 24 چارسدہ 2، این اے 31 پشاور 5، این اے 45 کرم 1، این اے 108 فیصل آباد، این اے 118 ننکانہ صاحب 2 جبکہ کراچی کے قومی اسمبلی کے حلقوں این اے 237 ملیر 2، این اے 239 کورنگی کراچی 1 اور این اے 246 کراچی جنوبی 1 میں ہوگا۔

 

 بھارت میں حکومت مخالف مظاہرے کے دوران کانگریس رہنما راہول اور پریانکا گاندھی کو گرفتار کرلیا گیا۔

ویب ڈیسک 6 جولائی 2022

بھارتی خبر رساں اداروں کے مطابق بھارت میں مودی سرکار کی پالیسیوں اور مہنگائی کے خلاف اپوزیشن جماعت کانگریس کے احتجاج پر پولیس نے دھاوا بول دیا۔ پولیس نے راہول اور پریانکا گاندھی سمیت دیگر رہنماؤں کو بھی حراست میں لے لیا۔ سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر جاری وڈیوز کے مطابق پریانکا گاندھی کو خواتین اہل کاروں نے گھسیٹ کر گاڑی میں ڈالا۔

مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق کانگریس کے سابق صدر راہول گاندھی ارکان پارلیمان اور پارٹی رہنماؤں کے ہمراہ پارلیمنٹ ہاؤس سے ایوان صدر (راشٹراپتی بھون) تک حکومتی پالیسیوں خصوصا بڑھتی مہنگائی کے خلاف احتجاجی مظاہرے کی قیادت کررہے تھے، جہاں پولیس نے انہیں روکنے کی کوشش کی۔

پولیس کی مداخلت کے دوران کانگریس رہنماؤں نے آگے بڑھنے کی کوشش کی اور اس دوران پولیس کی جانب سے مظاہرین پر لاٹھی چارج شروع کردیا گیا۔ تصادم کے دوران پولیس نے کانگریس کی قیادت سمیت دیگر رہنماؤں کو حراست میں لے لیا۔ قبل ازیں احتجاج کے دوران راہول گاندھی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بھارت میں جمہوریت مر چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ 70 برس میں بنایا گیا 8 برس میں ختم کردیا گیا۔

راہول گاندھی کا کہنا تھا کہ بڑھتی مہنگائی، بے روزگاری، معاشرے کو تقسیم کرنے کی کوششوں اور دیگر ناقص پالیسیوں پر ایوان میں بحث کرنا چاہتے ہیں، لیکن ہمیں سچ بولنے کی پاداش میں گرفتار کرلیا جاتا ہے۔

واضح رہے کہ اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے احتجاجی مظاہروں کے پیش نظر دارالحکومت میں دفعہ 144 نافذ ہے جب کہ کانگریس کی جانب سے پابندی کے باوجود احتجاج شروع کیا گیا۔

 

 امریکا ایک بار پھر سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کو میزائل شکن جدید فضائی دفاعی نظام فروخت کرے گا۔

ویب ڈیسک 5 اگست 2022 

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق پینٹاگون نے تصدیق کی ہے کہ امریکی محکمہ خارجہ نے متحدہ عرب امارات کو میزائل شکن ’’ٹرمینل ہائی ایلٹیٹیوڈ ایریا ڈیفنس‘‘ اور سعودی عرب کو میزائل شکن پیٹریاٹ سسٹم کے الگ الگ معاہدوں میں 5.3 بلین ڈالر کی فروخت کی منظوری دیدی۔ سعودی عرب کو 3.06 بلین ڈالر کی مالیت کے پیٹریاٹ میزائل ڈیفنس سسٹم کے لیے  GEM-T کی ممکنہ فروخت کے ساتھ ساتھ  سپورٹ آلات، اسپیئرز اور تکنیکی مدد جب کہ متحدہ عرب امارات کو 2.25 بلین ڈالر مالیت کے 96 میزائل شکن میزائل ڈیفنس سسٹم اور سپورٹ آلات کے ساتھ اسپیئرز اور تکنیکی مدد کی منظوری دی۔ سعودی عرب اور امارات کو جدید میزائل شکن کی فروخت کی منظوری امریکی صدر جو بائیڈن کے گزشتہ ماہ کے وسط میں مشرق وسطیٰ کے دورے کے بعد کی گئی جس کے دوران امریکی جوبائیڈن نے پٹرول کی قیمتوں کو کم کرنے کے لئے تیل کی پیداوار کے معاہدے پر بھی تبادلہ خیال کیا تھا۔ واضح رہے کہ جوبائیڈن انتظامیہ سعودی عرب کو جارحانہ ہتھیار فروخت نہ کرنے کی پالیسی کو ختم کرنے پر غور کر رہی ہے۔

 

حکومت موجودہ اسمبلی کی مدت پوری ہونے تک اپنا کام کرے گی

ویب ڈیسک 4 اگست 2022

وفاقی وزیر برائے خزانہ ڈاکٹر مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ وزیر اعظم میاں محمد شہباز شریف اور اتحادی پُرعزم ہیں کہ حکومت موجودہ اسمبلی کی مدت پوری ہونے تک اپنا کام کرے گی جس دن پارلیمنٹ اپنی مدت پوری کر لے گی ہم گھر چلے جائیں گے۔  اگست کے آخری ہفتے میں آئی ایم ایف کی بورڈ میٹنگ ہو گی اوراس میں پاکستان کا آئی ایم ایف پروگرام منظور ہو جائے گا۔ رواں ہفتے سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کی جانب سے پاکستان کے ساتھ مالیاتی تعاون کرنے کی توقع ہے۔

  

لیفٹیننٹ جنرل سرفراز علی

کور کمانڈر کوئٹہ کے ہیلی کاپٹر کا ملبہ کہاں سے اور کیسے ملا؟

ویب ڈیسک 3 اگست 2022

 بلوچستان کے ضلع لسبیلہ میں حادثے کا شکار ہونے والے فوجی ہیلی کاپٹر کا ملبہ تلاش کر لیا گیا ہے اور اس حادثے میں کور کمانڈر کوئٹہ لیفٹیننٹ جنرل سرفراز علی سمیت چھ افراد شہید ہو گئے ہیں۔

 آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ سیلاب کے حوالے سے امدادی کارروائیوں میں شریک اس ہیلی کاپٹر کا ملبہ وندر کے علاقے میں موسیٰ گوٹھ سے ملا۔ ادارے کے مطابق ابتدائی تحقیقات کے مطابق یہ حادثہ خراب موسم کی وجہ سے پیش آیا۔ اس حادثے میں شہید ہونے والوں میں کور کمانڈر کوئٹہ لیفٹیننٹ جنرل سرفراز علی، ڈائریکٹر جنرل پاکستان کوسٹ گارڈز میجر جنرل امجد حنیف ستی اور انجینئرنگ کور کے بریگیڈیئر محمد خالد کے علاوہ عملے کے تین ارکان بشمول پائلٹ میجر سعید احمد، پائلٹ میجر محمد طلحہ منان اور نائیک مدثر فیاض شامل ہیں۔ پاکستانی فوج کے شعبۂ تعلقاتِ عامہ نے پیر کی شب بتایا تھا کہ آرمی ایوی ایشن کا یہ ہیلی کاپٹر پیر کی شام اوتھل سے کراچی جاتے ہوئے لاپتہ ہوا تھا۔ ہیلی کاپٹر پانچ بج کر 10 منٹ پر اوتھل کے علاقے سے اڑا اور اس نے چھ بج کر پانچ منٹ پر کراچی پہنچنا تھا تاہم راستے میں اس کا رابطہ ایئر ٹریفک کنٹرول سے منقطع ہو گیا۔ ایئر ٹریفک کنٹرول سے رابطہ منقطع ہونے کے بعد اس کی تلاش کا عمل شروع کر دیا گیا تھا جس میں منگل کی صبح ہیلی کاپٹر بھی شامل ہوئے تھے۔

  

امریکی جاسوسوں نے کیسے کابل میں القاعدہ کے سربراہ ایمن الظواہری کو ڈھونڈ نکالا؟

ویب ڈیسک 3اگست 2022

گذشتہ سال افغانستان سے امریکی انخلا کے دوران صدر جو بائیڈن نے عہد کیا تھا کہ ان کی انتظامیہ طالبان کی قیادت والی نئی حکومت کو افغانستان کو دہشت گردوں کی محفوظ پناہ گاہ بنانے کی اجازت نہیں دے گی۔

ان ریمارکس کا مقصد یہ واضح کرنا تھا کہ بائیڈن انتظامیہ کے لیے دہشتگردی کے خلاف دہائیوں پرانی جنگ ابھی ختم نہیں ہوئی ہے۔ تقریباً ایک سال بعد صدر کے اعلیٰ سکیورٹی مشیروں نے ان سے رابطہ کیا اور بتایا کہ انٹیلیجنس حکام نے القاعدہ کے رہنما ایمن الظواہری کا افغانستان میں پتا لگایا ہے۔

انتہائی اہم ہدف کی نشاندہی کرنا

بائیڈن انتظامیہ کے ایک سینیئر اہلکار نے پس پردہ بریفنگ کے دوران صحافیوں کو بتایا کہ ان کا خیال ہے کہ گذشتہ سال مغربی حمایت یافتہ حکومت کے خاتمے کے بعد الظواہری افغانستان واپس آ گئے تھے۔ الظواہری کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ اپنی اہلیہ اور بیٹی کے ساتھ کابل کے مرکز میں بلند حفاظتی دیواروں والے ایک بڑے کمپاؤنڈ میں رہ رہے تھے۔ الظواہری نے جس علاقے کا انتخاب کیا وہ نسبتاً ایک اچھا علاقہ ہے۔ پچھلی انتظامیہ میں جو پورا علاقہ غیر ملکی سفارت خانوں اور سفارت کاروں کا گھر تھا، اب طالبان کے زیادہ تر اعلیٰ عہدیدار اس عالیشان علاقے میں رہتے ہیں۔ اپریل کے اوائل میں، سی آئی اے افسران نے پہلے بائیڈن کے مشیروں اور پھر صدر کو خصوصی بریفنگ میں بتایا کہ انھوں نے انٹیلیجنس کے ذریعے ایک ایسے نیٹ ورک کی نشاندہی کی ہے جو القاعدہ کے رہنما اور اس کے خاندان کی مدد کرتا ہے۔ امریکی جاسوسوں نے آہستہ آہستہ گھر کے مکینوں کے رویے اور ان کی نقل و حرکت کی تفصیلات جمع کیں، جس میں ایک خاتون پر بھی نظر رکھی گئی جنھیں الظواہری کی بیوی کے طور پر شناخت کیا گیا۔ حکام کا کہنا تھا کہ انھوں نے وہ طریقے اختیار کر رکھے تھے جن سے کابل میں اس محفوظ رہائش گاہ تک کوئی بھی ان کے شوہر تک نہ پہنچ سکے۔ جاسوسوں نے غور کیا کہ اس گھر میں آنے کے بعد، الظواہری خود کبھی بھی احاطے سے باہر نہیں نکلے لیکن انھوں نے نوٹ کیا کہ وہ وقتاً فوقتاً بالکونی میں مختصر وقت کے لیے نمودار ہوتے تھے اور عمارت کی بلند دیواروں کا جائزہ لیتے تھے۔

تاریخی حملے کی سازش

بائیڈن کے لیے امریکہ کے انتہائی مطلوب لوگوں میں سے ایک کو مارنے کا موقع خطرے سے بھر پور تھا۔ الظواہری ایک گنجان آباد محلے میں رہائش پذیر تھے اور افغانستان میں امریکی موجودگی کے آخری دنوں کے دوران کابل میں ایک ڈرون حملے میں غلطی سے سات بچوں سمیت 10 بے گناہ افراد کی موت کا واقعہ بھی صدر بائیڈن کے ذہن میں ہو گا۔

 

  چیف الیکشن کمشنر نے پی ٹی آئی ممنوعہ فنڈنگ کیس کا فیصلہ سنا دیا، جس میں کہا گیا ہے کہ تحریک انصاف کے خلاف ممنوعہ فنڈنگ لینا ثابت ہوگیا ہے۔

الیکشن کمیشن نے پی ٹی آئی کو شوکاز نوٹس جاری کردیا، جس میں کہا گیا ہے کہ کیوں نہ آپ کے فنڈز ضبط کرلیے جائیں۔

ویب ڈیسک 2 اگست 2022

ایکسپریس نیوز کے مطابق الیکشن کمیشن آف پاکستان کے 3 رکنی بینچ نے 21 جون کو محفوظ کیا گیا تھا، جو چیف الیکشن کمشنر نے آج صبح سنا دیا، جس کے مطابق پی ٹی آئی کو ممنوعہ ذرائع سے فنڈنگ موصول ہوئی۔

فیصلے میں کہا گیا ہے کہ پی ٹی آئی کو ابراج گروپ سمیت غیر ملکی کمپنیوں سے فنڈنگ موصول ہوئی۔ پی ٹی آئی نے اپنے اکاؤنٹس الیکشن کمیشن سے چھپائے۔ پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان نے الیکشن کمیشن میں مس ڈیکلیریشن جمع کرایا۔ پی ٹی آئی نے امریکا سے ایل ایل سی سے فنڈنگ لی۔ پی ٹی آئی نے آرٹیکل 17 کی خلاف ورزی کی ہے۔

 

 پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے ارکین اسمبلی کو نئے انتخابات کی تیاری کا ٹاسک دے دیا ہے۔

ویب ڈیسک 1اگست 2022

لاہور میں عمران خان نے وزیراعلیٰ ہاؤس میں اراکین اسمبلی سے ملاقات کی، جس کی اندرونی کہانی سامنے آگئی ہے۔ عمران خان نے اراکین اسمبلی کو نئے انتخاب کے لیے تیاری کا ٹاسک دیتے ہوئے کہا کہ چھ سے آٹھ ہفتوں میں آئندہ عام انتخابات کا بگل بج سکتا ہے۔ پی ٹی آئی چیئرمین نے کہا کہ اراکین اسمبلی اور پارٹی تنظیمیں  انتخابات کی تیاری کریں اور لائحہ عمل تیار کرلیں۔ عمران خان  نے  ڈاکٹر یاسمین راشد کو دو ہفتوں میں پنجاب میں تنظیم سازی کا عمل مکمل کرنے کا ٹاسک دیتے ہوئے کہا کہ تنظیم سازی مکمل کی جائیں تاکہ انتخاب میں بھرپور انداز میں جائیں۔ اُن کا کہنا تھا کہ پچیس مئی کو جنہوں نے چادر اور چار دیواری کا تقدس پامال کیا قانون ان کے حوالے سے راستہ اختیار کرے گا، مجھے پتہ ہے جن لوگوں نے ہمارے ساتھ دو نمبر ی کی مگر میں سب کے سامنے کسی کا نام نہیں لینا چاہتا۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں ارکان اسمبلی نے اپنی اپنی آرا بھی پیش کیں۔

عمران خان کی پارٹی رہنماؤں سے ملاقات

بعد ازاں عمران خان سے پی ٹی آئی سینٹرل پنجاب کی صدر ڈاکٹر یاسمین راشد، پارلیمانی لیڈر میاں محمود الرشید صوبائی وزیر میاں اسلم اقبال اور راجہ بشارت نے علیحدہ علیحدہ ملاقاتیں کیں۔ ان ملاقات میں پنجاب کی سیاسی صورتحال اور آئندہ لائحہ عمل پر مشاورت کی گئی جبکہ عمران خان نے وزیر اعلیٰ، اسپیکر پنجاب اسمبلی کے انتخاب میں بہترین پرفارمنس پر پارٹی رہنماؤں کی تعریف بھی کی۔

چیرمین پی ٹی آئی عمران خان کی زیر صدارت اجلاس    

عمران خان کی زیر صدارت اجلاس ہوا جس میں لاہور اور گوجرانوالہ ڈویژن کے ارکان اسمبلی،اقلیتی اور مخصوص نشستوں پر منتخب ارکان نے شرکت کی۔ شرکا سے گفتگو میں عمران خان نے الیکشن میں عمدہ کارکردگی دکھانے پر ارکان اسمبلی کی کاوشوں کو سراہا۔ عمران خان نے کہا کہ ملک میں استحکام صاف وشفاف الیکشن سے ہی ممکن ہے، پنجاب میں مربوط تنظیم سازی پر توجہ دی جائے، لوگ سیاست میں پیسہ بنانے آتے ہیں،لیکن اب عوامی شعور بیدار ہوچکا ہے، بچوں میں ملکی مسائل کے شعور کی بیداری خوش آئند ہے، قوم کی توقعات اب پی ٹی آئی سے وابستہ ہیں۔

 

 تحریک اںصاف نے فارن فنڈنگ کیس میں حکومتی وفد سے ملاقات کرنے پر چیف الیکشن کمشنر کے خلاف جوڈیشل ریفرنس دائر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ویب ڈیسک 31 جولائی 2022

ایکسپریس نیوز کے مطابق چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کی زیر صدارت پارٹی قیادت کا اہم اجلاس منعقد ہوا جس میں شاہ محمود قریشی، فواد چوہدری، بابر اعوان، شیریں مزاری، فرخ حبیب، شہباز گل اور دیگر نے شرکت کی۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں الیکشن کمیشن ممبران کی حکومتی اتحاد کے وفد سے ملاقات کا معاملہ زیر غور آیا۔ شرکا نے پی ٹی آئی ممنوعہ فنڈنگ کیس میں الیکشن کمیشن کے کردار کا جائزہ لیا اور ممنوعہ فنڈنگ کیس میں الیکشن کمیشن ارکان کی حکومتی وفد سے ملاقات پر شدید تشویش کا اظہار کیا۔ ذرائع کے مطابق پارٹی قیادت نے کہا کہ چیف الیکشن کمشنر کی جانب سے کوڈ آف کنڈکٹ کی دھجیاں اڑائی گئیں جس پر عمران خان نے چیف الیکشن کمشنر کے خلاف جوڈیشل ریفرنس دائر کرنے کا فیصلہ کیا اور الیکشن کمیشن کے خلاف صوبائی حکومتوں میں بھی کارروائی کا اعلان کیا۔ ذرائع کے مطابق دو صوبائی اسمبلیاں الیکشن کمیشن کے خلاف عدم اعتماد کی قرار داد لائیں گی، عمران خان نے قانونی ماہرین کو معاملات شروع کرنے کی منظوری دے دی۔

 

اسپیکر پنجاب اسمبلی کے انتخاب میں تحریک انصاف نے ن لیگ کو شکست دے دی، پی ٹی آئی کے امیدوار سبطین خان اسپیکر منتخب ہوگئے۔

ویب ڈیسک 30 جولائی 2022

ایکسپریس نیوز کے مطابق پینل آف چیئرمین کے سینیئر ممبر نواب زادہ وسیم خان بادوزئی کی زیر صدارت پنجاب اسمبلی کا اجلاس  منعقد ہوا، جس میں اسپیکر کا نئے اسپیکر کا انتخاب کیا گیا۔ اسپیکر کے لیے تحریک انصاف کی جانب سے سبطین خان اور ن لیگ اتحاد کی جانب سے سیف الملوک کھوکھر کے درمیان سخت مقابلہ ہوا۔

اجلاس شروع ہوتے ہی مسلم لیگ نون کے رکن اسمبلی طاہر خلیل سندھو نے پوائنٹ آف آرڈر پر بات کرنے کی اجازت مانگی تاہم چیئرمین نے انکار کردیا جس پر ن لیگی رکن نے احتجاجاً پولنگ بوتھ پر چادریں لگا دی۔ ن لیگ ارکان کی جانب سے ایوان میں کیمروں کی تنصیب کی جگہ پر اعتراض کیا گیا جس پر پولنگ بوتھ کی جگہ تبدیل کرتے ہوئے انہیں اسپیکر کی نشست کے دائیں اور بائیں رکھ دیا گیا ساتھ ہی بوتھ کے اوپر لگائے گئے سی سی ٹی وی کیمروں کے اوپر بھی کپڑا ڈال دیا گیا۔ بعدازاں چیئرمین نے ووٹنگ کا عمل شروع کیا اور ممبران کو دوحصوں میں تقسیم کردیا جس کے بعد خفیہ رائے شماری کے ذریعے ووٹنگ کا عمل ہوا۔ اسپیکر پنجاب اسمبلی کے انتخابات میں پہلا ووٹ پی پی 254 افتخار گیلانی نے کاسٹ کیا۔ پی ٹی آئی سے منحرف ہو کر الیکشن جیتنے والے راجہ صغیر کا ووٹ ڈالنے پر لوٹے لوٹے کے نعرے لگ گئے جس پر چیئرمین نے نعرے لگانے سے منع کردیا۔ چودھری نثار علی خاں ووٹ ڈالنے نہیں آسکے۔ حمزہ شہباز شریف، عثمان بزدار، پرویز الہی اور خود چیئرمین پینل وسیم خان بادوزئی نے بھی اپنے اپنے ووٹ کاسٹ کیے۔ پی ٹی آئی  کی جانب سے ڈپٹی اسپیکر کے لیے واثق قیوم کا نام سامنے آیا، واثق قیوم نے جب اپنا ووٹ کاسٹ کیا تو حکومتی ارکان نے ڈپٹی اسپیکر ڈپٹی اسپیکر کے نعرے لگائے۔ ڈپٹی اسپیکر دوست مزاری ووٹ ڈالنے آگئے تو ان پر لوٹے لوٹے کے نعرے لگے جواب میں مسلم لیگ ن کی جانب سے بھی شوروغل کیا گیا جس پر چیئرمین پینل نے ارکان کو نعرے بازی سے منع کردیا۔ ن لیگی ارکان نے جھگڑے کا آغاز کردیا۔ مسلم لیگ ن کے رکن اسمبلی رانا مشہود اور اور رخسانہ کوکب نے پرزائیڈنگ آفیسر پر حملہ کردیا، رانا مشہور نے بیلٹ پیپر والی کاپی کھینچ لی۔ ُرخسانہ کوکب نے چار بیلٹ پیپر پھاڑ لیے اور ساتھ لے گئیں جس پر پینل آف چئیرمین مسلم لیگ ن کی ایم پی اے پر برہم ہوگئے۔ ن لیگی ایم پی ایز نے پولنگ بوتھ کے آگے جمع ہوگے نعرے بازی شروع کردی جس پر پنجاب اسمبلی میں ہنگامہ آرائی سے نمٹنے کے لیے سیکیورٹی طلب کرلی گئی جس نے اسپیکر کی چیئر کے گرد حصار قائم کرلیا۔ اسپیکر کے امیدوار سبطین خان نے پینل آف چیئرمین کو تحریری اعتراض جمع کرایا جس میں کہا گیا کہ یہ لوگ چار بیلٹ پیپرز لے گئے ہیں، ان بیلٹ پیپرز کی ریکوری کرائی جائے، یہ بیلٹ پیپرز میرے خلاف استعمال ہوسکتے ہیں جس پر چیئرمین پینل نے رولنگ دی کہ بیلٹ پیپرز واپس کیے جائیں۔ ن لیگی رہنما عطا تارڑ نے کہا کہ کچھ دیر پہلے پولنگ میں انکشاف ہوا ہے کہ ق لیگ اور پی ٹی آئی کو جو بیلٹ پیپرز دئیے جارہے ان پر سیریل نمبر درج ہے جس سے ووٹنگ خفیہ نہیں رہی، پرویز الہی اور ان کے صاحبزادے نے دھاندلی کا منصوبہ بنایا ہے، یہ ووٹنگ آئین کے تحت خفیہ نہیں رہی، اس پر نمبر درج نہیں ہونا چاہیے، آئینی طور پر یہ پولنگ کالعدم ہے۔ پنجاب اسمبلی حلقہ پی پی 138 سے منتخب رکن میاں عبدالروف نے الیکشن کی شفافیت پر اعتراض اٹھادیا اور کہا کہ مجھے جو بیلٹ پیپر دیا اس پر 340 سیریل نمبر لگا ہوا تھا، یہ خفیہ رائے شماری کے قواعد و ضوابط کے خلاف ہے۔ انہوں نے پینل آف چیئرمین سے مطالبہ کیا کہ قانون کے مطابق کارروائی عمل میں لائی جائے۔ ہنگامہ آرائی کے باوجود ووٹنگ کا عمل مکمل ہوگیا جس کے بعد اب ووٹوں کی گنتی کی گئی۔ بعدازاں چیئرمین پینل وسیم بادوزئی نے تحریک انصاف کے امیدوار سبطین خان کی فتح کا اعلان کردیا۔ سبطین خان پنجاب اسمبلی کے نئے اسپیکر منتخب ہوگئے جس پر تحریک انصاف کے ارکان نے ایوان میں نعرے بازی کی۔ پینل چیئر وسیم بادوزئی نے اپنے اعلان میں بتایا کہ سبطین خان نے 185 اور سیف کھوکھر نے 175 ووٹ حاصل کیے، جب کہ چار ووٹ مسترد ہوئے۔ ن لیگی ارکان میں جلیل شرق پوری، فیصل نیازی، مولوی عیاث الدین اور پی ٹی آئی کے رکن میاں مسعود نے ووٹ نہیں ڈالا، جعلی ڈگری کیس میں نااہل ہونے والے چوہدری کاشف نے بھی ووٹ کاسٹ نہیں کیا۔ بعدازاں چیئرمین پینل وسیم خان نے سبطین خان نے بطور اسپیکر پنجاب اسمبلی حلف لیا جس کے بعد پی ٹی آئی ارکان نے انہیں مبارک باد دی۔

 

 ڈپٹی اسپیکر رولنگ کیس میں عدالتی حکم نامے کے بعد حکومتی اتحاد اور پی ڈی ایم نے کہا ہے کہ عام انتخابات اپنےوقت پر ہوں گے اور موجودہ حکومت اپنی مدت پوری کرے گی۔

ویب ڈیسک 29جولائی 2022 

پی ڈی ایم کا سربراہی اجلاس مولانا فضل الرحمان کی صدارت میں ہوا جس میں لندن سے مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف اور وزیر اعظم محمد شہباز شریف نے ویڈیو لنک کے ذریعے شرکت کی اور امر پر اتفاق کیا گیا کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف عوامی مہم چلائی جائے گی۔

’آرٹیکل 63 اے کی تشریح کے لیے صدارتی ریفرنس سپریم کورٹ میں دائر کیا جائے گا‘

بعدازاں پی ڈی کے اجلاس کے بعد مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ آج کے اجلاس میں کچھ قراردادیں پاس ہوئی ہیں، فل کورٹ کے ذریعے آرٹیکل 63 اے کی تشریح کے لیے صدارتی ریفرنس سپریم کورٹ میں دائر کیا جائے گا اور سپریم کورٹ کے حالیہ فیصلے سے افراتفری اور سیاسی بحران پیدا ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن نے پر اسرا خاموشی کی چادر اوڑھی ہوئی ہے، ان سے مطالبہ ہے کہ فارن فنڈنگ کیس کا فیصلہ فوری سنایا جائے، اس کیس سے آنکھیں بند کرنا قومی سلامتی کے خلاف ہے، آئین میں اداروں کو واضح طور پر اختیارات تفویض کیے گئے۔

’کوئی ادارہ کسی دوسرے ادارے کے اندر مداخلت نہیں کرسکتا‘

مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ امریکا 8، 9 سال عمران خان نے گھر کا کرایہ ادا کرتا رہا ہے، پی ٹی آئی کا پورا دارومدار سوشل میڈیا کے جعلی اکاوئنٹس ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ کوئی ادارہ کسی دوسرے ادارے کے اندر مداخلت نہیں کرسکتا، کوئی ادارہ کسی دوسرے ادارے کے اندر مداخلت نہیں کرسکتا، جن محکموں کا معیشت سے براہ راست تعلق ہے ہم منگل کو ان سے ان کی کارکردگی کی بریفنگ لیں گے۔

فل کورٹ کا مطالبہ مسترد ہوا کیوںکہ اس قسمم کا نا انصافی پر مبنی فیصلہ آنا تھا، مریم نواز

مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے کہا کہ فل کورٹ کا مطالبہ اس لیے مسترد ہوا کیوںکہ اس قسمم کا نا انصافی پر مبنی فیصلہ آنا تھا، اگر نا انصافی نہ کرنی ہوتی کو فل کورٹ بنانے میں کوئی آر نہیں تھی۔

انہوں نے کہا کہ غلطی اور اسکی تصیح دونوں عمران خان کے حق میں ہیں، اگر غلطی کی تصیح کرنی تھی تو پانامہ کیس کی تصیح کرتے، لاڈلے کو نوازنا تھا اس لیے فل کورٹ نہیں بنایا گیا۔

عدلیہ فیصلے کے خلاف یوم سیاہ منانے کی تجویز 

علاوہ ازیں ذرائع نے بتایا کہ اجلاس میں موجودہ سیاسی صورتحال پنجاب میں تبدیلی اور عدالتی فیصلے پر تبادلہ خیال ہوا جبکہ   مولانا فضل الرحمان نے عدلیہ فیصلے کے خلاف یوم سیاہ منانے کی تجویز دیدی۔

ان کا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم نے الیکشن کمیشن پر پی ٹی آئی ممنوعہ فنڈنگ کیس کا فیصلہ جلد سنانے کا مطالبہ کیا۔ علاوہ ازیں پی ڈی ایم سربراہ مولانا فضل الرحمان نے پیپلز پارٹی اور اے این پی کو باقاعدہ پی ڈی ایم میں واپسی کی دعوت دیدی ہے۔

اجلاس میں مریم نواز، شاہد خاقان عباسی ، مریم اورنگزیب، آفتاب شیر پاو، اویس نورانی ، طاہر بزنجو،غفور حیدری و دیگر نے شرکت کی۔

 

 قومی اسمبلی  میں عدالتی اصلاحات کیلیے مشترکہ پارلیمانی کمیٹی کے قیام کی قرارداد متفقہ طور پر منظور کر لی گئی۔

ویب ڈیسک 28 جولائی 2022

اسپیکر قومی اسمبلی راجہ پرویز اشرف کی زیر صدارت قومی اسمبلی کا اجلاس ہوا۔ جس میں پیپلز پارٹی کے چیئرمین اور وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری نے تجویز پیش کرتے ہوئے کہا تھا کہ جناب اسپیکر آج ہی مشترکہ پارلیمانی کمیٹی بنائیں۔ اجلاس کے دوران وفاقی وزیر قانون اعظم نذیرتارڑ نے عدالتی اصلاحات کے لیے پارلیمانی کمیٹی کے قیام کے معاملے پر قرارداد ایوان میں پیش کی۔

قرارداد کا متن

عدالتی اصلاحت کے لیے پیش کی گئی قرار داد میں کہا گیا ہے کہ قوانین کی منظوری اور آئین میں ترمیم صرف پارلیمنٹ کا حق ہے، آئین انتظامیہ، مقننہ اور عدلیہ کے درمیان اختیارات تقسیم کرتا ہے، ریاست کا کوئی بھی ستون ایک دوسرے کے اختیارات میں مداخلت نہیں کر سکتا، آرٹیکل 175 اے کے تحت اعلیٰ عدلیہ میں ججوں کے تقرر کی توثیق بھی پارلیمنٹ کا اختیار ہے۔

 

سپریم کورٹ نے ڈپٹی اسپیکر پنجاب اسمبلی دوست مزاری کی رولنگ اور حمزہ شہباز کے حلف کو کالعدم قرار دیتے ہوئے چوہدری پرویز الہیٰ کو وزیراعلیٰ پنجاب قرار دے دیا ہے۔

 ویب ڈیسک 27 جولائی 2022

 چیف جسٹس پاکستان عمر عطا بندیال کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ نے ڈپٹی اسپیکر پنجاب اسمبلی رولنگ کیس کی سماعت کی اور پھر دلائل مکمل ہونے کے بعد فیصلہ محفوظ کیا۔

 سپریم کورٹ نے گیارہ صفحات پر مشتمل مختصر حکم نامہ جاری کیا اور بتایا کہ تفصیلی تحریری فیصلہ بعد میں جاری کیا جائے گا۔

 عدالتی فیصلہ

 چیف جسٹس آف پاکستان نے فیصلہ تاخیر کا شکار ہونے پر سب سے پہلے معذرت کی اور حکم نامہ سنانا شروع کیا، جس میں پرویز الہیٰ کی درخواست کو منظور کرنے، ڈپٹی اسپیکر پنجاب اسمبلی کی رولنگ کو کالعدم قرار دیتے ہوئے ق لیگ کے مسترد شدہ ووٹوں کو درست قرار دیا۔

 ڈپٹی اسپیکر پنجاب اسمبلی نے سپریم کورٹ کے فیصلے کو غلط سمجھا

 سپریم کورٹ نے اپنے فیصلے میں کہا کہ ڈپٹی اسپیکر پنجاب اسمبلی نے سپریم کورٹ کے حکم کو غلط سمجھا اور رولنگ دیتہوئے ق لیگ کے درست ووٹوں کو مسترد کیا۔

 عدالت نے حکم کی کاپی فریقین کو فوری فراہم کرنے کی ہدایت کی اور حمزہ شہباز سمیت پوری کابینہ کو فوری دفاتر خالیے  کرنے کا حکم دیا۔ فیصلے میں لکھا گیا ہے کہ پنجاب اسمبلی میں حمزہ نے 179 ووٹ جبکہ پرویز الہیٰ نے 186 ووٹ حاصل کیے، اس اعتبار سے وہ ہی وزیراعلیٰ پنجاب ہیں۔

پرویز الہیٰ کو رات ساڑھے گیارہ بجے تک حلف اٹھانے کا حکم

سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ نے حمزہ شہباز کی بطور وزیراعلیٰ حلف برداری اور کابینہ کی تشکیل نو کو بھی کالعدم قرار دیتے ہوئے پرویز الہیٰ کو رات گیارہ بجے حلف اٹھانے کا حکم دیا اور ہدایت کی کہ اگر گورنر پنجاب دستیاب نہ ہوں تو  در مملکت ڈاکٹر عارف علوی پرویز الہیٰ سے حلف لیں۔

 عدالتی فیصلے میں لکھا گیا ہے کہ حمزہ شہباز اور کابینہ کے آئین و قانون کے مطابق کئے گئے فیصلے برقرار رہیں گے اور انہیں تحفظ حاصل ہوگا۔

 سماعت

 ڈپٹی اسپیکر دوست مزاری کے وکیل عرفان قادر عدالت میں پیش ہوئے اور حکومتی بائیکاٹ سے متعلق بتایا کہ مجھے کہا گیا ہے عدالتی کارروائی کا مزید حصہ نہیں بنیں گے، ہم فل کورٹ درخواست مسترد کرنے کے حکم کیخلاف نظر ثانی دائر کرینگے۔

 یہ کہہ کر عرفان قادر سپریم کورٹ سے واپس چلے گئے۔ وکیل فاروق ایچ نائیک پیش ہوئے اور کہا کہ پی پی پی بھی عدالت میں پیش نہیں ہوگی۔

 چیف جسٹس نے کہا کہ فل کورٹ کی تشکیل کیس لٹکانے سے زیادہ کچھ نہیں تھا، ستمبر کے دوسرے ہفتے سے پہلے ججز دستیاب نہیں، گورننس اور بحران کے حل کیلئے جلدی کیس نمٹانا چاہتے ہیں، آرٹیکل 63 اے کے مقدمہ میں پارلیمانی پارٹی کی ہدایات کا کوئی ایشو نہیں تھا۔

 چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ عدالت کے سامنے 8 جج کے فیصلہ کا حوالہ دیا گیا، آرٹیکل 63 اے سے متعلق 8 ججز کا فیصلہ اکثریتی نہیں ہے، جس کیس میں 8 ججز نے فیصلہ دیا وہ 17 رکنی بینچ تھا، آرٹیکل 63 سے فیصلہ 9 رکنی ہوتا تو اکثریتی کہلاتا، فل کورٹ بنچ کی اکثریت نے پارٹی سربراہ کے ہدایت دینے سے اتفاق نہیں کیا تھا۔

 چیف جسٹس نے کہا کہ ہم نے یہ فیصلہ کیا کہ موجودہ کیس میں فل کورٹ بنانے کی ضرورت نہیں ہے، کیا سترہ میں سے آٹھ ججز کی رائے کی سپریم کورٹ پابند ہو سکتی ہے؟۔

 عدالتی بائیکاٹ کرنے والے شائستگی کا مظاہرہ کریں، عدالتی کارروائی سنیں

 چیف جسٹس نے پرویز الہی کے وکیل علی ظفر کو ہدایت کی کہ قانونی سوالات پر عدالت کی معاونت کریں، دوسرا راستہ ہے کہ ہم بینچ سے الگ ہو جائیں، عدالتی بائیکاٹ کرنے والے گریس (شائستگی) کا مظاہرہ کریں، بائیکاٹ کردیا ہے تو عدالتی کارروائی کو سنیں، دوسرے فریق سن رہے ہیں لیکن کارروائی میں حصہ نہیں لے رہے، اس وقت انکی حیثیت ایسے ہی ہے جیسے اقوام متحدہ میں مبصر ممالک کی ہوتی ہے۔

 علی ظفر نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ 21 ویں ترمیم کیخلاف درخواستیں 13/4 کے تناسب سے خارج ہوئی تھیں، اس کیس میں جسٹس جواد خواجہ نے آرٹیکل 63 اے کو خلاف آئین قرار دیا تھا، ان کی رائے تھی کہ آرٹیکل 63 اے ارکان کو آزادی سے ووٹ دینے سے روکتا ہے، ان کی رائے سے اتفاق نہیں کرتا۔

 چیف جسٹس نے پوچھا کہ کیا پارلیمنٹری  پارٹی، پارٹی سربراہ سے الگ ہے؟ ۔ وکیل نے جواب دیا کہ پارلیمانی جماعت اور پارٹی لیڈر دو الگ الگ چیزیں ہیں۔

 جسٹس اعجازالاحسن نے استفسار کیا کہ پارلیمانی لیڈر والا لفظ کہاں استعمال ہوا ہے؟ ۔ وکیل علی ظفر نے جواب دیا کہ 2002 میں سیاسی جماعتیں کے قانون میں پارلیمانی پارٹی کا ذکر ہوا۔

 جسٹس اعجازالااحسن نے کہا کہ پارلیمنٹری پارٹی کی جگہ پارلیمانی لیڈر کا لفظ محض غلطی تھی، کیا ووٹنگ سے پہلے چوہدری شجاعت کا خط پارلیمانی پارٹی کے  اجلاس میں پڑھا گیا یا نہیں۔

 وکیل علی ظفر نے دلائل دیے کہ پارٹی سربراہ کا پارٹی پر کنٹرول کا کوئی سوال نہیں ہے، پارٹی کے اندر تمام اختیارات سربراہ کے ہی ہوتے ہیں، لیکن آرٹیکل 63 میں ارکان کو ہدایت دینا پارلیمانی پارٹی کا اختیار ہے، پارٹی سربراہ پارلیمانی پارٹی کو ہدایات دے سکتا ہے لیکن ڈکٹیٹ نہیں کر سکتا، ووٹ کا فیصلہ پارلیمانی پارٹی نے کرنا ہے، عائشہ گلالئی کیس میں قرار دیا گیا کہ پارٹی سربراہ یا اس کا نامزد نمائندہ نااہلی ریفرنس بھیج سکتا ہے۔

 جسٹس اعجازالاحسن نے کہا کہ یہ تو واضح ہے کہ اگر کسی ممبر کو ضمیر کے مطابق پارٹی پالیسی کے مطابق ووٹ نہیں دینا تو استفی دے کر دوبارہ آ جائے، عائشہ گلالئی کیس کا فیصلہ تو آپ کے موکل کے خلاف جاتا ہے۔

 چیف جسٹس نے کہا کہ اختیارات پارٹی ہیڈ کے ذریعے ہی منتقل ہوتے ہیں، لیکن ووٹنگ کیلئے ہدایات پارلیمانی پارٹی سربراہ جاری کرتا ہے، کل عدالت میں بھی الیکشن کمیشن کے فیصلے کا حوالہ دیا گیا تھا، سپریم کورٹ کس قانون کے تحت الیکشن کمیشن کے فیصلوں کی پابند ہے؟۔

 علی ظفر نے کہا کہ کوئی قانون سپریم کورٹ کو الیکشن کمیشن فیصلے کا پابند نہیں بناتا۔جسٹس اعجاز الاحسن نے پوچھا کہ کتنے منحرف ارکان نے ضمنی الیکشن میں حصہ لیا؟۔

 وکیل فیصل چوہدری نے بتایا کہ بیس میں سے 16 نے ن لیگ، دو نے آزاد الیکشن لڑا، جن 18 نے الیکشن لڑا ان میں سے 17 کو شکست ہوئی۔

 جسٹس اعجاز الااحسن نے کہا کہ فریق دفاع کے مطابق منحرف ارکان کے کیس میں ہدایات پارٹی ہیڈ عمران خان نے دی اور اگر الیکشن کمیشن کا فیصلہ کالعدم ہوا تو 25 ارکان بحال ہو جائیں گے اور حمزہ کے ووٹ 197 ہوجائیں گے۔

 چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ آرٹیکل 63 اے کی تشریح کا معاملہ طے ہو چکا، اب مزید تشریح کی ضرورت نہیں۔

 ایڈیشنل اٹارنی جنرل عامر رحمان روسٹرم پر آگئے اور کہا کہ عدالت کی خدمت میں چند گزارشات پیش کرنا چاہتا ہوں۔ جسٹس منیب اختر نے پوچھا کہ کیا حکمران اتحاد کے بائیکاٹ کے فیصلے سے وفاقی حکومت الگ ہوگئی ہے؟ ۔

 ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے جواب دیا کہ آرٹیکل 27 اے کے تحت عدالت کی معاونت کروں گا۔ چیف جسٹس نے کہا کہ عدالت کی معاونت کیلئے سب کو ویلکم کرینگے۔

 عامر رحمان نے کہا کہ آرٹیکل 63 اے کے فیصلے میں واضح ہے ووٹ شمار نہیں ہوگا، ہدایات پارلیمانی پارٹی یا پارٹی صدر دیگا اس پر وضاحت نہیں۔ جسٹس منیب اختر نے ٹوکا کہ آرٹیکل 63 اے میں پارلیمانی پارٹی واضح لکھا ہے۔

 ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہا کہ 2015 کے سپریم کورٹ کے فیصلے کے مطابق پارٹی سربراہ ہدایت دے سکتا ہے، سپریم کورٹ کے فیصلے ہر عدالت کیلئے ماننا ضروری ہیں۔ جسٹس منیب اختر نے کہا کہ سپریم کورٹ کے ہر فیصلے پر عملدرآمد لازمی نہیں۔

 سپریم کورٹ میں وزیراعلی پنجاب کے الیکشن پر ڈپٹی اسپیکر رولنگ کیس کی سماعت مکمل ہوگئی۔ عدالت نے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا جو آج شام پونے 6 بجے سنایا جائے گا۔

 گزشتہ روز کی سماعت کا تحریری حکمنامہ

 علاوہ ازیں ڈپٹی اسپیکر رولنگ کیس میں سپریم کورٹ نے گزشتہ روز کی سماعت کا تحریری حکمنامہ جاری کر دیا۔ تحریری حکمنامہ تین صفحات پر مشتمل ہے جس میں فیصلہ سنایا گیا کہ دوران سماعت فریقین کے وکلا نے فل کورٹ کے حوالے سے گزارشات کیں، ہم نے وکلا کو فل کورٹ کے حوالے سے گھنٹوں سنا۔

  ڈپٹی اسپیکر رولنگ کیس؛ سپریم کورٹ نے فل کورٹ بنانے کی استدعا مسترد کردی

 فیصلے میں کہا گیا کہ کیس میں صرف ایک ہی قانونی نکتہ شامل ہے، کہ آیا 63 ون بی کے تحت پارلیمانی سربراہ ہدایات جاری کر سکتا ہے یا پارٹی کا سربراہ، شجاعت حسین، پیپلز پارٹی اور ڈپٹی اسپیکر کے وکلا نے پارٹی ہیڈ کے ہدایات جاری کرنے کے حق میں دلائل دیے۔

  حکومتی اتحاد اور پی ڈی ایم کا ڈپٹی اسپیکر رولنگ کیس کے بائیکاٹ کا اعلان

 تحریری حکمنامے میں کہا گیا کہ کیس تفصیلی سننے کے بعد فل کورٹ بھجوانے کی حد تک استدعا مسترد کرتے ہیں، دوران سماعت فریقین کے وکلا نے گزارشات کے لیے مذید مہلت کی استدعا کی جسے منظور کیا۔

 

 

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ  نے دہشت گردی کے خاتمہ کے لیے سیکیورٹی فورسز کی قربانیوں کو سراہا کرتے ہوئے کہا ہے کہ سیلاب ذدہ علاقوں میں سول انتظامیہ کی مکمل مدد کی جائے۔

ویب ڈیسک 26 جولائی 2022 

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی زیر صدارت 249 ویں کور کمانڈرز کانفرنس جی ایچ کیو میں منعقد ہوئی جس میں سرحدی اور داخلی سلامتی امور کے تناظر میں سیکیورٹی صورتحال کا جامع جائزہ لیا۔ پاک فوج کے شعبہ تعلقات (آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی چیف نے دہشت گردی کے خاتمہ کے لیے جاری آپریشن کو سراہا اور مسلح افواج کی جانب سے متاثرین کی بحالی اور ریلیف کے لئے اقدامات کرنے کے عزم کا اظہار کیا۔ آرمی چیف نے کامیاب انسداد دہشت گردی آپریشنز کی تعریف کی اور سرحدوں اور عوام کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے افسران اور جوانوں کی عظیم قربانیوں کو زبردست خراج تحسین پیش کیا۔

 

  صوبائی حکومت سندھ نے بارش کی وجہ کراچی اور حیدرآباد ڈویژن میں آج بروز (پیر) کی عام تعطیل کا اعلان کردیا۔

ویب ڈیسک 25 جولائی 2022 

اس حوالے سے صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ شرجیل انعام میمن نے سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر کہا کہ کراچی اور حیدرآباد ڈویژن میں صبح 5 بجے سے مسلسل بارش ہورہی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس تناظر میں حکومت سندھ نے کراچی اور حیدرآباد ڈویژن میں آج (بروز پیر) کی عام تعطیل کا فیصلہ کیا ہے۔ ساتھ ہی انہوں نے پرائیوٹ دفاتر کو بھی درخواست کی کہ وہ اپنے دفاتر بند رکھیں۔

 

حمزہ شہباز پیر تک بطور ٹرسٹی وزیراعلیٰ پنجاب رہیں گے،

سپریم کورٹ

 ویب ڈیسک 24 جولائی 2022

ڈپٹی اسپیکر کی رولنگ کیخلاف سپریم کورٹ کے تحریری فیصلے میں لکھا گیا ہے کہ تین رکنی بنچ نے چوہدری پرویز الہیٰ کی درخواست پر سماعت کی، سماعت میں جسٹس اعجاز الا احسن اور جسٹس منیب اختر بھی بنچ میں شامل تھے۔ عبوری حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ پنجاب حکومت کے وکلاء ڈپٹی اسپیکر کی رولنگ پر وضاحت نہیں دے سکے، عدالت نے حمزہ شہباز، ڈپٹی اسپیکر کے وکلاء کا رولنگ پر وضاحت نہ دینا نوٹ کیا ہے۔ عدالتی فیصلے میں کہا گیا ہے کہ وزیر اعلی پنجاب حمزہ شہباز کی موجودہ حیثیت گہرے خطرے میں ہے، موجودہ حالات میں حمزہ شہباز کو منتخب وزیر اعلی نہیں کہا جا سکتا، فریقین کے درمیان موجودہ صورتحال بالکل یکم جولائی والی صورتحال ہو چکی ہے۔ سپریم کورٹ کے عبوری حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ یکم جولائی کو فریقین کی رضا مندی سے حمزہ شہباز کو ٹرسٹی وزیر اعلی بنایا گیا تھا اور اختیارات محدود کردیے گئے تھے تاکہ انتظامی اقدامات سے وہ اپنی جماعت کو سیاسی فائدہ نہ پہنچا سکیں۔ فیصلے میں کہا گیا ہے کہ ہمیں یقین دلایا گیا کہ وزیراعلیٰ اور کابینہ ٹرسٹی کے طور پر کام کریں گے، فریقین اپنے جواب 25 جولائ گیارہ بجے تک جمع کروائیں، مسلم لیگ ق کا خط پیش کیا جاٸے جو ڈپٹی اسپیکر کو دیا گیا اور جس کے تحت رولنگ دی گئی۔

 

حمزہ شہباز وزیراعلیٰ پنجاب کا عہدہ برقرار رکھنے میں کامیاب ہوگئے۔  

 وزارت اعلیٰ کی نشست کے لیے پنجاب اسمبلی میں ووٹنگ ہوئی جس میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے امیدوار چوہدری پرویز الہی کو 186 جبکہ مسلم لیگ (ن) کے امیدوار حمزہ شہباز کو 179 ووٹ کاسٹ کیے گئے، 10 ووٹ مسترد ہونے کے بعد حمزہ شہباز کو 3 ووٹوں کی برتری مل گئی۔

ویب ڈیسک 23 جولائی 2022

ڈپٹی اسپیکر دوست محمد مزاری نے اجلاس کی صدارت کی اورووٹنگ پر گنتی مکمل ہونے کے بعد انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کی رولنگ کی بنیاد پر ق لیگ کے 10 ووٹ مسترد کیے گئے ہیں۔ دوست محمد مزاری نے مسلم لیگ (ق) کے سربراہ چوہدری شجاعت کا موصول ہونے والا خط صوبائی اسمبلی میں پڑھ کر سنایا جس میں کہا گیا کہ ان کی پارٹی کے تمام ووٹ مسترد کردیے جائیں۔ دوست محمد مزاری نے مسلم لیگ (ق) کے سربراہ چوہدری شجاعت کا موصول ہونے والا خط صوبائی اسمبلی میں پڑھ کر سنایا جس میں کہا گیا کہ ان کی پارٹی کے تمام ووٹ مسترد کردیے جائیں۔ پنجاب اسمبلی کا اجلاس تقریباً 3 گھنٹے کی تاخیر سے شروع ہوا۔ اس موقع پر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے لیکن پولیس کا ایوان میں داخل ہونے کی اجازت نہیں ہے۔  پنجاب اسمبلی میں پہلا ووٹ زین قریشی نے کاسٹ کیا جبکہ ملک اسد کھوکھر نے حمزہ شہباز کو پہلا ووٹ دیا۔

چوہدری شجاعت کے مبینہ مراسلے کی گونج 

اس سے قبل ایوان کے علاوہ میڈیا پر ایک مراسلے کی گونج سنائی دے رہی تھی اور بتایا جارہا تھا کہ کوئی ایک ایسا لیٹر ہے جو کہ چوہدری شجاعت حسین نے مبینہ طور پر ڈپٹی اسپیکر کو تحریر کیا ہے۔ تاہم مراسلے کا متن ڈپٹی اسپیکر کی جانب سے ظاہر کیے جانے سے قبل سامنے نہیں آیا۔ چوہدری مونس الہی کے حوالے سے بتایا گیا تھا کہ پہلے وہ تمام اراکین کو پنجاب اسمبلی میں سیشن کے لیے پہنچے تھے اور اس کے بعد اجلاس کے آغاز سے کچھ دیر قبل ہی مونس الہی پنجاب اسمبلی سے روانہ ہوگئے تھے۔ اطلاعات یہ ہی سامنے آتی رہی کہ وہ چوہدری شجاعت حسین سے ملاقات کرنے کے لیے ان کی رہائش گاہ پہنچے ہیں اور وہ چوہدری شجاعت سے ایک ویڈیو پیغام چاہتے ہیں جس میں کسی قسم کا کوئی لیٹر چوہدری شجاعت نے نہیں لکھا اور چوہدری شجاعت دراصل چوہدری پرویز الہی کی حمایت کرتے ہیں۔ تاحال یہ صورتحال سامنے نہیں آسکی۔ اس حوالے سے ذرائع نے کہا کہ چوہدری شجاعت، عمران خان کے امیدوار کو سپورٹ نہیں کریں گے، چوہدری شجاعت کا وزیراعلیٰ امیدوار کی حمایت کے لیے مونس الہی کو انکار کردیا۔

ق لیگ ارکان کی چوہدری شجاعت حسین کے خلاف نعرہ بازی 

اس دوران مسلم لیگ (ق) کے ارکان کی چوہدری شجاعت حسین کے خلاف بھی نعرے بازی شروع ہو گئی تھی۔  چوہدری شجاعت ہاؤس کی رہائش گاہ کے باہر ارکان کی ضمیر فروش مردہ باد کی نعرے بازی کی۔ ق لیگی اراکین نے کہا کہ چوہدری شجاعت آپ نے تھوڑے سے فائدے کے لیے ملک کی عزت کا سودا کر لیا، عمران خان وعدہ وفا نہ کرنے پر ہم آپ سے شرمندہ ہیں۔ ق لیگ ارکان نے کہا کہ ہم آخری سانس تک چوہدری پرویز الہی اور مونس الہی کا ساتھ نبھائیں گے۔ علاوہ ازیں انہوں نے کہا کہ زرداری کو اجازت نہیں دیں گے کہ وہ پنجاب کو بھی سندھ بنا دیں۔

زین قریشی اور شبیر گجر پر مسلم لیگ (ن) کا اعتراض 

اجلاس کا آغاز تلاوت قرآن پاک سے ہوا جس کے بعد ڈپٹی اسپیکر نے راولپنڈی سے منتخب ہونے والے پاکستان مسلم لیگ(ن) کے رکن اسمبلی راجا صغیر سے رکنیت کا حلف لیا۔ بعدازاں پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رکن طاہر خلیل سندھو نے نے پوائنٹ آف آرڈر پر اعتراض اٹھایا کہ زین قریشی نے استعفیٰ نہیں دیا اور شبیر گجرکا الیکشن کمیشن میں کیس چل رہا ہے اس لیے ووٹ نہیں ڈال سکتے۔ راجا بشارت نے کہا کہ الیکشن کمیشن نے نوٹی فکیشن جاری کیا اس لیے شبیر گجر ووٹ کاسٹ کرسکتے ہیں۔ پی پی 7 سے منتخب مسلم لیگ (ن) کے رکن راجا صغیر نے بھی حلف اٹھا لیا۔ ڈپٹی اسپیکر دوست محمد مزاری نے زین قریشی کے حق میں رولنگ دے دی۔

اجلاس میں تاخیر؛ پی ٹی آئی کا سپریم کورٹ سے رجوع کرنے کا فیصلہ  

اس سے قبل پی ٹی آئی رہنما فیصل چوہدری نے کہا کہ اسمبلی اجلاس میں تاخیر پر کچھ دیر میں سپریم کورٹ میں درخواست دائر کررہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اجلاس میں تاخیر سپریم کورٹ کے فیصلے کی خلاف ورزی ہے۔ اس حوالے سے فواد چوہدری نے سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر کہا کہ صوبائی اسمبلی کے اجلاس میں غیر ضروری تاخیر سپریم کورٹ کے واضع احکامات کی خلاف ورزی  ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ وکلا کو توہین عدالت کی کاروائ کے لیے کہہ دیا ہے، اب سے کچھ دیر بعد ڈپٹی اسپیکر کے خلاف توہین عدالت کی درخواست سپریم کورٹ میں دائر کی جارہی ہے۔

 

  تخت لاہور پر کس کی حکمرانی ہوگی؟ وزیراعلیٰ پنجاب کا انتخاب آج ہوگا

ویب ڈیسک 22 جولائی 2022

 وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب کے لیے ووٹنگ آج ہوگی، مسلم لیگ ن اور اتحادی جماعتوں نے حمزہ شہباز جبکہ پی ٹی آئی اور ق لیگ نے چوہدری پرویز الہیٰ کو امیدوار نامزد کیا ہے۔

 وزیراعلی کے انتخاب کے لئے پنجاب اسمبلی کا اجلاس جمعے کی شام چار بجے ڈپٹی اسپیکر دوست محمد مزاری کی صدارت میں ہوگا، جس میں پنجاب کے نئے وزیراعلیٰ کے انتخاب کے لیے ووٹنگ کرائی جائے گی۔ پی ٹی آئی کے 15ارکان اسمبلی کے حلف  اٹھانے کے بعد ایوان میں تحریک انصاف کے کُل ممبران تعداد 178 ہوگئی ہے، جبکہ مسلم لیگ ق کے ارکین کی  تعداد 10 ہے۔ پی ٹی آئی اور مسلم لیگ ق کے اراکین کو ملا کر تعداد 188 ہے جبکہ ایک رکن   اسمبلی بیرون ملک میں  ہیں۔

 پی ٹی آئی اور ق لیگ نے دعویٰ کیا کہ عمران خان اور پرویز الہیٰ کی سربراہی میں ہونے والے پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں 186 ارکان شریک ہوئے اور انہوں نے وزیراعلیٰ پنجاب کیلیے پرویز الہیٰ کی حمایت کا اعلان کیا۔

 مسلم لیگ ن کے تین ارکان اسمبلی کے حلف کے بعد حکومتی اتحادی اراکین کی مجموعی تعداد 178 ہے تاہم ایک رکن اسمبلی کا ابھی نوٹیفکیشن جاری نہیں ہوا جبکہ ایک رکن عظمی زعیم قادری کورونا کا شکار جبکہ دو رکن فیصل نیازی اور جلیل شرقپوری مستعفی ہو چکے ہیں۔ اسمبلی میں موجود آزاد اراکین کی تعداد 6 ہے۔ عددی لحاظ سے تحریک انصاف کی بظاہر برتری نظر آرہی ہے مگر مسلم لیگ (ن) اور پی ڈی ایم جماعتیں بھی حمزہ شہباز کی فتح کے لیے پُرامید ہیں۔ مسلم لیگ ن اور اتحادی جماعتوں جبکہ پی ٹی آئی اور ق لیگ نے اپنے اراکین کو ہوٹلز میں قیام کروایا ہے۔

 

 

صدر پاکستان مسلم لیگ (ق) چوہدری شجاعت حسین کا وزیر اعلیٰ پنجاب کے انتخاب پر پالیسی بیان آگیا۔

 ویب ڈیسک 21 جولائی 2022

چوہدری شجاعت نے کہا کہ چوہدری پرویز الٰہی ہی وزارت اعلیٰ کیلئے پارٹی کے امیدوار ہیں، جن کو مینڈیٹ ملا حکومت کرنا اس کا حق ہے، ایک بار نہیں دو تین بار پہلے بھی یہی بات کہہ چکا ہوں۔ صدر ق لیگ نے کہا کہ کوئی لیٹر جاری نہیں کر رہا، کسی قسم کے لیٹرز جاری کرنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا، مجھے صفائی پیش کرنے کی کوئی ضرورت نہیں، ملکی مسائل کا حل اسی میں ہے کہ گنتی کے چکروں سے باہر نکلا جائے اور غریب آدمی کے مسائل کی طرف توجہ دی جائے۔  چوہدری شجاعت کا کہنا تھا کہ جو غریبوں کے مسائل حل کرنے میں کامیاب ہو گا حقیقی معنوں میں اسی کی گنتی پوری ہو جائے گی، جو منتخب ہوئے ہیں وہ عوام کی خدمت کریں، اس فکر میں نا پڑیں کہ ایک دوسرے کو کیسے نیچے دیکھانا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ملکی مسائل کا حل اسی میں ہے کہ سال ڈیڑھ سال حکومت کا موقع ملنا چاہیے یا فوری انتخابات کی طرف جا یا جائے، فوری انتخاب سے مراد فوری ہیں مہینوں میں نہیں۔

 

 

عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ آصف زرداری خریدوفروخت کی منڈی لگاتا ہے ۔ جہاں ووٹ خریدا اورفروخت ہو رہا ہوسمجھ جائیں آصف زرداری موجود ہے۔

ویب ڈیسک 20 جولائی 2022

اوور سیز پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دلانے سے متعلق درخواست دائر کرنے کے بعد سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ دوسرے پاکستانیوں کی طرح اوورسیز پاکستانیوں کا بھی ووٹ ڈالنے کا بنیادی حق ہے ۔ موجودہ حکومت اس معاملے پر تاخیری حربے استعمال کررہی۔ ہم اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دلانے آئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف عمران خان کا نام ہے۔ تحریک انصاف میں باقی کوئی میٹر نہیں کرتا، جہاں عمران خان ہوگا ہم اس کے ساتھ ہوں گے۔ پرویز الٰہی تحریک انصاف کے نامزامیدوارہیں۔ جہاں ووٹوں کی خریدو فروخت ہو، سمجھیں آصف زرداری پیچھے ہے۔ آصف زرداری خریدوفروخت کی منڈی لگاتا ہے ۔ جہاں ووٹ خریدا اورفروخت ہو رہا ہوسمجھ جائیں آصف زرداری موجود ہے۔ انہوں نے کہا کہ لاہور جا رہا ہوں، وہاں  چودھری شجاعت حسین سے بات کروں گا۔ ق لیگ کے پرانے تعلقات ہیں ۔ قبل ازیں شیخ رشید نے اوور سیز پاکستانیوں کے ووٹ سے متعلق سپریم کورٹ میں درخواست دائر کردی، جس میں حکومت کی انتخابی اصلاحات سے متعلق ترامیم کو چیلنج کیا گیا ہے۔ درخواست میں وفاق، وزارت پارلیمانی امور، قانون، کابینہ اور الیکشن کمیشن کو فریق بنایا گیا ہے۔  

درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ اوور سیز پاکستانیوں کو ووٹ ڈالنے کی سہولت دیے جانے کے خلاف ترامیم کو کالعدم قرار دیا جائے اور تمام فریقوں کو تارکین وطن کو ووٹ ڈالنے کی سہولت فراہمی کا حکم دیا جائے۔ علاوہ ازیں حکم دیا جائے کہ آئندہ الیکشن میں اوور سیز پاکستانی اپنا حق رائے دہی استعمال کر سکیں۔ درخواست میں مزید کہا گیا ہے کہ ووٹ دالنے کی سہولت فراہم نہ کرکے تارکین وطن کو ووٹ کے حق سے محروم کیا جا رہا ہے۔ اس سے پہلے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری بیان میں عوامی مسلم لیگ کے سربراہ نے کہا ہے کہ سیاسی عدم استحکام معاشی قیامت کو جنم دے رہا ہے۔ ڈالر 226 روپے کا ہونے کے باوجود آئی ایم ایف کے ساتھ ابھی بھی بیل آؤٹ معاہدہ طے نہیں پایا۔اکتوبر نومبر میں عام انتخابات کے سوا کوئی حل نہیں۔ پھر کوئی بھی حکومت نہیں کر پائے گا۔

 

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے پنجاب کے ضمنی انتخابات میں پارٹی کی کامیابی کے بعد اپنے پہلے عوامی خطاب میں کہا ہے کہ سیاسی بحران ختم کرنے کا صرف ایک ہی راستہ ہے اور وہ صاف اور شفاف انتخابات ہیں۔

ویب ڈیسک 19 جولا ئی 2022 

انہوں نے کامیابی پر اللہ کا شکر ادا کرتے ہوئے چیف الیکشن کمشنر پرعدم اعتماد کا اظہار کیا اور کہا کہ چیف الیکشن کمشنر نے پوری کوشش کی (ن) لیگ کو جتوانے کی۔ چیئرمین پی ٹی آئی نے الیکشن کمیشن پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ جیسا الیکشن انہوں نے پنجاب میں کروایا ہے اگر آئندہ بھی ایسے ہی الیکشن ہوئے تو بحران بڑھے گا، الیکشن کمیشن دھاندلی روکنے میں بری طرح ناکام ہوگیا۔ عمران خان نے الزام لگایا کہ چیف الیکشن کمشنر نے جو بددیانتی کی ہے اس کی مثال نہیں ملتی، ہم 8 کیسز لے کر الیکشن کمیشن میں گئے لیکن ہماری درخواستیں رد کی گئیں۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن نے سارے فیصلے ہمارے خلاف کیے اور سندھ کا صوبائی الیکشن کمشنر سندھ حکومت کا نوکر ہے۔ عمران خان نے کہا کہ بیرونی سازش کے تحت ہم پرامپورٹڈ حکومت مسلط کی گئی اور اب قوم نے ثابت کردیا کہ ہم کسی کی غلامی کے لیے تیار نہیں ہیں، جب ہم ایک قوم بن جائیں گے تو ہمارے سارے مسائل حل ہوجائیں گے۔ چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ ہم ڈھائی برس آئی ایم ایف کے ساتھ تھے اور ہم بھی مجبور تھی لیکن اس دوران ساری چیزیں مثبت تھیں، ہمارے دور میں لارج اسکیل مینوفیکچرنگ بڑھی جس سے روزگار بڑھا۔ عمران خان نے حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ یہ لوگ کہتے ہیں کہ پاکستان پر مرنے کے لیے تیار ہیں لیکن ان کا سب کچھ ملک سے باہر ہے، جب تک سیاسی بحران ختم نہیں ہوگا تب تک ملک ترقی نہیں کرسکتا۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم نے ’ان لوگوں‘ کو آگاہ کیا تھا کہ عالمی سطح پر مہنگائی ہے اور ایسے حالات میں حکومت گرائی گئی تو ملک میں معاشی بحران پیدا ہوجائے گا لیکن ہماری حکومت کے لیے مصنوعی سیاسی بحران پیدا کیا گیا۔

 

پنجاب کے ضمنی انتخابات میں

پی ٹی آئی 15، مسلم لیگ ن 4 نشستوں پر کامیاب

ویب ڈیسک18جولائی2022

پنجاب میں صوبائی اسمبلی کی 20 نشستوں پر ہونے والے ضمنی انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف 15، مسلم لیگ ن چار جبکہ ایک نشست پر آزاد امیدوار کامیاب ہوئے۔

الیکشن کمیشن کو آر ٹی ایس سسٹم کے ذریعے موصول ہونے والے نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف جھنگ کی دو، لاہور کی تین اور ملتان، راولپنڈی، مظفر گڑھ، ڈیرہ غازی خان، ساہیوال، خوشاب، بھکر، شیخوپورہ، فیصل آباد، لودھراں سے ایک ایک نشست پر کامیاب ہوگئی۔ مسلم لیگ (ن) پنجاب کے ضمنی انتخابات میں 4 نشستوں پر کامیاب ہوسکی جن میں لاہور (168)، مظفر گڑھ (273)، بہاولنگر اور راولپنڈی پی پی 7 کی ایک ایک نشست پر کامیاب ہوسکی۔ پولنگ صبح 8 سے شام پانچ بجے تک بغیر کسی وقفے کے جاری رہی، مقررہ وقت ختم ہونے سے قبل پولنگ اسٹیشن میں داخل ہونے والے ووٹرز نے اپنا ووٹ کاسٹ کیا جبکہ مقررہ وقت کے بعد آنے والے ووٹرز کو پولنگ اسٹیشن میں داخلے کی اجازت نہیں دی گئی۔

پاکستان تحریک انصاف کا لاہور میں بڑا معرکہ 

پاکستان تحریک انصاف نے ضمنی انتخابات میں لاہور کی کُل چار میں سے 3 نشستوں پر کامیابی حاصل کی۔ نتائج کے مطابق پی ٹی آئی کے امیدوار میاں محمد عثمان اکرم نے حلقہ 158 (لاہور) کا میدان مارتے ہوئے مسلم لیگ ن کے امیدوار رانا احسن شرافت کو شکست دے دی۔ حلقے کے 151 پولنگ اسٹیشنز کے نتائج کے مطابق میاں محمد عثمان اکرم 37 ہزار 463  جبکہ رانا احسن اشرف 31 ہزار 906  ووٹ حاصل کرسکے۔ واضح رہے کہ 2018 کے انتخابات میں علیم خان اس حلقے سے کامیاب ہوئے تھے۔ الیکشن کمیشن کے مرکزی سیکریٹریٹ کو موصول ہونے والے حتمی و سرکاری نتیجے کے مطابق پی پی 167 (لاہور) کے تمام پولنگ اسٹیشنز سے پی ٹی آئی کے شبیر گجر 40 ہزار 511 ووٹ لیکر کامیاب ہوگئے جبکہ ن لیگ کے نذیر چوہان 26 ہزار 473 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔ پی پی 170 (لاہور) کے تمام پولنگ اسٹیشنز کے غیر سرکاری نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار ظہیر عباس کھوکھر نے مسلم لیگ ن کے امیدوار محمد آمین ذوالقرنین کو شکست دیدی۔ ظہیر عباس نے 24 ہزار 688  ووٹ جبکہ محمد آمین ذوالقرنین نے  17 ہزار 519  ووٹ حاصل کیے۔ دوسری جانب  سرکاری نتائج کے مطابق لاہور کی 4 انتخابی نشستوں میں سے مسلم لیگ (ن) صرف ایک نشست پر کامیابی حاصل کرسکی ہے۔ پی پی 168 (لاہور) کی انتخابی نشست پر مسلم لیگ (ن) کے امیدوار اسد علی کھوکھر نے تحریک انصاف کے امیدوار نواز اعوان کو شکست دی۔ اسد علی کھوکھر 26 ہزار 169 ووٹ جبکہ نواز اعوان 15 ہزار 767 ووٹ حاصل کرسکے۔

پی ٹی آئی خوشاب میں کامیاب 

پی پی 83 (خوشاب) کے تمام 215 پولنگ اسٹیشنز کے انتخابی نتائج الیکشن کمیشن کو موصول ہوگئے جس کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے ملک حسن اسلم خان کامیاب ہوگئے۔

الیکشن کمیشن کو موصول ہونے والے نتائج کے مطابق پی ٹی آئی کے ملک حسن اسلم نے 50  ہزار 749 ووٹ لے کر آزاد امیدوارمحمد آصف ملک اور ن لیگ کے امیدوار کو شکست دی۔ آزاد امیدوار محمد آصف ملک 43 ہزار 587  اور ن لیگی امیدوار امیر حیدر سنگھا 35 ہزار 395 ووٹ حاصل کرکے بالترتیب دوسرے اور تیسرے نمبر پر آئے۔

ملتان سے پی ٹی آئی کامیاب

پی پی 217 (ملتان) کے تمام 124 پولنگ اسٹیشنز کے نتائج کے مطابق پی ٹی آئی کے امیدوار مخدوم زین قریشی نے ن لیگ کے امیدوار سلمان نعیم بٹ کو شسکت دی۔ نتائج کے مطابق پی ٹی آئی کے مخدوم زین قریشی نے 47  ہزار252 ووٹ لے کر کامیابی اپنے نام کی۔ الیکشن کمیشن کے مرکزی سیکرٹریٹ کو موصول ہونے والی تفصیلات کے مطابق ن لیگ کے سلمان نعیم 40 ہزار 203 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پررہے۔ سیکرٹریٹ کے مطابق شاہ محمود قریشی کے بیٹے 7 ہزار ووٹوں کی لیڈ سے کامیاب رہے جبکہ پی پی 217 میں ٹرن آؤٹ 42 فیصد سے زائد رہا۔

ڈیرہ غازی خان سے پی ٹی آئی کامیاب 

پی پی 288 (ڈیرہ غازی خان) کے تمام 145 پولنگ اسٹیشنز کے انتخابی نتائج الیکشن کمیشن کو موصول ہوگئے جس کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار سردارمحمد سیف الدین کھوسہ 58 ہزار 166  ووٹ لےکر کامیاب ہوگئے۔ الیکشن کمیشن کے مطابق مسلم لیگ (ن) کے عبدالقادر خان 32 ہزار 212 ووٹ حاصل کرسکے۔

ساہیوال کا میدان پی ٹی آئی کے نام  

پی پی 202 (ساہیوال) کے تمام 176 پولنگ اسٹیشنز کے نتائج الیکشن کمیشن کو موصول ہوگئے جس کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار میجر (ر) محمد غلام سرور نے مسلم لیگ (ن) کے نعمان لنگڑیاں کو شکست دی۔ انتخابی نتائج کے مطابق پی ٹی آئی امیدوار نے 62 ہزار 298  ووٹ جبکہ لیگی رہنما نے 59 ہزار 191  ووٹ حاصل کیے۔

شیخوپورہ سے پی ٹی آئی امیدوار کامیاب 

الیکشن کمیشن کو پی پی 140 (شیخوپورہ) کے انتخابی نتائج موصول ہوگئے۔ جس کے مطابق پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے خرم شہزاد ورک 50 ہزار 166  ووٹ لیکر کامیاب ہوگئے۔ الیکشن کمیشن کے مطابق پی ٹی آئی کے سیاسی حریف ن لیگ کے میاں خالد 32 ہزار 105  ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

لودھراں سے آزاد امیدوار کامیاب 

لودھراں کے انتخابی حلقے پی پی 228 سے آزاد امیدوار پیر رفیع الدین 45 ہزار 20 ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے، الیکشن کمیشن کے مطابق پی ٹی آئی کے کیپٹن (ر) عزت خان 38 ہزار 338 ووٹ لیکر دوسرے جبکہ ن لیگ کے نذیر خان 34 ہزار 929 ووٹ لے کر تیسرے نمبر پر رہے۔ پی پی 224 سے پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار محمد عامر اقبال 69 ہزار 881 ووٹ لے کر فاتح جبکہ ن لیگ کے زوار حسین وڑائچ 56 ہزار 214 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

جھنگ سے پی ٹی آئی کامیاب 

جھنگ کے دو انتخابی حلقوں 125 اور 127 سے پاکستان تحریک انصاف کے دونوں امیدواروں نے ن لیگی امیدواروں کو شکست دی۔ الیکشن کمیشن کو پی پی 125 (جھنگ) کے تمام 185 پولنگ اسٹیشنز کے موصول ہونے والے انتخابی نتائج کے مطابق پاکستان تحریک اںصاف کے اعظم چیلہ نے ن لیگ کے فیصل جبوانہ کو شکست دی۔ اعظم چیلہ 82 ہزار 297 جبکہ فیصل جبوانہ 52 ہزار 277 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔ پی پی127 (جھنگ) کے نتائج الیکشن کمیشن کو موصول ہوگئے جس کے مطابق پی ٹی آئی کے مہر نواز 71 ہزار 71648 ووٹ لیکر کامیاب ہوگئے جبکہ ن لیگ کے مہر اسلم 47 ہزار 413 ووٹ لیکر ہار گئے۔

مظفر گڑھ سے پی ٹی آئی امیدوار کامیاب 

ضمنی انتخابات میں مظفر گڑھ کی دو انتخابی نشستوں 272 اور 273 پر بالترتیب پاکستان تحریک انصاف اور ن لیگ کے امیدوار کامیاب ہوگئے۔ الیکشن کمیشن کو پی پی 272 (مظفرگڑھ) کے انتخابی نتائج موصول ہوگئے جس کے مطابق پی ٹی آئی کے معظم علی خان نے ن لیگ زہرا باسط بخاری کو شکست دے دی۔ الیکشن کمیشن کے مطابق معظم علی خان نے 46 ہزار 69 ووٹ لیکر کامیاب ٹھہرے جبکہ زہرا باسط بخاری 36 ہزار 401 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر آئیں۔ علاوہ ازیں الیکشن کمیشن کو پی پی 273 (مظفر گڑھ) کے تمام پولنگ اسٹیشن کے نتائج موصول ہوگئے۔ جس کے مطابق ن لیگ کے سبطین رضا 59 ہزار 679 ووٹ لیکر کامیاب ہوگئے جبکہ پی ٹی آئی کے یاسر عرفات خان 51 ہزار 232 ووٹ لے سکے۔

فیصل آباد سے پی ٹی آئی کامیاب 

الیکشن کمیشن کو پی پی 97 (فیصل آباد) کے انتخابی نتائج موصول ہوگئے جس کے مطابق پی ٹی آئی کے علی افضل ساہی 67 ہزار 22 ووٹ لیکر کامیاب امیدوار ٹھہرے۔ الیکشن کمیشن کے مطابق ن لیگ کے محمد اجمل چیمہ 54 ہزار 266 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

بھکر سے پی ٹی آئی کا امیدوار کامیاب

الیکشن کمیشن کو پی پی 90 (بھکر) کے انتخابی نتائج موصول ہوگئے جس کے مطابق پی ٹی آئی کے عرفان اللہ نیازی نے ن لیگ کے سعید اکبر نوانی کو شکست دے دی۔ الیکشن کمیشن کے مطابق عرفان اللہ نیازی نے 77 ہزار 865 ووٹ جبکہ سعید اکبر نوانی نے 66 ہزار 513 ووٹ حاصل کیے۔

راولپنڈی پی پی 7 سے مسلم لیگ ن کامیاب

راولپنڈی کے حلقہ پی پی 7 پر مسلم لیگ ن کے راجہ صغیر 68906 ووٹ لیکر کامیاب جبکہ پی ٹی آئی کے شبیر اعوان 68857 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔ اس حلقے میں نتائج کا سلسلہ تاخیر کا شکار رہا جس پر پی ٹی آئی نے آر ٹی ایس سسٹم بٹھانے کا دعویٰ کیا۔ بعد ازاں الیکشن کمیشن نے اس پر وضاحت پیش کرتے ہوئے کہا کہ پہاڑی علاقوں میں پولنگ اسٹیشنز ہونے کے باعث رزلٹ جمع کرنے میں تھوڑی دیر ہوئی ہے۔ بعد ازاں ریٹرنگ آفیسر رائے سلطان بھٹی نے تمام 266 پولنگ اسٹیشنز کے نتائج آنے کے بعد پریس کانفرنس کے ذریعے نتائج کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ حلقے میں ٹوٹل پولنگ اسٹیشن 266 تھے، ڈالے گئے ووٹ 1 لاکھ 59 ہزار سے زائد ہے، اس حساب سے ٹرن آؤٹ 47 اعشاریہ 46 تھا، پر امن ماحول میں پولنگ ہوئی اسی لیے ٹرن آوٹ اچھا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ جماعت اسلامی نے 1666 ووٹ لیے، راجہ صغیر ن لیگ سے 68906 ووٹ لیے ، راجہ وسیم نے 3084 ووٹ لیے، شبیر اعوان نے 68857 ووٹ لیے ، ٹی ایل پی نے 14775 ووٹ لیے، آزاد امیدوار نے 339 ووٹ لیے۔ ریٹرنگ آفیسر نے بتایا کہ ن لیگ کے امیدوار راجہ صغیر  یر ختمی نتائج کے مطابق جیت گے۔ انہوں نے مزید وضاحت کی کہ نتائج میں تاخیر پہاڑی علاقوں کی وجہ سے ہوئی، پی پی 7 پنجاب کا سب بڑا حلقہ ہے، اگر کسی امیدوار کو دوبارہ گنتی کروانی ہے تو قانون کے مطابق وہ درخواست دے گا جس پر آر او دوبارہ گنتی کرے گا، اس حوالے سے تمام امیدواروں کو نوٹس بھی بھیجا جائے گا۔

پی ٹی آئی نے نتائج کو مسترد کردیا

دوسری جانب پاکستان تحریک انصاف نے پی پی 7 کے نتائج کو مسترد کرتے ہوئے دوبارہ گنتی کے لیے درخواست دائر کرنے کا اعلان کیا ہے، اس حوالے سے پی ٹی آئی رہنما بابر اعوان نے آر او آفس پہنچ کر درخواست بھی دائر کی۔

بہاولنگر سے ن لیگی امیدوار کامیاب 

پی پی 237 (بہاولنگر) کے تمام 160 پولنگ اسٹیشنز سے پاکستان مسلم لیگ (ن) نے میدان مار لیا۔ ن لیگی امیدوار فدا حسین نے 66 ہزار 881 ووٹ جبکہ پاکستان تحریک انصاف کے سید آفتاب رضا نے 31 ہزار 148 ووٹ حاصل کیے۔

لیہ پی پی 282 سے پی ٹی آئی کامیاب

پی پی 282 لیہ سے پی ٹی آئی امیدوار قیصر عباس خان 57 ہزار 118 ووٹ لیکر کامیاب قرار پائے جبکہ لیگی امیدوار محمد طاہر 38 ہزار 758 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

پی ٹی آئی کو 46.8 فیصد ووٹ ملے، مجموعی ٹرن آؤٹ 49.69 فیصد رہا

الیکشن کمیشن کو تمام بیس حلقوں کے نتائج آر ایم ایس سسٹم کے ذریعے ملے، مذکورہ بیس حلقوں میں ووٹنگ ٹرن آؤٹ 49.69فیصد رہا، پاکستان تحریک انصاف کو سب سے زیادہ 46.8 فیصد ووٹ ملے جبکہ مسلم لیگ ن کو 39.5فیصد ووٹ ملے، آزاد امیدواروں کے حصے میں 7.7 فیصد ووٹ آئے اور تحریک لبیک پاکستان نے 5 فیصد ووٹ حاصل کیے۔

پی ٹی آئی کارکنان کا جشن

پاکستان تحریک انصاف کے کارکنان نے ضمنی انتخابات میں واضح اکثریت ملنے پر لاہور میں جشن منایا، آتش بازی کی اور ڈھول کی تھاپ کی رقص کر کے ایک دوسرے کو مٹھائیاں کھلائیں۔ پولنگ کے لیے 3 ہزار 131 پولنگ اسٹیشنز قائم کیے گئے جن میں سے 1900 پولنگ اسٹیشنز کو انتہائی حساس قرار دیا گیا تھا، ضمنی انتخاب میں امن و امان کے پیش نظر صوبے بھر میں دفعہ 144 نافذ کردی گئی تھی۔

ای سی پی کا قانون نافذ کرنے والے اداروں و دیگر سے اظہار تشکر

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے پنجاب کے ضمنی انتخابات میں ڈیوٹی انجام دینے پر تمام قانون نافذ کرنے والے اداروں کو پرامن اور شفاف انتخابات کروانے میں بھرپور کردار کو سراہا۔ ای سی پی نے عملے اور صوبائی حکومت کے تمام عہدیداران و اہلکاران جو پنجاب پولنگ کے عمل میں شامل تھے ان کے کردار کو بھی سراہا ہے۔ الیکشن کمیشن نے پنجاب میں شفاف اور پرامن ضمنی انتخابات میں تمام میڈیا کے مثبت کردار اور بروقت پولنگ صورتحال سے آگاہ کرنے کرنے کی تعریف کی اور میڈیا کے تمام نمائندوں کا شکریہ ادا کیا۔

پنجاب کی 20 انتخابی نشستیں 

ان 20 نشستوں میں لاہور کی 4، راولپنڈی، خوشاب، بھکر، فیصل آباد، شیخوپورہ، ساہیوال، ملتان، بہاولنگر،لیہ  کی ایک ایک، جھنگ کی 2، لودھراں میں 2، مظفر گڑھ میں 2 اور ڈیرہ غازی خان کی ایک نشست شامل ہے۔

یاد رہےکہ

صوبائی اسمبلی کی ان 20 نشستوں پر مجموعی طور پر 175 امیدواروں کے درمیان کانٹے کا مقابلہ ہوا۔ جن میں پی ٹی آئی اور مسلم لیگ ن کے امیدوار نمایاں رہے۔ ان حلقوں میں رجسٹرڈ ووٹرز کی مجموعی تعداد 45 لاکھ 79 ہزار 898 تھی۔ مسلم لیگ ن کو پنجاب میں اپنی برتری برقرار رکھنے کیلئے 20 میں سے 9 نشستیں جیتنا ضروری تھا۔یاد رہے کہ 20 مئی کو الیکشن کمیشن نے پنجاب اسمبلی میں حمزہ شہباز کو وزیراعلیٰ کا ووٹ دینے والے تحریک انصاف کے منحرف ارکان کی رکنیت ختم کردی تھی

 

سعودی اسرائیل تنازع ختم

 امریکا کا 2 جزائر سے فوج بلانے کا اعلان

 امریکا نے سعودی عرب، مصر اور اسرائیل کے درمیان تنازع کی وجہ بننے والے جزائر تیران اور صنافیر سے

امن افواج واپس بلالیں۔

ویب ڈیسک 17 جولائی 2022

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق بحیرہ احمر میں واقع خصوصی اہمیت کے حامل جزائر تیران اور صنافیر پر نصف صدی سے سعودی عرب اور مصر کے درمیان ملکیت کا تنازع ہے۔ بعد ازاں اسرائیل بھی اس میں پارٹی بن گیا تھا۔ مصر نے دونوں جزائر کو سعودی عرب کے حوالے کرنے کا فیصلہ کرلیا تھا لیکن اسرائیل نے یہ جزائر سعودی عرب کو دینے کے فیصلے کی شدید مخالفت کی تھی تاہم امریکی ثالثی کے باعث اسرائیل نے جزائر سعودی عرب کو واپس کرنے سے متعلق اعتراض واپس لے لیا۔

  

چیف جسٹس پاکستان نے عمران خان کی نیب ترامیم کے خلاف درخواست پر خصوصی بینچ تشکیل دے دیا۔

ویب ڈیسک 16جولائی                                      

چیف جسٹس کی سربراہی میں قائم تین رکنی خصوصی بینچ میں جسٹس اعجاز الاحسن اور جسٹس منصور علی شاہ شامل ہیں۔

سپریم کورٹ کا خصوصی بینچ 19 جولائی کو ساڑھے بارہ بجے نیب ترامیم کے خلاف درخواست پر سماعت کرے گا۔ واضح رہے کہ عمران خان نے موجودہ حکومت کی جانب سے نیب ترامیم کو سپریم کورٹ میں چیلنج کر رکھا ہے۔

عدالت عظمیٰ میں دائر درخواست میں عمران خان نے استدعا کی تھی کہ سیکشن 14،15، 21، 23 میں ترامیم بھی آئین کے منافی ہیں۔ نیب قانون میں یہ ترامیم آئین کے آرٹیکل 9، 14، 19A, 24, 25 کے بنیادی حقوق کے برعکس ہیں، نیب قانون میں کی گئی ان تمام ترامیم کو کالعدم قرار دیا جائے۔

 

 پنجاب کے ضمنی انتخابات

کیا مذہبی جماعتیں ماضی کی طرح اس بار بھی نتائج پر اثر انداز ہوں گی؟

 By Web desk 15th July 2022

پاکستان کے صوبہ پنجاب میں انتہائی اہم قرار دیے جانے والے ضمنی انتخابات میں مقابلہ بظاہر ملک کی دو بڑی سیاسی جماعتوں پاکستان تحریکِ انصاف اور پاکستان مسلم لیگ نون کے درمیان نظر آ رہا ہے تاہم خود ان دونوں جماعتوں کی نظر ایک ’تیسری قوت‘ پر بھی ہو گی۔

مذہبی جماعتوں پر مشتمل یہ تیسری قوت اگر انفرادی حیثیت میں کامیابی حاصل نہ بھی کر پائی تو کئی حلقوں میں دونوں بڑی جماعتوں کے امیدواروں کے انتخابی نتائج پر اثر انداز ضرور ہو سکتی ہے اور ماضی میں ایسا ہو بھی چکا ہے۔ اس کی حالیہ مثال صوبہ سندھ کے شہر کراچی میں ہونے والے قومی اسمبلی کے حلقہ 240 کا ضمنی انتخاب ہے۔ یہ نشست ایم کیو ایم پاکستان کے امیدوار جیتنے میں تو کامیاب ہو گئے لیکن محض 61 ووٹوں کے فرق سے۔ ان کے مدِمقابل دوسرے نمبر پر رہنے والی مذہبی جماعت تحریکِ لبیک پاکستان (ٹی ایل پی) تھی۔ پنجاب میں 17 جولائی کو 20 نشستوں پر ہونے والے ضمنی انتخابات میں بھی ٹی ایل پی نے لگ بھگ تمام حلقوں میں اپنے امیدوار کھڑے کر رکھے ہیں تاہم کالعدم تنظیم جماعت الدعوتہ کا حمایت یافتہ کوئی گروپ اس مرتبہ نظر نہیں آ رہا۔

 

آئی ایم ایف کا پاکستان سے معاہدہ طے پاگیا

By Web desk 14th July 2022 

آئی ایم ایف کی جانب سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ ای ایف ایف کے تحت ساتویں اور آٹھویں جائزے کے معاملات طے پا گئے ہیں تاہم آئی ایم ایف بورڈ معاہدے کی حتمی منظوری دے گا۔ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کو طلب و رسد پر مبنی ایکسچینج ریٹ کا تسلسل برقرار رکھنا ہو گا، اس کے ساتھ مستعد مانیٹری پالیسی اور سرکاری اداروں کی کارکردگی بہتر بنانا ہو گی۔ آئی ایم ایف اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ عالمی مہنگائی اور اہم فیصلوں میں تاخیر سے پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر کم ہوئے، زائد طلب کے سبب معیشت اتنی تیز تر ہوئی کہ بیرونی ادائیگیوں میں بڑا خسارہ ہوا۔ عالمی مالیاتی فنڈ کے اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کو 1 ارب 17 کروڑ ڈالر دستیاب ہوں گے تاہم پاکستان کو حالیہ بجٹ پر سختی سے عمل کرنا ہو گا، صوبوں نے بجٹ خسارے کو محدود رکھنے کیلیے یقین دہانی کرائی ہے۔ آئی ایم ایف اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ ایکسپورٹ ری فنانس اسکیمیں شرح سود سے منسلک رہیں گی، کرپشن کنٹرول کرنے کے لیے پاکستان میں الیکٹرانک طور پر اثاثے ظاہر کرنے پر کام ہو رہا ہے، حکومت پاکستان نیب سمیت اینٹی کرپشن اداروں کی اثر انگیزی بہتر کرنے کے لیے کام کرے گی۔ اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ عالمی حالات کے تناظر میں پاکستان کو اضافی اقدامات کے لیے بھی تیار رہنا ہو گا، رواں مالی سال بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کے لیے 364 ارب رقم رکھی گئی ہے۔ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ ایکسٹینڈڈ فنڈز فیسیلٹی پروگرام جون 2023 تک بڑھانے پر غور کریں گے۔ وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے بھی آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدے کی تصدیق کرتے ہوئے سوشل میڈیا پر معاہدے کی کاپی شیئر کی ہے۔ مفتاح اسماعیل نے اپنی ٹوئٹ میں بتایا کہ آئی ایم ایم پاکستان کو ساتویں اور آٹھویں قسط کی مد میں ایک ارب 17 کروڑ ڈالر فراہم کرے گا۔ وفاقی وزیر نے آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدہ طے کرنے کے لیے کاوشوں پر وزیراعظم، ساتھی وزراء، سیکرٹریز اور فنانس ڈویژن کا شکریہ ادا کیا۔